تیسرے محاذ کے سہارے ملائم وزیر اعظم بننا چاہتے ہیں

اجے کمار
سال 2014 میں سیاست کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا، اس بات کا اندازہ لگانا آسان نہیں ہے۔ عوام کانگریس کی حکومت سے پریشان تو ہیں، لیکن انہیں کوئی مضبوط متبادل نہیں دکھائی دے رہا ہے۔ بی جے پی خود کو کانگریس کے متبادل کے طور پر دیکھتی ضرور ہے، لیکن اس کے ’آئرن مین‘ہی جب اس بات پر شک ظاہر کر رہے ہوں تو حالات کا صحیح اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ نہ کانگریس، نہ بی جے پی، تو پھر کون؟ اسی سوال نے سماجوادی سپریمو ملائم سنگھ یادو کے پنکھ لگا دیے۔ اتر پردیش اسمبلی انتخاب می

Read more

پینسٹھ سال کی آزادی : تلخیاں بھول کر آگے بڑھنے کا وقت

محمود شام، کراچی پاکستان
آْزادی کا دن دنیا بھر میں خوشیاں اور مسرتیں لے کر نازل ہوتا ہے، لیکن ہمارے خطے میں یہ زخم ہرے کر دیتا ہے۔ زخمیوں کی چیخیں سنائی دیتی ہیں۔ عصمتوں کی کرچیاں بکھرتی دکھائی دیتی ہیں۔ گلیوں میں بھڑکتی آگ، کوچوں میں بہتا لہو، ہم یہ سب کچھ بھول جاتے، اگر تاریخ اپنے آپ کو دہرا نہ رہی ہوتی۔ اگر سرحدوں پر کشیدگی نہ ہوتی۔ اگر ویزے کی سختیاں نہ ہوتیں۔ دونوں دوونوں طرف مسافروں کو خفیہ ایجنسیاں ہراساں نہ کر رہی ہوتیں۔ امن، سک

Read more

جیلوں میں بڑھتی مسلمانوں کی آبادی: ذمہ دار کون ؟

ڈاکٹر قمر تبریز
آج سے 65 سال قبل ہندوستان جب آزاد ہوا تھا تو سب نے یہی سوچا تھا کہ اب ہمارا ملک ترقی کرے گا۔ آزاد ملک میں تمام شہریوں کے حقوق کی حفاظت کی جائے گی۔ ملک سے چھواچھوت اور ذات پات کی تفریق ختم ہوگی۔ ہر مذہب و مسلک کے لوگ ایک ہندوستانی کے طور پر آپس میں بھائی چارگی کی زندگی گزاریں گے۔ مذہبی منافرت کو سیکولر ہندوستان میں کوئی جگہ نہیں ملے گی۔ یہی خواب بابائے قوم مہاتما گاندھی نے دیکھا تھا اور اسی کی یقین دہانی ہمارے آئین سازوں نے دستورِ ہند میں کی تھی۔ لیکن آج 65 سال کا عرصہ گزر

Read more

امریکہ میں سکھوں اور مسلمانوں پر حملہ ، کیا یہ دہشت گردی نہیں ہے ؟

ایم ودود ساجد

دنیا بھرمیں القاعدہ کی خبر لینے والے امریکہ کو خود اپنے القاعدہ کی خبر نہیں ہے۔ شمالی امریکہ کی ریاست وسکانسن کے چھ لاکھ کی آبادی پر مشتمل شہر ملواکی میں ایک گرودوارہ پر حیوانی حملہ کو آخر دہشت گردانہ حملہ کیوں نہیں کہا گیا؟ اورکیوںاس طرح کے حملوں کو ذہنی خلجان میں مبتلا افراد کا انفرادی فعل قرار دے کر اس باب کو بند کردیا جاتا ہے؟بلاشبہ ایشیائی النسل امریکیوںپر اس طرح کے حملے 9/11 کے واقعہ کے بعد تسلسل کے ساتھ ہورہے ہیںلیکن ان حملوںکی زد میں سب سے زیادہ امریکی

