!بن لا دن اور اسیما نند میں کوئی فرق نہیں

رام پنیانی
معمولی جرائم کے موازنہ میں دہشت گردانہ جرائم کی تفتیش کہیں زیادہ مشکل ہوتی ہے۔دہشت گردانہ جرائم میں بم دھماکہ کرنے یا گولی چلانے والے کے اصلی کنٹرولر، راز کے چولے میں لپٹے رہتے ہیں،ان تک پہنچنا آسان نہیں ہوتا ہے ہیں۔تفتیش کاروںکی ذہنیت سوچ اور طرفداری مسئلہ کو اور بڑھاتے ہیں۔ ہمارے ملک میں بیشتر دہشت گردانہ حملوں کے لئے جہادی دہشت گردی کو قصوروار ٹھہرایا جاتا رہا ہے اور پولس اور تفتیشی ایجنسیاں یہ مان کر چلتی رہی ہیں کہ صرف جہادی مسلمان ہی دہشت گردی کے لئے ذمہ دار ہیں۔ ہر دہشت گرد حملہ کا قصورسرحد پار کی کسی نہ کسی مسلم تنظیم پر تھوپ دیا جاتا تھا۔ سرحد پار دہشت گرد ہمارے تفتیش کاروںکا نہایت ہی محبوب لفظ بن گیا تھا۔ ان مبینہ سرحد پار دہشت گردوں کے مقام

Read more

کرسی کے خاطر سب کچھ کرے گی بی جے پی

سروج سنگھ
بہارمیں جنتا دل یو اور بی جے پی کے رشتوں میں موجودہ تلخی کے بھلے ہی لاکھ معنی نکالے جائیں لیکن یہاں کی زمینی سیاسی سچائی کو سمجھنے والے اطمینان کی لمبی لمبی سانسیں لے رہے ہیں۔بی جے پی کی ترنگا یاترا کے تعلق سے شرد یادو اور نتیش کمار کے بیانوں پر بی جے پی لیڈرہریندر پرتاپ کا غصہ یہ ضرور احساس کراتا ہے کہ پارٹی میں کچھ لوگوں کو یہ اچھا نہیں لگا۔لیکن جب نائب وزیر اعلیٰ سشیل مودی نے ہریندر پرتاپ کو ہی غلط بتایا تو لوگوں کو یہ سمجھنے میں دیر نہیں لگی کہ پوری کہانی پھر دوہرائی جا رہی

Read more

مشن 2012کے لئے کانگریس تیار

سریندر اگنی ہوتری
اتر پردیشمیں اقتدار حاصل کرنے کے لیے 125 سال پرانی کانگریس پارٹی نے اپنے یووراج راہل گاندھی کو جنگ کے میدان میں سپہ سالار کی شکل میں سامنے لانے کا ذہن بنالیا ہے۔ کانگریس بڑی ہی سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت شطرنج کی بساط بچھا رہی ہے۔ کانگریس کا ایک ایک قدم جہاں مایا حکومت کو خوف زدہ کر رہا ہے، وہیں دوسری جانب کانگریس کے کارکنان میں ایک نیا حوصلہ پیداکر رہا ہے۔ اس کا اندازہ درج فہرست ذات/ درج فہرست قبائل کمیشن کے قومی صدر ڈاکٹر پی ایل پونیا کے ذریعہ ریاست میں کیے جارہے اجلاس میں جمع ہونے والی بھیڑ سے لگایا جاسکتاہے۔ ان اجلاس کی کامیابی کودیکھ کر ریاستی حکومت نے مرکزی وزرا کے ریاست میں نجی دورے اور پارٹیوں کے پروگرام میں ح

