مہاراشٹر میں سینچائی گھوٹالہ: کب لوٹوگے عوام کو

مہاراشٹر کے نائب وزیر اعلیٰ اور شرد پوار کے بھتیجے، اجیت پوار نے اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ ان کے استعفیٰ کے بعد ریاست میں سیاسی بھونچال پیدا ہوگیا ہے۔ اجیت پوار پر الزام ہے کہ آبی وسائل کے وزیر کے طور پر انہوں نے تقریباً 38 سینچائی پروجیکٹوں کو غیر قانونی طریقے سے منظوری دی اور اس کے بجٹ کو من مانے ڈھنگ سے بڑھایا۔ دریں اثنا، سی اے جی نے

Read more

کائونٹ ڈائون شروع ہو چکا ہے

کمل مرارکا
سرکار اب ہر ایک دن دو، تین، چار کول بلاک الاٹمنٹ کو ردّ کر ر ہی ہے۔ اگر یہ کول بلاکس ضابطے کے مطابق بانٹے گئے تھے اور اس الاٹمنٹ میں کچھ بھی غلط نہیں تھا، تو اب اسے ردّ کیوں کیا جا رہا ہے؟ جو لوگ اس سب سے واقف ہیں، وہ جانتے ہیں کہ کول بلاک الاٹمنٹ میں کسی بھی ضابطے پر عمل نہیں کیا گیا تھا اور صرف وزیروں اور وزیر اعظم کے دفتر کی زبانی ہدایت پر ہی کول بلاک

Read more

زندہ رہنے کے لئے سیمنٹ ضروری ہے یا اناج

ابھیشیک رنجن سنگھ
تقریباً پانچ دہائی قبل ملک کے پہلے وزیر اعظم پنڈت جواہر لعل نہرو نے 2 اکتوبر، 1959 کو جس راجستھان کے ناگور ضلع میں پنچایتی راج کی شروعات کی تھی، اسی ریاست کی پنچایتوں اور گرام سبھاؤں کی اندیکھی کرنا یہ ثابت کرتا ہے کہ گرام سوراج کا جو خواب مہاتما گاندھی اور ڈاکٹر رام منوہر لوہیا نے دیکھا تھا، وہ آزادی کے 64 سالوں بعد بھی پورا نہیں ہوسکا۔ ہم بات کر رہے ہیں جھن

Read more

گجرات نہیں پاکستان جائیںگے نتیش

اشرف استھانوی
نتیش کمار کا پاکستان دورہ، چین ، بھوٹان ، ماریشس جیسے ان کے سابقہ غیر ملکی دوروں کے بر عکس ترقیاتی مہم کا حصہ نہیں ہوگا، یعنی ترقیاتی دورہ نہ ہو کر خیر سگالی دورہ ہوگا، جس کی دعوت انہیں حال ہی میں بھارت او ربہار دورہ پر آئے پاکستانی پارلیمانی وفد میں شامل مختلف پاکستانی ریاستوں او رمختلف سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں نے اپنی ریاست، اپنی حکومت یا اپنی پارٹی کی طرف سے دی تھی۔ ان باتوں کا خلاصہ گزشتہ دنوں مسٹر کمار نے جنتا کے دربار میں وزیر اعلیٰ پروگرام کے بعد میڈیا کے نمائندوں کے سامنے

Read more

ٹیلی کام سیکٹرس: چین کی دراندازی خطرناک ہے

ڈاکٹر منیش کمار
پوری دنیا شعبۂ مواصلات میں ہندوستان کی پیش رفت کی تعریف کر رہی ہے۔ ہندوستان میں دنیا کا تیسرا سب سے بڑا ٹیلی کام نیٹ ورک ہے،لیکن تضاد یہ ہے کہ وزارت مواصلات بھی آج تک کے سب سے بڑے گھوٹالہ میں شامل ہے، جسے ٹو جی اسپیکٹرم گھوٹالہ کا نام دیا گیا۔ طویل عرصہ تک وزارت مواصلات نے بہت سے قریبی دوست بنائے، جنھوں نے من مانے طریقہ سے اس شعبہ کا بیجا استعمال کیا۔ یہ ٹیلی کام لابی اتنی طاقتور ہے کہ حکومت اس کے سامنے عاجز اور لاچار نظر آتی ہے۔ حکومت کے

