لیبیا خانہ جنگی کی راہ پر

سدھارتھ آغا
بیسویں صدی کے دوران لیبیا میں دو ایسے ایوینٹس رونما ہوئے جن سے اس ملک کی تاریخ اور تقدیر تعبیر ہوئی اور جن کے پس منظر میں آج اس ملک پر چھائے بحران کے تعلق سے وضاحت طلب کی جاسکتی ہے۔ پہلا تھا دوسری جنگ عظیم کے دوران 1943میں ایلائڈ فورسز کا لیبیا کے شہر تبرک اور بن غازی کے محاذ پر جرمن اور اٹالین فوج پر فیصلہ کن فتح ۔ دوسرا1959میں کثیرالاقوامی ایسو کمپنی کے ذریعے لیبیا میں زیر زمین عمدہ درجے کے خام تیل کے بیشمار ذخائر کا پتہ لگانا۔ ایلائڈ فورسز کی جیت کی بدولت دوسری جنگ عظیم

Read more

عرب تانا شاہوں پر عوامی سونامی کی لہر

عفاف اظہر
لیبیا کے صدر کرنل معمر قذافی کے خلاف ہونے والے مظاہروں کا سلسلہ طویل اور گھمبیر ہوتا چلا جا رہا ہے، سلسلہ طرابلس تک پھیل چکا ہے اور مشرقی شہر بن غازی کے بیشتر حصے کا کنٹرول مظاہرین نے سنبھال لیا ہے ۔ قذافی کے بیٹے سیف السلام کا کہنا ہے کہ ملک شدید بحران کا شکار ہے اور یہاں خانہ جنگی کی صورتحال پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے حزب اختلاف کے گروہوں اور شدت پسندوں پر ملک توڑنے کی کوشش کرنے کا الزام بھی لگایا ۔ جبکہ صدر قذافی کا کہنا ہے کہ لیبیا میں ان مظاہروں کے ذمہ دار اسامہ بن لادن ہیں اور وہ اپنے خون کی آخری

Read more

مسلمانوں کو دہشت گرد ی نہیں تعلیم بچا سکتی ہے

اسد مفتی،ایمسٹرڈم ، ہالینڈ
لندن سے شائع ہونے والے اخبار آبزرور نے اپنی حالیہ اشاعت میں انکشاف کیا ہے کہ القاعدہ خود کش حملوں کے لیے خواتین کو بھی بھرتی کر رہی ہے۔ رپورٹ کے مطابق یوروپی یونین کے شعبہ انٹیلی جنس نے اس مقصد کے لیے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔ فرانسیسی انٹیلی جنس افسر نے بتایا ہے کہ فی الحال خواتین کو بھرتی کرنے کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ملا، خود کش حملہ آور خاتون کا پتہ چلانا آسان کام نہیں ہے۔ تحقیقات کرنے والے اہلکار کا کہنا ہے کہ القاعدہ کا کوئی ایک طریقہ کار کسی ایک مقام پر کامیاب ہوجائے تو وہ اس طریقہ کار یا طریقہ واردات کو کسی دوسری جگہ بھی استعمال کرتی ہے۔ ادھر امریکی انٹیلی جنس کے ایک ذمہ دار اہلکار نے بتایا کہ مزاحمت کار عراقی خواتین سے شادی کرنے کے بعد یا دوستی کرکے انہیں مختلف طریقوں سے خود کش حملوں کے لیے تیار کرتے ہیں۔ یوروپی یونین کے انسداد دہشت گردی کے کوآرڈینیٹر نے یوروپی ممالک کو ہدایات دی ہیں کہ وہ یوروپ میں خ

Read more

لیبیائی عوام اپنے حاکم سے حالت جنگ میں

عالمی اور خاص طور پر امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ لیبیا کی صورتحال روزبروز سنگین ہوتی جا رہی ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کا کہنا ہے کہ کرنل قذافی کی حکومت کی طرف سے عوام کو بتادیا گیا ہے کہ وہ گھروں میں رہیں اور سڑکوں پر آنے کی غلطی نہ کریں کیونکہ جو لوگ انہیں سڑکوں پر لا رہے ہیں وہ استعمار کے ایجنٹ اور لیبیا کے دشمنوں میں سے ہیں۔ اس لئے حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ حکومت کے خلاف کھڑے ہونے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔ عالمی میڈیا کے مطابق اب تک عوامی مظاہروں میں فائرنگ اور