Read more

برطانوی پارلیمنٹ سے سبق لینے کی ضرورت

میگھناد دیسائی
لوکسبھا اسپیکر میرا کمار ہائوس آف لارڈس کی صدر ہیلن ہیمین سے ملنے برطانیہ پہنچیں ۔میرا کمار یہ توقع کر رہی تھیں کہ ہیمین سے ملنے کے دوران کھانے کا اہتمام ہوگا اور لارڈس اسپیکر ان کے ساتھ خوب سارا وقت بتائیں گی، لیکن ایسا نہیں ہوا۔ جیسے ہی لنچ تیار ہوا، ہیمین نے اپنی رسمی پوشاک پہنی اور معذرت کرتے ہوئے کہا کہ انہیںہائوس آف لارڈس کے آخری سیشن کے لئے جانا ہے۔ یہ سیشن بروز پیر دوپہر ڈھائی بجے شروع ہوا تھا اور مسلسل پوری رات چلتا رہا اور آج وہ سیشن ختم ہو رہا تھا۔ہائوس آف لارڈس کے کلینڈر کے مطابق یہ دن ابھی بھی پیر ہی تھا۔سیشن کے آخر میں ہیمین کو حاضررہنا تھی ، کیونکہ وہ سیشن کی شروعات میں بھی موجود تھیں۔ انھوں نے پہلے سیشن میں حصہ لیا، پھر لنچ کے لئے گئیں۔

Read more

گھوٹالوں کی عظیم الشان کہانی

سدھارتھ رائے
کسی بھی جمہوریت کی صحت اس بات پر منحصر کرتی ہے کہ ا س کے تینوں ستون مقننہ، عاملہ اور عدلیہ کے درمیان کیسے رشتے ہیں اور ان تینوں میں جواب دہی باقی ہے یا نہیں؟ آج ہندوستان کی حالت بھی انہی دو اسباب کے آئینے میں دیکھی جاسکتی ہے۔ گزشتہ سال ہندوستان میں بدعنوانی اور گھوٹالوں کا بول بالا رہا۔ ایسا محسوس ہوا جیسے ہندوستان میں گھوٹالے نہیں گھوٹالوں میں ہندوستان ہے۔ عوام جہاں مہنگائی سے بدحال ہوئے جارہے ہیں، وہیں ہمارے لیڈر اور سرکاری افسر قوانین کو طاق پر رکھ کر بے شرمی سے عوام کا پیسہ دبا ر

Read more

!حمام میں سب ننگے ہیں

بمل رائے
حیرتہے کہ پولس ہرمادواہنی اور اس کے غیر قانونی ہتھیاروں کا سراغ بھلے ہی نہ لگا پائی ہو لیکن گولی داغنے کی آواز اسے فوراً پٹاخے جیسی لگتی ہے۔تشبیہاتی طور پر یہ صحیح بھی ہے،کیوں کہ بنگال میں آج کل بم اور بندوقیں پٹاخہ بن کر رہ گئی ہیں اور الیکشن میں ان کا استعمال بھی دیوالی کے پٹاخوں کی طرح ہی ہوتا ہے۔ملک میں کہیں ایسی مثال نہیں ملتی کہ ایک سیاسی نظریہ کے لوگ مخالف پارٹی کے لوگوں کے ڈر سے مہینوں تک گاؤں چھوڑ کر وہا ں رہیں،جہاں ان کی پارٹی کا دبدبہ ہے اور پھر دونوں پارٹیاں ایک دوسرے کے علاقے پر قبضہ کرنے کی حکمت عملی بنائیں۔استحصال سے آزاد سماج کے مارکسی خواب کے برخلاف یہاں اقتدار پر قابض لوگوں کے ذریعہ مخالفین کا استحصال ہوتا رہا ہے۔قتل،دہشت،سماج

Read more

ہم نے اسلام کو بدنام کرنے کا ٹھیکہ لے لیا ہے؟

تنویرجعفری
ایسا لگتا ہے کہ آج کل اسلام کو بدنام کرنے کا ٹھیکہ صرف مسلمانوں نے ہی لے رکھا ہے۔ نہ صرف دنیا کے تمام ملکوں سے بلکہ ہندوستان سے بھی اکثر ایسی خبریں موصول ہوتی رہتی ہیں، جن سے اسلام بدنام ہوتا ہے اور مسلمانوں کا سر نیچا ہوتا ہے۔ کبھی بے تکے فتوے اسلامی توہین کا سبب بنتے ہیں تو کبھی پنچایتی فرمان۔ پچھلے دنوں ایسی ہی ایک شرمناک خبر اترپردیش کے لکھیم پور ضلع سے موصول ہوئی۔ خبروں کے مطابق ضلع کے سلیم پور گاؤں کی ایک مسلم پنچایت نے گاؤں کے ہی ایک بزرگ مسلم کنبہ کا سماجی بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا۔ بتایا جاتا ہے کہ تقریباً 1000 کی مسلم آبادی والے اس گاؤ ں میں معین الدین اور مریم نامی مسلم طبقہ کے غریب بزرگ میاں بیوی اپنے جھونپڑی نما کچے مکان میں رہتے ہیں۔

