اوبامہ کا دورۂ ہند اور ملکی مفادات

ڈاکٹر محمد منظور عالم
گزشتہ ایک دہائی میں 2000،2006 اور 2010کے سال ہندو امریکی تعلقات کے لحاظ سے بہت ہی اہمیت کے حامل ہیں۔2000 میں امریکی صدر بل کلنٹن کے دورہ ہند سے10برس قبل1990 میںپوکھرن دھماکے کے بعد پیدا شدہ منفی رد عمل ختم ہوئے اور نیوکلیر تعاون سمجھوتے کے ذریعہ دونوں ملکوں کے درمیان باضابطہ تعلقات مزید شیریںہوئے۔ بعد ازاں 2006 میں جارج واکر بش کے دورہ سے اس دوستی کو فروغ ملا۔ عیاں رہے کہ ہندوستان میں براہ راست سرمایہ کاری1991تا2004 کی مدت میں 11.3تا344.4ملین امریکی ڈالر رہی

Read more

قومی دیہی روزگار گارنٹی اسکیم بدعنوانیوں کا نیا باب

شیوا کمار
دیہی باشندوں کو 100دن کا روزگار مہیا کرانے کے دعووں اور وعدوں کے ساتھ چلائی جا رہی قومی دیہی روزگار گارنٹی اسکیم کو فروری 2006میں نافذ کیا گیاتھا ۔ اس اسکیم کو نافذ ہوئے بھی چار سال گزر گئے لیکن نقل مکانی ہے کہ رکنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔اسکیم نافذ ہونے کے بعد سے دیہی باشندوں کو روزگار مہیا کرانے کے لئے مرکز سے رقم تو مل ہی رہی ہے ، اس کے ساتھ ہی ریاستی حکومت بھی شراکت کی شکل میں رقم مہیا کرا رہی ہے۔موصولہ رقم سے ہزاروں کی تعداد میں کام اور کروڑوں روپیوں کی مزدوری کی شکل میں ادائیگی کی

Read more

بہار میں اب سیکولر اور انصاف پسند حکومت کا انتظار

اشرف استھانوی
بہار اسمبلی انتخاب کاطویل تر عمل اب اپنے آخری مرحلہ میں پہنچ چکا ہے۔ لوگوں کی ساری توجہ اب ووٹر لسٹ، شناختی کارڈ ، امید واروں کے انتخاب، سیٹوں کی تقسیم، انتخابی منشور، سیاست دانوں کے بنتے بگڑتے آپسی رشتوں ، راتوں رات بدلتی ریاستی وفاداریوں ، پولٹیکل نوک جھونک، مائو نوازوں کی طرف سے انتخابی بائیکاٹ کی اپیل اور ممکنہ انتقامی کارروائیوں کے خطرے کے باوجود گذشتہ اسمبلی اور پارلیمانی انتخاب کے مقابلے میں 15 فیصد زیادہ پولنگ سے ہوتے ہوئے آنے والے انتخابی نتائج پر مرکوز ہو گئی ہے۔ اور ایوان سیاست ، ریاستی سکریٹریٹ سے لے کر عام دفاتر، دکانوں

Read more

بڑے بڑے لیڈروں کے حواس باختہ

سروج سنگھ
بہار کا اسمبلی الیکشن اب آخری مرحلے میں ہے لیکن ابھی بھی کچھ بڑے لیڈروں کی پیشانی سے پسینہ خشک نہیں ہورہا ہے۔ رات میں ہلکی خنکی کا احساس بھی انہیں سکون نہیں دے پارہا ہے۔اس کی صرف ایک ہی وجہ ہے، اور وہ ہے اب تک ہوئے انتخابات کا رجحان۔ نئی حد بندی کے بعد ہونے والے اس پہلے الیکشن میں بازی کس کے ہاتھ لگے گی یہ بتا پانا سیا

Read more

بہار اسمبلی انتخابات: نئی اسمبلی میں مسلم خواتین کی نمائندگی

اشرف استھانوی
اسمبلی انتخاب کا نتیجہ کیا ہوگا اور اگلی حکومت کس پارٹی یا اتحاد کی ہوگی یہ تو ابھی طے ہونا باقی ہے اور صحیح تصویر 24 نومبر کو ہی سامنے آئے گی۔ لیکن ایک بات صاف ہو چکی ہے کہ ریاست کی 15 ویں اسمبلی میں مسلم خواتین کی نمائندگی ضرور ہوگی۔
بہار کی 243 رکنی اسمبلی میں 1985 ء کے بعد جہاں مسلم ارکان کی تعداد لگاتار گھٹتی گئی ہے ، وہیںمسلم خواتین کی نمائندگی صفر رہی ہے۔ نہ صرف ریاستی اسمبلی میں بل

