نتیش کا دہلی مارچ ، یہ عشق نہیں آساں

گزشتہ دنوں راجگیرمیں منعقد ہوا جنتا دل (یو)کی قومی کونسل کا اجلاس اس لحاظ سے بہت ہی غیر معمولی ہے کہ اس موقع پر یونیفارم سول کوڈ کے تعلق سے مرکزی حکومت کی کوششوں کو ملک کی وحدت کے لئے خطرناک قرار دیا گیا، مرکز کے خلاف مورچہ کھولنے کی بات کی گئی، آئندہ لوک سبھا انتخابات نتیش کمار کی قیادت میں لڑنے کا اعلان کیا گیا، تیسرے محاذ کی تشکیل نو پر غور ہوا اور شراب بندی موضوع بحث بنا۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ جے ڈی یو کا آئندہ پروگرام کیا ہے؟

Read more

کشمیر میں بے یقینی کے درمیان حالات سدھر رہے ہیں

تقریباً تین مہینے کی مسلسل ہڑتال اور کرفیو کی وجہ سے وادی کشمیر کے عوام اپنے گھروں میں قید ہیں۔ اس دوران سیکورٹی فورسیز کی کارروائی میں 88 لوگ مارے گئے ہیں اور 13 ہزار کے قریب لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ پیلیٹ گن کی وجہ سے کئی بچوں سمیت 300 لوگوں کی آنکھوں کی روشنی چلی گئی ہے۔ پولیس اب تک احتجاج کرنے والے چار ہزار نوجوانوں کو گرفتار کر چکی ہے۔ پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت 500 لوگوں کو جیل بھیج دیا گیا ہے۔ اس کا سیدھا مطلب یہ ہوا کہ ان 500لوگوں کو کسی عدالت میں پیش کئے بغیر دو سال تک جیل میں رکھا جاسکتا ہے۔ انہیں کوئی قانونی مدد نہیں مل سکتی ہے۔

Read more

جموں و کشمیر کے مستقبل کو لے کر 10 اکتوبر 1968 کو شیخ عبد اللہ کے ذریعہ سری نگر میں منعقد ’’جموں و کشمیر اسٹیٹ پیپلس کنوینشن‘‘ (ریاست جموں و کشمیر اسٹیٹ کے عوام کی کنوینشن ) میں جے پرکاش نارائن کی افتتاحی تقریر

دوستو،
میں شیخ عبداللہ کا شکر گزار ہوں کہ انہوں نے اس اہم کانفرنس کے افتتاح کے لئے مجھے بلایا۔ شاید آپ کو معلوم ہو کہ میں یہاں آنے سے تھوڑا جھجک رہا تھا۔

Read more

ایک طالبہ کے سوالوں کا نہیں ہے جواب وزیر اعظم کے پاس گنگا کی کیسے ہوگی صفائی؟

کی صفائی کو لے کر عجیب و غریب اعدادو شمار سامنے آرہے ہیں۔ ان اعدادو شمار سے گنگا کی صفائی کے تئیں وزیر اعظم نریندر مودی کے جذباتی لگائو کے بیان پر سوال کھڑے ہو رہے ہیں۔ آر ٹی آئی کے تحت پوچھے گئے سوالوں پر جو سرکاری جواب اور اعدادو شمار سامنے آئے ہیں،وہ حیران کن ہیں اور افسوسناک بھی۔ بی جے پی کے گزشتہ دوبرسوں کے دور اقتدار میں گنگا کی صفائی کے لئے کرڑوں روپے خرچ ہو چکے ہیں، لیکن ان خرچوں کا کوئی اثر گنگا پر دکھائی نہیں دے رہا ہے۔

Read more

اوڈیشہ :ایک گاؤں، 100 دن، 19 بچوں کی موت بھوک او رغذائی قلت سے پریشان ہے قبائلی گروپ

