اسلام کا نظام عدل

حکیم جاوید تحسین
انڈیا ٹوڈے میں ہائی کورٹس کے تعلق سے التوا میں پڑے مقدمات کے بارے میں حیرت انگیز رپورٹ شائع ہوئی ہے۔ رپورٹ بتاتی ہے کہ ہائی کورٹ کا ایک جج ایک سال میں تقریباً 5358مقدمات فیصل کرتاہے ۔لیکن اس کے باوجود اس وقت عدالتوں میں 234000000 مقدمات اپنے دامن سے گرد جھاڑنے میں ناکام التوا میں پڑے اپنے مقدر کا فیصلہ سننے کے لیے منتظر ہیں۔اگر عدالتوں میں کوئی نیا مقدمہ درج نہ کیاجائے اور موجودہ ججوں کی کل تعداد 12600 التوا میں پڑے ان مقدمات کو دن رات سنیں اور ایک سکنڈ میں ایک مقدمہ فیصل کیاجائے جو موجودہ صورت حال میں ناممکنات اور انسان کے دائرۂ خیال سے باہر کی چیز ہے تب کہیں جاک

Read more

حضرت خواجہ غریب نواز ہندوئوں اور مسلمانوں میں جذباتی یکجہتی کے پل

فیروز بخت احمد
جہاں تک چشتیہ ، نقشبندیہ ، قادریہ وغیرہ سلسلوں کا تعلق ہے ، ان تمام صوفیائے کرام کی خانقاہوں و جماعت خانوں میں ہر مذہب کے لوگ جاتے تھے اور بلا کسی قوم و فرقہ کی تفریق کے ، سبھی کے لیے لنگر تقسیم ہوا کرتا تھا۔ اجمیر میںحضرت خواجہ شیخ معین الدین چشتیؒ،دہلی میں خواجہ حضرت نظام الدین اولیائؒ، حضرت خواجہ قطب الدین بختیار کاکیؒ، حضرت خواجہ چراغ دہلویؒ،اجودھن میں حضرت بابا فرید ؒ ، کشمیرمیں نند رشی نور الدین ولی ؒ ، گلبرگہ میں حضرت خواجہ گیسو دراز ؒ وغیرہ سبھی وہ صوفیائے کرام تھے کہ جن کی خانقاہوں میں خیر سگالی کے پر سکون ماحول میں تعلیمات کا سلسلہ چلتا تھا اور جہاں صوفیوں ، قلندرو

Read more

عصری تعلیم کے ساتھ دینی تعلیم بھی ضروری ہے

مولانا ندیم الواجدی
ہمارے دانشور طبقے کو کبھی بھول کر بھی یہ خیال نہیں آتا کہ نونہالانِ قوم کو عصری تعلیم کے ساتھ دینی تعلیم بھی دینی چاہیے ، اس کے بر عکس وہ اس نہج پر ضرور سوچتے ہیں کہ طلبۂ مدارس کے لیے دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ عصری تعلیم بھی ضروری ہے ۔ اس موضوع پر اتنا کچھ لکھا گیا ہے کہ اب اخبارات میں صرف اسی کی صدائے بازگشت سنائی دیتی ہے ،عصری تعلیم گاہوں کی کوئی بات بھی نہیں کرتا۔ بلاشبہ دینی تعلیم کے ساتھ اگر کچھ ضروری تعلیم عصریات کی بھی ہو جائے تو ہمارے دینی مدارس دین ودنیا کے اس امتزاج کے ساتھ زیادہ بہتر انداز میں خدمت کر سکتے ہیں ،لیکن مدارس کی اصلاح کے چکر میں پڑ کر ہمیں ان بچوں کو فراموش نہیں کرنا چاہیے جو محض دنیوی تعلیم میں لگے ہوئے ہیں اور انہیں یا ان کے سر پرستوں ، یا ان کے ٹیچروں کوکبھی بھول کر بھی یہ خیال نہیں آتا کہ ہمارے بچ

Read more

بارش کا نظام قرآن اور سائنس کے مطابق ہے

احمد نعمانی
بارش کے پانی میں خدا نے اپنا معجزہ شامل کر رکھا ہے۔ اس کا تذکرہ تو اللہ نے اپنے کلام پاک میں ساڑھے چودہ سو سال قبل کردیا تھا، جب کہ سائنسدانوں نے اس بات کی تحقیق کرنے کے بعد موجودہ وقت میں اشارہ کیا ہے۔ میں نے بذات خود سائنسدانوں سے بات کی اور ان سب نے بہ یک زبان قرآن کے اس معجزہ کی اپنے سائنسی انداز میں تصدیق کی۔ 2009 میں انڈیا اسلامک کلچرل سینٹر کے وی آئی پی روم میں چند سائنسداں کانفرنس سے فراغت کے لمحہ میں یکجا تھے، یہ تمام سائنسداں ہندوستان کا سب سے اہم ادارہ جو ’’کھیتی کسانی‘‘ سے متعلق تحقیق کرتا رہتا ہے، اس سے وابستہ تھے۔ یہ ’’پوسا انسٹی ٹیوٹ‘‘ نئی دہلی کے پروفیسران حضرات تھے۔ ان سے میں نے خود سوال کیا۔ مقصد یہ تھا کہ کتابوں میں جو تذکرہ کیا گیا ہے اور سائنسی حقائق سے جوڑا گیا ہے، کیا وہ اطلاع درست ہے، میں نے سوال کیا کہ یہ کہا جا