Read more

ایک بیان باغیانہ، دوسرا کیا؟

ششی شیکھر ؍سدھارتھ رائے
بوکر ایوارڈ یافتہ اور سماجی کارکن اروندھتی رائے نے گزشتہ دنوں کشمیر پر ایک بیان دیا کہ کشمیر کبھی بھی ہندوستان کا اٹوٹ حصہ نہیں رہا ہے۔ انہوں نے یہ بات سری نگر میں ایک سمینار میں کہی۔ اس بیان پر حکومت کی بھویں تن گئیں اور دہلی پولس کو حکم دے دیا گیا کہ وہ اروندھتی رائے کی اچھی طرح تفتیش کرے اور وہ بنیاد تلاش کرے، جس کی بنا پر ان پر بغاوت کا مقدمہ چلایا جاسکے۔ غور طلب ہے کہ اسی دوران دلیپ پڈگاؤنکر نے بھی ایک بیان دیا۔ سینئر صحافی اور کشمیر پر بنے سہ رکنی وفد کی صدارت کررہے دلیپ پڈگاؤنکر نے سری نگر میں کہا کہ کشمیر میں بحالی امن کے لئے جاری بات چیت میں پاکستان کو بھی شامل کیا جانا چاہئے۔ اب سوال یہ ہے کہ اگر اروندھتی رائے کا بیان باغیانہ ہے تو پڈگاؤنکر کا بیان کیا ہ

Read more

خواتین کے ساتھ جنسی امتیاز کا گھنائونا چہرہ

آدتیہ پوجن
بیڈمنٹنکی مشہور کھلاڑی سائنا نہوال جب پیدا ہوئی تھیں تو ان کی دادی ایک مہینے تک انہیں دیکھنے نہیں گئیں، کیونکہ دادی کو پوتی نہیں پوتے کی حسرت تھی۔ ہندوستانی معاشرے میں لڑکیوں کے تئیں یہ نظریہ ان کی ترقی میں سب سے بڑی رکاوٹ تو ہے ہی، انہیں ایسی سہولتوں سے استفادہ کرنے سے بھی دو رکرتا ہے جو ملک میں عام شہریوں کے لئے دستیاب ہیں۔ یہ بات ملک میںطبی خدمات کی حالت اور خواتین کی صورت حال کو دیکھ کر اور بھی زیادہ واضح ہوجاتی ہے۔ نیشنل فیملی ہیلتھ سروے3- کے مطابق ہندوستان میں نوزائدہ بچوں کی ا

Read more

سیلاب کے قہر کا خوف اب تک ہے

کویتا کماری
یوں تو ہمارے وزیر اعلی نتیش کمار بہار کی ترقی کو بہت زور شور سے آگے لے جانے کی بات اور دعویٰ کرتے رہے ہیں ،شاید وہ اپنے اس دعویٰ میں کامیاب بھی رہے ہونگے لیکن انھیں کی ریاست بہار میں کچھ گائوں ایسے بھی ہیں جہاں ہمارے وزیراعلیٰ اور ان کے کارندوں کی نگاہیں نہیں پہنچ پائی ہیں ۔ایک ایسے ہی گائوں کی طرف میں آپ سب کے ساتھ ان کا دھیان بھی دلانا چاہتی ہوں ،جہاں چرخہ کے ذریعہ ہمیں جانے کا موقع ملا ۔دربھنگہ ضلع سے تقریباً 75کلومیٹر دور کرت پور بلاک کے گورابورام پنچایت میں واقع منسارا مُسہری گائوں کی حالت بہت ہی زیادہ قابلِ رحم ہے۔ وہاں سیلاب جیسے گمبھیر مسائل سے لوگ بُری طرح جھوجھ رہے ہیں ،ہر سال آنے والے سیلا ب سے لوگوں کی زندگی تہس نہس ہوگئی ہے، سیلاب نے ان پ

Read more

اتر پردیش: مافیائوں کے شکنجے میں طبی خدمات

سریندر اگنی ہوتری
ملک کی سب سے بڑی ریاست اترپردیش کی طبی خدمات پر مافیاؤں کا راج قائم ہے۔ طبی خدمات سے متعلقہ سرکاری اداروں اور نجی کمپنیوں کا تال میل اتنا زیادہ ہوگیا ہے کہ راجدھانی لکھنؤ میں ڈینگو سے مسلسل ہوئی کئی اموات کے بعد الٰہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ کو بیماری کی روک تھام کے لیے محکمہ صحت کے

Read more