Read more

جیت کر بھی ہار گیا این ڈی اے

اشرف استھانوی
بہار قانون سازیہ کے دونوں ایوانوں کے دو اہم آئینی عہدے حال ہی میں اختتام پذیر مختصر بارانی اجلاس کے دوران خوش اسلوبی کے ساتھ پُر کر لیے گئے۔ ایوان بالا، یعنی قانون ساز کونسل کے چیئر مین کے عہدے پر اودھیش نارائن سنگھ تو ایوان زیریں، یعنی قانون ساز اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر کے عہدے پر امریندر پرتاپ سنگھ کا انتخاب اتفاق رائے سے عمل میں آیا۔ یہ دونوں عہدے ریاست میں حکمراں این ڈی اے کے پارٹنر ہونے کے ناطے بھارتیہ جنتا پارٹی کے حصے میں گئے۔ اتحاد کے بڑے پارٹنر جنتا دل (یو)نے دونوں عہدوں کے لیے متفقہ انتخاب میں تعاون دے کر صحت مند جمہوری روایات کو استحکام بخشا، لی

Read more

حادثہ سے دیر بھلی

میگھناد دیسائی

اب ایک بات طے ہے کہ ٹیم انا کی ناکامی کے بعد کوئی ہندوستانی سیاست میں تا مرگ بھوک ہڑتال کو ہتھیار کے طور پر استعمال نہیں کرے گا۔ یہ انا ہزارے کا ایک مثبت تعاون ہے۔ سرکار نے ان کے ساتھ بات کرنے سے صاف انکار کر دیا۔ لو پال بل زیر غور ہے اور اسے کسی کے کہنے پر تیز نہیں کیا جاسکتا ہے۔ سرکار چلانے کا یہی طریقہ ہے۔ ٹیم انا نے پندرہ وزیروں پر بدعنوانی کا الزام لگایا۔ یہ تعداد پندرہ کیوں ہے، پچھتر کیوں نہیں ہے؟ کم از کم اب ہم لوگ اس تحریک کا اختتام دیکھیں گے۔ سیاست میں داخل

Read more

کسانوں اور مزدوروں کے خلاف ایک بڑی سازش

ابھیشیک رنجن سنگھ
مجوزہ تحویل اراضی اور باز آبادکاری قانون 2011 کو ملک کے غریب کسان اور عام آدمی کے مفادات کی اندیکھی کرتے ہوئے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں پیش کیا جاسکتا ہے، لہٰذا ملک کی مختلف تنظیموں نے اس کی مخالفت کرنی شروع کردی ہے، خاص کر نرمدا بچاؤ آندولن اور این اے پی ایم سے وابستہ سماجی کارکن میدھا پاٹکر نے اس مجوزہ قانون کے بارے میں اپنے اہم مشورے پارلیمنٹ کی اسٹینڈنگ کمیٹی کے سامنے رکھے ہیں۔ اس کے علاوہ، وہ اس موضوع پر سیاسی پارٹیوں ک

Read more

تنازعات کے گھیرے میں بہار کا راج بھون

اپنی رپورٹ میں بہار کے آڈیٹر جنرل نے گونر کے فضائی سفر اور راج بھون میں کئی عہدوں پر تقرری کے معاملے میں سختی کے ساتھ انگلی اٹھائی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2009-10 کے دوران گورنر 79 دنوں تک ریاست سے باہر

Read more

ہندوستانی بیجوں کو پرائیویٹ کمپنیوں کو بیچنے کی سازش

ششی شیکھر
یونیسکونے ہندوستان میں کئی جگہوں (حال ہی میں مغربی گھاٹ) کے حیاتیاتی تنوع (بایو ڈائیورسٹی) کو دنیا کے لیے اہم زرعی وراثت اور غذائی تحفظ کے لیے مفید مانتے ہوئے اسے محفوظ کرنے کی بات کہی ہے۔ بارہویں صدی میں ہی روس کے مشہور نباتیاتی سائنس داں نکولائی واویلو نے ہندوستان کو کئی فصلوں کا نقطۂ آغاز (اوریجن آف کراپ) بتایا تھا۔ پھر بھی حیاتیاتی تنوعات سے بھرے اس

Read more