Read more

ترقی کی رفتار پٹری پر آ سکتی ہے

میگھناد دیسائی
جیسا کہ ہیرالڈولسن نے کہا ہے کہ سیاست میں ایک ہفتہ کا وقت بہت ہوتا ہے، کچھ دنوں قبل لوگ یہ پوچھ رہے تھے کہ وزیراعظم من موہن سنگھ بی جے پی کے حملوں سے نمٹنے کے لیے آخر کیا حکمت عملی اپنائیں گے، خاص طورسے کول بلاک معاملہ میں حزب مخالف کے ذریعہ گھیرے جانے کے بعد، کتنی جلدی جواب مل گیا۔ یو پی اے نے طے کر لیا تھا کہ اگر ان حالات پر فوری طور پر

Read more

سربجیت کیسے پاکستان پہنچا

اویس شیخ
پنجاب کے فیروز پور ضلع کے بھکھی وینڈ میں 19 مارچ 1962 کو سربجیت کی پیدائش ہوئی۔ کبڈی کا ایک بہترین کھلاڑی سربجیت میٹرک کا امتحان پاس کرنے کے بعد اپنے خاندان کے سہارے کے لئے کام کرنا شروع کرتا ہے۔ سرحدی علاقے سے کچھ کلو میٹر پہلے جا کر وہ کھیتوں میں کام کرنے لگتا ہے۔ دوسروں کے کھیتوں میں ٹریکٹر چلا کر، پیسہ کما کر، اپنے خاندان کی مدد کر کے سربجیت

Read more

دوسری پاری کا پیار

دلیپ چیرین
ایک ایسا ملک جہاں پر ریٹائرمنٹ کسی آدمی کی زندگی میں استقبال کرنے والا واقعہ نہیں ہوتا ہے، لیکن آج کل بہار کے بابو اس کے لیے انتظار کرتے دکھائی دے رہے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ انہیں اب ریٹائرمنٹ کے بعد کی زندگی زیادہ حسین لگ رہی ہے، کیوں کہ ریٹائرمنٹ کے بعد ایک اونچا عہدہ ان کا انتظار کر رہا ہے، وہ بھی خاص کر ان لوگوں کا جو برسر اقتدار پارٹی کے قریبی ہوں۔ بہار

Read more

یو پی کانگریس کے نئے صدر کی راہ آسان نہیں

اجے کمار
اتر پردیش میں کانگریس کا کوئی بھی تجربہ کامیاب نہیں ہو پا رہا ہے۔ دو دہائی سے زیادہ کا وقت گزر چکا ہے، لیکن کانگریس ایک بار ڈوبی تو پھر آج تک ابھر نہیں پائی ہے۔ اس دوران سونیا گاندھی، راہل گاندھی، پرینکا وڈیرا سبھی نے ایڑی چوٹی کا زور لگا لیا، صوبے کی کرسی پر کئی صدر بیٹھے، سب نے بڑے بڑے دعوے کیے، لیکن زمینی حقیقت کوئی بھی بدل نہی

Read more

فاربس گنج کانڈ: مالے نے دلایا آدھا انصاف، اب سپریم کورٹ سے آس

اشرف استھانوی
بہار کے بد نام زمانہ فاربس گنج گولی کانڈ کے مظلومین کو انصاف ملنے کی امید پیدا ہو گئی ہے۔ اس گولی کانڈ میں شکم مادر میں سانس لے رہے ایک معصوم بچہ سمیت پانچ افراد لقمہ اجل بن گئے تھے۔ یہ سبھی لوگ غریب اور پسماندہ مسلمان تھے اور ان کا قصور صرف اتنا تھا کہ وہ اپنے لیے لائف لائن کی حیثیت رکھنے والے 50 سال پرانے راستہ کو بند کرنے کی مخالفت کر رہے تھے جس پر چل کر

Read more