مہاراشٹر حکومت کا کارنامہ : اب پیاسے مریں گے امراوتی کے کسان

پروین مہاجن
ناگپور سے150کلو میٹر دور امراوتی ضلع کا ماجری گائوں بنجر ہے۔راجستھان کے کھیتوں میں یہاں سے زیادہ ہریالی ہے۔گائوں والے بتاتے ہیں کہ یہاں کی کھیتی اوپر والے کے بھروسے ہے۔ویسے امراوتی ضلع کے اس علاقے میں’’اپر وردھا ڈیم‘‘ کا پانی پہنچتا ہے، لیکن ماجری جیسے کئی گائوں ہیں جہاں نہر کا پانی نہیں پہنچتا ہے۔حکومت نے کچھ سال قبل ایسے گائووں کو نہر سے جوڑنے کا منصوبہ بنایا تھا۔ اوور بریج کی طرح نہر بنانے کا اعلان بھی کیا تھا، لیکن چار سال گزر گئے ابھی کام بھی شروع نہیں ہوا ہے۔ یہاں کے کسان کھیتی چھوڑ کر شہروں میںدردر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ امراوتی کے کسانوں کا دوسرا چہرہ ماجری کے قری

Read more

!ویلفیئر پارٹی آف انڈیا : مسلمانوں کی توقعات پر کتنی کھری اترے گی

فردوس خان
ایک نئی پارٹی بنی ہے۔ اس پارٹی کی افتتاحی تقریب میں ایک عیسائی پادری نے گائتری منتر پڑھا تو تعجب ہوا، کیوں کہ اس پارٹی کیبنیاد میں جماعت اسلامی ہے، جس کے بارے میں لوگ یہ مانتے ہیں کہ یہ ایک کٹر مسلم تنظیم ہے۔ یہ سچ ہے کہ مسلمانوں کی ترقی کے بارے میں کوئی بھی سیاسی پارٹی نہیں سوچتی ہے، صرف نعرے ہی دیتی ہے۔ ہندوستانی سیاست میں موقع پرستی کے درمیان یہ مسلمانوں کی ضرورت بن گئی تھی کہ ایک ایسی سیاسی جماعت ہو جو مسلمانوں کے درد سمجھے

Read more

انا کو انا ہی رہنے دو

ڈاکٹر منیش کمار
انا ہزارے کی تحریک نے بلندی دیکھی۔ عوام کی جیت ہوئی، سرکار کو جھکنا پڑا، لیکن انا کی تحریک کے تعلق سے کئی سوال پیدا ہو رہے ہیں اور کئی غلط فہمیاں جنم لے رہی ہیں۔ کچھ لوگ انا کا موازنہ مہاتما گاندھی اور جے پرکاش نارائن سے کرنے لگے ہیں۔ کئی تجزیہ کاروں نے انا کی تحریک کو جے پی تحریک بتایا ہے۔ انا ہزارے کیا اس صدی کے گاندھی ہیں؟ کیا وہ جے پی ہیں یا پھر انا صرف انا ہیں؟
انا کی تحریک کے دوران نوجوانوں کو یہ کہتے ہوئے سنا گیا کہ انہوں نے نہ تو جے پی کو دیکھا ہے اور نہ ہی گاندھی کو۔ ان کے لیے انا ہزارے ہی

Read more

مغربی بنگال : فیصلہ کی گھڑی قریب ہے

بمل رائے
اسمبلی انتخابات اپنے آخری مرحلے میںہیں، فیصلہ کی گھڑی قریب ہے۔ دو تین سالوں کے رجحانات اور امید وںکی بنیاد پر ہم ایک نتیجہ تک پہنچتے رہے ہیں، لیکن معاملہ صرف 5-7فیصد ووٹوں کے ادھر ادھر ہونے کا ہے۔ قومی اور صوبائی لیڈران کے ذریعہ زبردست تشہیر جاری ہے۔ترنمول کے نئے گڑھ یادو پور سے کھڑے وزیراعلیٰ بدھا دیب بھٹاچاریہ کھلی جیپ میں ریلیاں نکال رہے ہیں تو وہیں ممتا پیدل مارچ کر رہی ہیںاور وہ بھی چار چار کلو میٹر کا پید ل سفرکر کے۔بستی کے گھرئو اور سومارو جب اپنی دیدی کے سامنے آ کر ہاتھ ملاتے ہیں تو چھتوں سے پھولوں کی بارش ہونے لگتی ہے۔ بدھا دیب کی جیپ تک چھوٹے لوگوں کے ہاتھ نہیں پہنچ پات

