استعفے سے آئی آفت

پنجاب کے ایک سینئر آئی اے ایس افسر کااستعفیٰ آج کل اس ریاست کے نوکر شاہوں کے درمیان موضوع بحث بنا ہوا ہے۔جنرل ایڈمنسٹریشن ڈپارٹمنٹ کے سکریٹری جسویر سنگھ بیر نے اپنے تبادلے کے بعد وقت سے پہلے ہی ریٹائرمنٹ کی مانگ کی۔ ان کا تبادلہ اس بات کے لیے کیا گیا تھاکہ انہوں نے وزیر اعلیٰ کے پریوار کی بات نہیں مانی تھی

Read more

اٹھو، جاگو اور کام کرو

مرکزی اطلاعاتی کمیشن تمام تر مشکلات کے باوجود مسلسل شفافیت کو فروغ دینے کے کی کاوشوں میں مصروف ہے۔عوامی شکایات پر غور کرنے میں ہو رہی تاخیر سے فکر مند کمیشن نے حکومت کو ہدایت دی ہے کہ وہ عوامی شکایات کے خاتمے کے لیے ایک حد متعین کرنے کے لیے گائڈ لائن جاری کرے۔یہ محض اتفاق ہے کہ ان

Read more

اسرائیلی بربریت کا تازہ نمونہ

اسرائیلی جارحیت یک طرفہ تھی۔ یہ بیان ہے اسرائیل سے رہائی کے بعد وطن واپس پہنچنے والے پاکستانی صحافی طلعت حسین کا۔ طلعت حسین پاکستان میں ایک نجی ٹی وی چینل ’آج نیوز‘ کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر اور اینکر ہیں، وہ ان تین پاکستانیوں میں سے ایک ہیں جو غزہ کے فلسطینیوں کے لیے امداد لے جانے والے بحری بیڑے میں شامل تھے۔ وطن لوٹنے کے بعد ٹیلی فون پر ا

Read more

راہل صاحب سیاست کا یہ کھیل آسان نہیں

یوراج راہل گاندھی ایک ماہر کھلاڑی کی طرح اتر پردیش میں سیاسی بساط بچھا رہے ہیں۔پہلے دلتوں کی بستی میں چوپال لگاکر تیزی سے مقبولیت حاصل کرنے والے راہل نے آج کل کانگریس سندیش یاترائوں کے ذریعہ سے پارٹی کو مضبوطی فراہم کرنے کی مہم چھیڑ رکھی ہے۔راہل کے دوروں کو اسمبلی انتخابات2012کے نقطۂ نظر سے کافی اہم مانا جا رہا ہے۔دو مرحلوں میں ہونے والے یہ دورے 10نومبر کو الہٰ آباد میں سونیا گاندھی کی عوامی میٹنگ میں تبدیل ہوکر ختم ہو جائیںگے۔

Read more

چدمبرم صاحب کو کرارا جواب

یہ آپ کے ان بیانات کے جواب میں ہے، جو آپ نے این ڈی ٹی وی پر اپنے ایک انٹر ویو کے دوران دیئے تھے۔ انٹر ویو میں آپ نے کہا تھا کہ سماج کونکسل پرستوں کے غیر ضروری قتل عام کی جوابی کارروائی کرنی چاہئے۔ ایسا لگتا ہے ، جیسے یہ ایک منصوبہ بند انٹرویو تھا، جس کا مقصد نکسلیوں سے مقابلہ کے لئے حفاظی دستوں اورفضائیہکے استعمال کے لئ

Read more

بی جے پی تہذیب و تمدن کی دہائی محض ڈھونگ

نتن گڈکری کو جب راج ناتھ سنگھ کی جگہ بی جے پی کا صدر منتخب کیا گیا تھاتب اسی وقت دو باتیں بالکل واضح ہو گئی تھیں۔ ایک تو یہ کہ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کسی ایسے لیڈر کو بی جے پی کے صدر کے عہدے پر فائز کرنا چاہتا تھا، جس کا تعلق سنگھ پریوار سے ہواور وہ سنگھ اور اس کے نظریات کے تئیں وفادار رہے۔ لہٰذا سنگھ کے پالیسی سازوں کی نظر نتن گڈکری پر جاٹکی۔حالانکہ بی جے پی کے

Read more