Read more

بارش ہونے کے سائنسی رموز اور قرآنی آیات

وصی احمد نعمانی
پانی برسنے کے سائنسی حقائق اور قرآنی آیات میں تال میل کو سمجھنے کے لیے بادلوں کی قسموں اور ان کی کارکردگی کو سمجھنا ضروری ہوگا۔ ہمیں معلوم ہے کہ سورج کی نہایت تیز کرنوں کی وجہ سے سمندر کا پانی نہایت تیزی سے بڑی مقدار میں بھاپ بن کر فضا میں اڑتا رہتا ہے۔ گرم بھاپ اوپر اٹھ جاتی ہے اور پھر ٹھنڈی ہوا سے جاکر ٹکراتی ہے۔ اس عمل سے بھاپ اور ٹھنڈی ہوا میں زبردست تصادم ہوتا ہے۔ اس کے نتیجے میں وہی بھاپ جو ٹھنڈی ہوا سے جا ملی تھی بادل میں بدل جاتی ہے۔ اسی بھاپ سے نو قسم کے بادل کی تخلیق ہوتی ہے۔ ان نو قسم کے بادلوں کی فطرت بالکل الگ الگ ہوتی ہے۔ ان کی فطرت کی تشکیل، اس میں موج

Read more

بارش کا نظام، قرآنی آیات اور سائنس میں تال میل

وسیع احمد نعمانی
بارش کے نظام اس کے سائیکل اور مراحل پر سائنس نے خوب ریسرچ اور تحقیق کی ہے۔ وہ تمام مراحل ترتیب وار قرآنی آیات میں موجود ہیں۔ بنیادی طور پر بارش کے دو اہم ذرائع ہیں۔ 1- قطبین پر ہوا کے دباؤ میں تبدیلی اور موسم کا بدلنا 2 – سمندر کی سطح پر موسموں کی تبدیلی کا اثر، یہ دونوں مراحل ایسے ہیں، جن کے زیر اثر بارش کے سائیکل اور اس کے نظام میں تبدیلی ہوتی ہے اور پوری دنیا میں بارش ہوتی ہے، ان مراحل کا ذکر قرآن پاک کی مختلف آیتوں میںنہایت صاف الفاظ میں فرمایا گیا ہے۔ جناب خالد سیف اللہ(علیگ) نے اپنی مشہور کتاب ’’قرآن کریم سائنس اور کائنات‘‘ میں صفحہ 132 پر بارش یا مانسون کے بارے میں کچھ اس طرح لک

Read more

ترک اسباب نا شکری ہے

قمر عثمانی
اللہ تعالیٰ نے انسان کو دنیا میں پیدا فرمایا تو ا س کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے اوراس کی راحت اورآسائش کے لئے اس کو اسباب وسائل عطا کئے اس کو قسم قسم کی نعمتوں سے نوازا، ایسی ایسی بے شمار نعمتیں اس کو عطاکیں جن کا شمار ناممکن ہے۔ قرآن کریم میں ارشاد ہے ’’ یعنی اگر تم اللہ کی نعمتوں کو شمار کرنا چاہو ہو تو شمار نہیں کرسکتے۔ (ترجمہ)‘‘ وہ اسباب اور وسائل جو اللہ تعالیٰ نے راحت و آسائش اور حصول نفع کے لئے عطا فرمائے ہیں وہ اللہ کی نعمتیں ہیں اور نعمتوں پر شکر ادا کرنا واجب ہے اور شکریہ ہے کہ اللہ تعالیٰ کی مرضی کے مطابق ان نعمتوں سے استفادہ کیاجائے ان کو استعمال کرکے راحت و آرام کے ساتھ ساتھ اچھے مقاصد کے حصول کے لئے کامیاب جدوجہد کی جائے۔ اللہ تعالیٰ نے اس دنیا کو دارالاسباب بنایاہے یہاں ہر چیز اسباب سے مربوط ہے مثلاًپیٹ بھرنے کے لئے

Read more

مسلمانوں کی جذباتیت دورحاضر کا بڑا المیہ

نورین علی حق
ناموس رسالت و و حدانیت ہو کہ عظمت قرآن یا الیکشن اور کر کٹ میچ ہر جگہ ان دنوں مسلمانوں کے جذبات سے کھیلنا عام سی بات ہو گئی ہے ۔عالمی سطح پر جب مسلمانوں کے خلاف سازشیں کی جاتی ہیں تو ان سازشوں کی طرف سے مسلمانوں کی توجہ ہٹانے کے لیے سال میں کم از کم دو تین بار جذبات انگیزی کا سہارا تو لیا ہی جاتا ہے اور اب تو صرف مغربی مسلم دشمنوں تک ہی یہ تخصیص نہیں رہ گئی ہے ،اس حربہ کا استعمال وقتاً فوقتاً ہمارا ملکی میڈیا بھی بڑے شاطرانہ انداز میں کرنے لگا ہے چو ں کہ اس کا بھی دست شفقت مسلمانوں کی دکھتی رگ تک پہنچ چکا ہے اور پوری دنیا کے فرقہ پرست عناصر ہر سطح پر مسلمانوں کے خلاف

Read more