Read more

نتیش کے نقش قدم پر شیوراج

دلیپ چیرین
بدعنوانی کے خلاف نتیش کمار کی لڑائی کو چاروں جانب سے تعریفیں ملیں۔ جب نتیش کی حکومت نے 2009میں ایک بل پاس کرکے داغی نوکرشاہوں کی ملکیت ضبط کرنے کا انتظام کیا۔تب اس قانون نے نہ صرف سرخیاں بٹوریں بلکہ اسے جم کر تعریف بھی ملی۔نتیش سمیت سب نے یہ مانا کہ اس قانون نے انہیں دوبارہ وزیر اعلیٰ بنانے میں مدد کی۔اب مدھیہ پردیش کی حکومت نے بھی اسی طرح کا ایک بل پاس کیا ہے۔ یہ بل ان بابوئوں کی ملکیت کو ضبط کرنے کی طاقت دیتا ہے، جنھوں نے غیر قانونی طریقے سے بدعنوانی کے ذریعہ پیسہ کمایا ہے۔نیا اسپیشل کورٹ بل2011یہ یقینی بنائے گا کہ پٹواری سے لیکر چیف سکریٹری تک کے خلاف بدعنوانی کے

Read more

چھبیس لاکھ کروڑ کا گھوٹالہ

سدھارتھ رائے
اگر 2جی اسپیکٹرم گھوٹالہ ملک کے سبھی گھوٹالوں کی ماں ہے توآج جس گھوٹالے کا چوتھی دنیا پردہ فاش کر رہا ہے، وہ ملک میں ہوئے اب تک کے سبھی گھوٹالوں کا باپ ہے۔چوتھی دنیا آپ کو اب تک کے سب سے بڑے گھوٹالے سے رو برو کرا رہا ہے۔ ملک میں کوئلہ الاٹمنٹ کے نام پر تقریباً26لاکھ کروڑ روپے کی لوٹ ہوئی ہے۔ سب سے بڑی بات ہے کہ یہ گھوٹالہ وزیر اعظم منموہن سنگھ کے دورہ اقتدار میں ہی نہیں انہی کی وزارت میں ہوا ہے۔ یہ ہے کوئلہ گھوٹالہ۔ کوئلے کو کال

Read more

لندن نامہ

حیدر طبا طبائی
دو ہفتو ںکی مسلسل غیرحاضری کے بعد پھر حاضر خدمت ہوں گو کہ ابھی بھی حالات نے پیچھا نہیں چھوڑا ہے۔عالم عرب میں ایک زلزلہ سا بپا ہے کہ قذافی کے بعد اب کس ملک پر امریکی بمبار بم برسائیں گے۔ برس ہا برس سے اپنے عوام کے سینوں پہ پتھر کی سلوں کی طرح بیٹھے آمروں کا شکنجہ ڈھیلا پڑ رہا ہے۔ حکومتیں لرز رہی ہیں اور جہان نو کروٹیں لے رہا ہے، لیکن پہلے لندن کی اس نشست کا ذکر ضروری ہے جو چند وکیلوں، ڈاکٹروں اور صحافیوں نے منعقد کی تھی۔ اس نشست کی دعوت مجھے بھی ملی۔ یہ نشست تھی انا ہزارے صاحب کی زبردستی سیاست میں آنے کی۔ سب نے ایک آواز ہو کر کہا کہ یہ انا ہزارے اس وقت کہاں تھے جب گجرات

Read more