اوڈیشہ کے جاجپور ضلع کا ایک بلاک ہے سُکندا۔ اسی بلاک کے تحت نگڈا گاؤںآتا ہے۔ اس گاؤں میں آپ جائیں گے،تو آپ کو کچھ الگ دکھائی نہیںدے گا۔ لیکن جیسے ہی آپ کو یہ پتہ چلے گا کہ پچھلے تین چار مہینوں کے اندر اس گاؤں کے 19 بچوں کی موت ہوئی ہے، تو آپ یقینا ً یہ سوچنے پر مجبور ہو جائیں گے کہ آخر ایسا کیوں ہوا؟ کیا ان بچوںکر مناسب کھانا نہیںملا؟ طبی خدماتمیسر نہیںہوئیں؟ کیا غذائی قلت سے ان کی موت ہوئی؟ اس طرح کے ڈھیر سارے سوال ذہن میںآسکتے ہیں۔ فوڈ سیکورٹی ایکٹ، پبلک ڈسٹری بیوشن سسٹم اور منریگا جیسے قوانین کے ہونے کے بعد لیڈروں کے ذریعہ ترقی اور ہندوستان بدل رہا ہے جیسے دعوے کیے جانے کے بعد بھی اگر کسی گاؤںکے 19 بچوں کی موت مبینہ طور پر غذائی قلت سے یا کھانے کی کمی سے یا طبی سہولیات میسر نہ ہونے سے ہوتی ہے، تو پھر اسے کیا کہیں گے؟

Read more

سنہستھ کے بعد مدھیہ پردیش بی جے پی میں آئے گا طوفان

سورین شرما
سنہستھ کو لے کر ایک کہاوت مشہور ہے کہ اس کے انعقاد کے دوران جو بھی اقتدار میں رہتا ہے، سنہستھ کے بعد اس کی کرسی چلی جاتی ہے۔ مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان یوںتواس طرح کی باتوں کو جھٹلاچکے ہیں، لیکن ر یاست میںبن رہے سیاسی حالات کچھ اور اشارے دے رہے ہیں۔ سنگھ کے تیوروںکو دیکھ کر دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ سنہستھ کے بعد ریاست کی سیاست میں بھونچال آئے گا۔ ریاستی سنگٹھن کے جنرل سکریٹری کے طور پر پارٹی کے طاقتور عہدیدار اروند مینن کی چھٹی سے اشارہ مل رہا ہے کہ سنگھ اور بی جے پی ہائی کمان کوئی سخت فیصلہ لے سکتاہے۔

Read more

بہار: سیاست کے مکڑجال میں ٹاپرس گھوٹالہ

ٹاپرس گھوٹالہ کو لے کر روز نئے نئے راز فاش ہورہے ہیں۔ یہ بات معاملے کو کہاں اور کس سمت میں لے جائے گی،کہنا مشکل ہے۔ لیکن اب تک کی کارروائی میں پولیس کی تفتیش اس معاملے کے اہم ہیروز ’بہار اسکول ایگزامنیشن بورڈ‘‘ کے اس وقت کے ڈائریکٹر ڈاکٹر لال کیشوَر پرساد سنگھ ، ویشالی ضلع کے وی آر کالج کے پرنسپل (کرتا دھرتا ہی کہنا صحیح ہوگا) امیت کمار عرف بچہ رائے اور جنتا دل (یو) کی لیڈر اور سابق ایم ایل اے اوشا سنہا تک آکر سمٹ گئی ہے۔ اوشا سنہا ڈاکٹر لال کیشوَر پرساد سنگھ کی بیوی اور مگدھ یونیورسٹی کے گنگا دیوی ویمن کالج کی پرنسپل ہیں۔لال کیشور اور ان کی بیوی نے انٹر ایگزام کو دودھاری گائے سمجھ کر خوب دوہا۔ اوشا سنہا نے اس معاملے میں بیوی ہونے کا حق ادا کیا اور لال کیشور کے لئے جتنا کرسکتی تھی

Read more

صحافیوں کے تحفظ میں ہندوستان ناکام سیکورٹی معاملے میں خطرناک ملک

اتر پردیش کے سلطان پور میں ایک مقامی صحافی کرون مشرا کے قتل کا زخم ابھی تازہ ہی تھا کہ بہار اور جھارکھنڈ میں محض کچھ گھنٹوں کے فرق سے ایک کے بعد ایک دو صحافیوں کا قتل کردیا گیا۔بہار کے سیوان میں ’ہندوستان‘ اخبار کے بیورو چیف راج دیو رنجن اور جھارکھنڈ کے چترا میں مقامی ٹی وی چینل کے صحافی اکھلیش پرتاپ سنگھ مجرموں کی گولیوں کا شکار بن گئے۔ دونوں معاملوں میں گولی نزدیک سے چلائی گئی تھی ۔ پولیس کی ابتدائی جانچ یہ بتا رہی ہے کہ ان دونوں قتل کے پیچھے مقامی

Read more