Read more

اولین ایشیائی امن کارواں رودا دسفر

ڈاکٹر تسلیم رحمانی
آج20 دن بعدبھی تمام ترمصروفیات کے باوجودذہن پرسفرکاہرنقش تازہ ہے۔ آج بھی ذہن میں وہ تمام نعرے بازگشت کرتے ہیں جوارکانِ کارواںدورانِ سفرلگاتے رہے۔ برالروح،بالدم،نزدیکی غزہ ،مرگ براسرائیل،مرگ برامریکہ نعرئہ تکبیراللہ اکبر وغیرہ وغیرہ۔تہران یونیورسٹی میں صدرِایران محمود احمدی نژادکااچانک آجانااورارکانِ کارواں کوخطاب کرناعجیب وغریب واقعہ تھا۔میں نے اپنے بہت بچپن میں ہمیشہ خواہش کی تھی کہ اندراگاندھی کوقریب سے دیکھوں، پھرایک بارلال قلعہ کے میدان میں وہ تقریرکرنے آئیں تو ان کی سیاہ ایمبیسڈرکارمیرے بالکل قریب رُکی تھی اوروہ میرے سامنے کارسے اترکراسٹیج پرگئی تھیں۔ وہ واقعہ میرے ذہن میں ایک بارپھرتازہ ہواجب میں نے صدرایران کواتناقریب سے دیکھااوران کوچھوا۔می

Read more

دہلی۔لاہور: سب کچھ ایک جیسا ہے پھر بھی فرق کیوں؟

فیروز بخت احمد
کہنےکوتوہندوستان اورپاکستان دوپڑوسی ہونے کے ساتھ ساتھ’’دشمن ممالک‘‘ بھی ہیںجیساکہ میڈیا والے کثرت سے لکھتے ہیںمگرصحیح معنوںمیں یہ پوراخطہ دوستی کی غمازی کرتاہے۔1947سے قبل اوراُس کے بعدبھی یہ خطہ ایساخطہ رہاہے کہ جس میںدونوںاطراف کے عوام الناس کبھی بھی ایک دوسرے کے رقیب نہ رہے۔پارٹیشن بلاشبہ دُنیاکی تاریخ میںایک دہلادینے والاوقفہ ضرورتھا مگراُس کے بعدنفرتوںکی جگہ محبتوںنے لے لی۔کتناعجیب سامحسوس ہوتاہے کہ جب آپ امرتسر سے لاہورپیدل چل کر سرحدپارکریںتوپتہ

Read more

کسان حکومت سے آر پار کی لڑائی کے لئے تیار

سریندر اگنی ہوتری
یہ محض اتفاق نہیں ہے کہ پورے اترپردیش میں اراضی تحویل کے خلاف اٹھتی آوازیں آر پار کی لڑائی میں تبدیل ہو رہی ہیں۔ تحویل والے علاقہ سے کسانوں کی خیریت لے کر واپس لوٹے لوک تانترک سماجوادی پارٹی کے قومی صدر رگھو ٹھاکر کہتے ہیں کہ اجتماعی سرمایہ داری نے زمین ہڑپنے اور اس کے ذریعے زیادہ سے زیادہ پیسہ کمانے کا ایک آسان راستہ تلاش کرلیا ہے۔ ابھی تو یہ آغاز ہے۔ آخر جب کسانوں کے لیے اراضی رکھنے کی حد طے ہے تو پھر یہ نئے زمیندار کیوں پیدا کیے جارہے ہیں۔ اس طرح تو انگریزی حکومت کے

Read more