اولین ایشیائی امن کارواں رودا دسفر

ڈاکٹر تسلیم رحمانی
آج20 دن بعدبھی تمام ترمصروفیات کے باوجودذہن پرسفرکاہرنقش تازہ ہے۔ آج بھی ذہن میں وہ تمام نعرے بازگشت کرتے ہیں جوارکانِ کارواںدورانِ سفرلگاتے رہے۔ برالروح،بالدم،نزدیکی غزہ ،مرگ براسرائیل،مرگ برامریکہ نعرئہ تکبیراللہ اکبر وغیرہ وغیرہ۔تہران یونیورسٹی میں صدرِایران محمود احمدی نژادکااچانک آجانااورارکانِ کارواں کوخطاب کرناعجیب وغریب واقعہ تھا۔میں نے اپنے بہت بچپن میں ہمیشہ خواہش کی تھی کہ اندراگاندھی کوقریب سے دیکھوں، پھرایک بارلال قلعہ کے میدان میں وہ تقریرکرنے آئیں تو ان کی سیاہ ایمبیسڈرکارمیرے بالکل قریب رُکی تھی اوروہ میرے سامنے کارسے اترکراسٹیج پرگئی تھیں۔ وہ واقعہ میرے ذہن میں ایک بارپھرتازہ ہواجب میں نے صدرایران کواتناقریب سے دیکھااوران کوچھوا۔می

Read more

دہلی۔لاہور: سب کچھ ایک جیسا ہے پھر بھی فرق کیوں؟

فیروز بخت احمد
کہنےکوتوہندوستان اورپاکستان دوپڑوسی ہونے کے ساتھ ساتھ’’دشمن ممالک‘‘ بھی ہیںجیساکہ میڈیا والے کثرت سے لکھتے ہیںمگرصحیح معنوںمیں یہ پوراخطہ دوستی کی غمازی کرتاہے۔1947سے قبل اوراُس کے بعدبھی یہ خطہ ایساخطہ رہاہے کہ جس میںدونوںاطراف کے عوام الناس کبھی بھی ایک دوسرے کے رقیب نہ رہے۔پارٹیشن بلاشبہ دُنیاکی تاریخ میںایک دہلادینے والاوقفہ ضرورتھا مگراُس کے بعدنفرتوںکی جگہ محبتوںنے لے لی۔کتناعجیب سامحسوس ہوتاہے کہ جب آپ امرتسر سے لاہورپیدل چل کر سرحدپارکریںتوپتہ

Read more

کسان حکومت سے آر پار کی لڑائی کے لئے تیار

سریندر اگنی ہوتری
یہ محض اتفاق نہیں ہے کہ پورے اترپردیش میں اراضی تحویل کے خلاف اٹھتی آوازیں آر پار کی لڑائی میں تبدیل ہو رہی ہیں۔ تحویل والے علاقہ سے کسانوں کی خیریت لے کر واپس لوٹے لوک تانترک سماجوادی پارٹی کے قومی صدر رگھو ٹھاکر کہتے ہیں کہ اجتماعی سرمایہ داری نے زمین ہڑپنے اور اس کے ذریعے زیادہ سے زیادہ پیسہ کمانے کا ایک آسان راستہ تلاش کرلیا ہے۔ ابھی تو یہ آغاز ہے۔ آخر جب کسانوں کے لیے اراضی رکھنے کی حد طے ہے تو پھر یہ نئے زمیندار کیوں پیدا کیے جارہے ہیں۔ اس طرح تو انگریزی حکومت کے

Read more

!قصوروار مسلمان نہیں ہیں

فردوس خان
ہندوستان میں گئو کشی کے سلسلہ میں کئی تحریکیں چلی ہیں اور کئی تحریکیں آج بھی جاری ہیں، لیکن کسی تحریک کو بھی کوئی خاص کامیابی حاصل نہیں ہوسکی۔ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ ان تحریکوں کو عوامی تحریک کی شکل نہیں دی گئی، بلکہ یہ کہنا قطعی غلط نہ ہوگا کہ زیادہ تر تحریکیں صرف اپنی سیاست چمکانے یا چندے کی وصولیابی تک ہی محدود رہی ہیں۔ الکبیر سلاٹر ہاؤس میں روزانہ ہزاروں گائے کاٹی جاتی ہیں۔ چند سال قبل ہندوتووادی تنظیموں نے اس کے خلاف مہم بھی چھیڑی تھی، لیکن جیسے ہی یہ بات سامنے آئی کہ اس کا مالک مسلمان نہیں، بلکہ غیر مسلم ہے تو اس مہم کو ٹھنڈے بستے میں ڈال دیا گیا۔ یہ بات پوری طرح واضح ہے کہ گئوکشی سے سب سے بڑا فائدہ گائے کے اسمگ

Read more

کیا کسان پاگل ہیں؟

پرمود بھارگو
ملک کی کسی بھی حساس ریاستی حکومت کے لیے یہ کتنی شرمناک اور حقیقت سے منہ چرانے والی بات ہے کہ وہ ریاست میں ایک کے بعد ایک مرنے والے کسانوں کو پاگل قرار دینے کی ضد پر اتر آئے اور کسانوں کی خودکشی کو گناہوں کا پھل بھی بتائے۔مصیبت زدہ یہ کسان قرض میں توڈوبے ہی ہیں،انہیںقدرت کی زبردست مار بھی پالے کے طور پر جھیلنی پڑ رہی ہے۔کسی بھی حساس حکومت کو ایسی اموات کی سچائی کو جھٹلانے کی گھٹیا سیاست سے بچنا چاہئے۔حالانکہ ان اموات سے متاثر ہوکر وزیر اعلیٰ شیو راج سنگھ چوہان نے ضرو

