زکوٰۃ کی حقیقت و فرضیت

محمد ظفرالدین برکاتی
زکوٰۃ عربی زبان کا لفظ ہے، جس کے معنی ہیں پاکیزگی، زیادتی، بڑھوتری، نیکی اور صلاح۔ اسی لیے قرآن حکیم میں مختلف مقامات پر اسے مختلف معنوں میں استعمال کیاگیا ہے۔ تزکیۂ نفس بھی اسی سے آتا ہے۔ حاصل یہ کہ زکوٰۃ دینے کے بعد مال و دولت میں پاکی حاصل ہوتی ہے اور مزید اضافہ کی امید بڑھ جاتی ہے۔ دنیا میں اس طرح سے کہ مال میں برکت ہوتی ہے اور آخرت کے لحاظ سے اس طرح کہ چوں کہ اس مال سے نیکی اور صلاح کا کام لیا گیا ہے، اس لیے بہتر انجام کی گارنٹی ہوجاتی ہے اور جس کو زکوٰۃ دی جاتی ہے، اس کی ضرورت کی تکمیل ایک اجر اضافی ہے، جس کی خوشی اور ہدیۂ تشکر

Read more