Read more

پی سی ایس افسران کے لئے خوش خبری

دلیپ چیرین
زیادہ تر اسٹیٹ پبلک سروسز افسران کے لیے انڈین ایڈمنسٹریٹیو سروسز میں شامل ہونا کسی خواب سے کم نہیں ہوتا۔ مثال کے طورپر کرناٹک میں اسٹیٹ سول سروسز کے افسران کو ریاست کے اندر ہی آئی اے ایس کیڈر میں شامل کرنے کے لیے صرف 5 ہی اسامیاں ہوتی ہیں۔ یعنی ہر سال اسٹیٹ سول سروسز کے 5 بابوؤں کو آئی اے ایس کیڈر میں جگہ ملتی رہی ہے۔ حالانکہ اس سال اسٹیٹ سروسز کے ان افسران کے پاس خوش ہونے کی ایک زبردست وجہ ہے۔ یدیورپا حکومت کو آئی اے ایس کیڈر کے 26 خالی عہدے پر کرنے ہی

Read more

پورا پروجیکٹ‘‘:بے لگام افسران دیشمکھ کے لئے چیلنج ہو سکتے ہیں”

ششی شیکھر
وزارت دیہی ترقیات کے پاس یہ اختیار ہے کہ وہ ملک کی 70فیصد آبادی کا مقدر طے کر سکتی ہے۔وزارت کے حصے میں ملک کے 6لاکھ سے بھی زائد گائوں کی ترقی کی ذمہ داری ہے۔سیکڑوں کروڑ کا فنڈ ہے۔ منریگا اور’’ پورا‘‘ جیسی پرکشش اسکیمیں بھی ہیں۔ ظاہر ہے،ا تنے وسائل کے ساتھ کوئی بھی وزارت بہتر نتائج دینے کی اہل بن جاتی ہے۔پھر بھی کیا وجہ ہے کہ وزارت میں ہوئی حالیہ تبدیلی میں راہل گاندھی کے چہیتے وزیر سی پی جوشی کا محکمہ ہی بدل دیا گیا۔ انہیں دیہی ترقیات سے ہٹا کر روڈ ٹرانسپورٹ وزارت میں بھیج دیا گیا۔اس کی کئی وجوہات تھیں، جن ک

Read more

کانگریس میٹھا زہر ہے

ڈاکٹر منیش کمار
کتاب لکھنا بڑے بڑے سیاسی لیڈروں اور نوکر شاہوں کا نیا شوق بن گیا ہے۔ جب ان دونوں میں سے کوئی کتاب لکھتا ہے تو تنازعہ کھڑ اہوجاتا ہے۔ نوکر شاہ کئی راز کھولتے ہیں۔ نوکری میں رہتے ہوئے جن باتوں کو وہ نہیں بول پاتے ریٹائر ہونے کے بعد کتابوں میں لکھتے ہیں۔ جب سیاسی لیڈر کتاب لکھتے ہیں تو اس کا مطلب سیاست کی نئی اننگ کا اعلان ہوتا ہے۔ قلم اٹھاتے ہی سیاست داں نظریاتی سطح پر طوفان کھڑا کرتا ہے۔ جب کوئی بڑا لیڈر کتاب لکھتا ہے تو اس سے سیاست کے نئے اشارے ملتے ہیں۔ نئی سمت کا اشارہ ملتا ہے۔ زیادہ تر مواق

Read more

چینی سرگرمیوں سے محتاط رہنے کی ضرورت

ارون کمار جھا
برہم پترپر مکمل کنٹرول کی چینی سازش پر ہندوستان نے اگر سنجیدگی سے غور نہیں کیا تو آنے والے کچھ سالوں میں شمال مشرقی علاقے کی لائف لائن کہی جانے والی برہم پتر ندی کا وجود ہی ختم ہوجائے گا۔ ملک کے نامور ماہر ماحولیات سندر لال بہوگنا اور دیگر کئی تنظیموں نے حکومت ہند سے چین کی اس نیت کے خلاف عالمی سطح پرآواز بلند کرنے کی مہم شروع کرنے کو کہا ہے۔ ماہرین ماحولیات اور دیگر سماجی تنظیموں نے حقائق پر مبنی ثبوت دیتے ہوئے کہا ہے کہ چین اپنے زمینی حصے میں برہم پتر پر 11آبی ذخیرے ٹینک

Read more

بدعنوانیوں سے عبارت ہے لکھنؤ ڈیولپمنٹ اتھارٹی

سریندر اگنی ہوتری
لکھنؤڈیولپمنٹ اتھارٹی کو راجدھانی کے باشندے لوٹو ڈاکہ ڈالو اتھارٹی کے نام سے جانتے ہیں۔اس نام پر کچھ لوگوں کو اعتراض ہو سکتا ہے لیکن جب سچائی سامنے آتی ہے تو ہر ایک یہ ماننے کو تیار ہو جاتا ہے کہ یہ نام جس نے بھی دیا ہے درست دیا ہے۔ایل ڈی اے کے نائب صدر کا عہدہ کبھی پھولوں کا تاج مانا جاتا تھا تو اب کانٹوں بھرا تاج نظر آرہا ہے۔ایل ڈی اے کے سامنے کئی چیلنجز آئے ہیں۔ان میں امین آبادمیں تعمیر پارکنگ میں دکانوں سے لیکر ایل ڈی اے افسروں کے ذریعہ دبائی گئی دس لاکھ بیگھہ زمین کو خالی کرنے کے ساتھ ڈالی باغ کثیر منزلہ عمارت کے سامنے کی متنازعہ زمین کا معاملہ بھی شامل ہے۔چھوٹ کی زمین کو الاٹمنٹ کرنے سے لیکرمتبادل و لوور کھنڈ میںاراضی گھوٹالہ ہو یا غریبوں کو مفت

Read more