Read more

لندن نامہ

حیدر طبا طبائی
برٹش ہوم آفس نے خبر یہ دی ہے کہ ہندوستان اور یوروپی یونین سے آزاد تجارت کے سمجھوتے کے تحت سالانہ بیس ہزار ہندوستانی کارکن برطانیہ میں داخل ہوسکیںگے۔ اس سمجھوتے سے ہزاروں ہندوستانی کارکن ہندوستان میں موجود بے روزگاری کے تحت برطانیہ آنے لگیںگے۔ اس کے باوجود بھارت سے جو لوگ آئیںگے وہ پڑھے لکھے ہوںگے۔ کم از کم گریجویٹ ضرور ہوںگے۔ یہ ہندوستانی کارکن انٹر کمپنی ٹرانسفر ویزا کے ذریعہ برطانیہ میں داخل ہوںگے، پہلی کھیپ میں20, 700 افراد ہندوستان سے آنے والے ہیں۔
ابھی ڈیوڈ کیمرون کی حکومت کو دو برس بھی نہیں ہوئے ہیں کہ ایک بار پھر وہ سنگ زنی کی زد میں ہے۔ عوام، پارلیمنٹ اور ٹونی بلیئر کے جام اقتدار کی سیاسی تلچھٹ بظاہ

Read more

لندن نامہ

حیدر طبا طبائی
مصری تانا شاہ حسنی مبارک نے یوروپ کی سڑکوں پر نمازیں پڑھوا دیں۔ صرف ایک شب پہلے اس نے بڑے طمطراق سے کہا تھا کہ استعفیٰ نہیں دوںگا، ستمبر میں میعاد پوری ہوجائے گی تو ہٹوںگا۔ ابھی اس کے اعلان کی گونج تحلیل بھی نہیں ہوئی تھی کہ وہ چلا گیا اور اس طرح مصر کے سلسلۂ فراعنہ کی ایک اور کڑی تماشا گاہ عبرت کی کارنس پہ جا سجی۔ تیس برسوں پرمحیط اس کا آہنی اقتدار صرف اٹھارہ دنوں میں موم

Read more

!دور اندیش فیصلے، عمل درآمد کی ضرورت

انور غازی
اقتصادی تعاون تنظیم بین الاقوامی طور پر ایشیا کے دس ممالک کی تنظیم ہے۔ یہ 1985میں پاکستان، ترکی اور ایران کے باہمی اشتراک سے وجود میں آئی۔ اس تنظیم کے بنیادی مقاصد میں سے ایک رکن ممالک کے درمیان یوروپی یونین کی طرح ’’آزادانہ تجارت‘‘ کا ماحول سازگار بنانا ہے، جہاں یہ تمام ممالک آزادانہ باہمی طور پر سامان کی خریدوفروخت اور خدمات مہیا کرسکیں۔ آپس میں اکنامکس، ٹیکنیکل اور کلچرل ترقی کو فروغ مل سکے۔ یہ تنظیم اپنے رکن ممالک کو ترقی میں اضافہ، تجارت میں اضافہ اور سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کرتی ہے۔ تنظیم کے دس رکن ممالک میں افغانستان، آذربائیجان، ایران، قزاقستان، کرغزستان، پاکستان، تاجکستان، ترکی، ترکمانستان اور ازبکستان شامل ہیں۔ اس تنظیم کا سکریٹریٹ اور ثقافتی ڈپارٹمنٹ ایران کے شہر تہران میں، اقتصادی بیورو ترکی میں اور سائنٹفک بیور

Read more

عرب ممالک میں تبدیلی کی لہر

تنویر جعفری
مصر کی تاریخ میں 11 فروری 2011 کا دن اس وقت درج ہوگیا، جب ملک کے اقتدار پر 30 سالوں تک قابض رہنے والے 82 سالہ صدر حسنی مبارک کو عوامی احتجاج کے سبب راجدھانی قاہرہ میں واقع اپنا عالی شان محل یعنی صدارتی محل چھوڑ کر شرم الشیخ بھاگنا پڑا۔ دوسرے ممالک کے مفاد پرست، ظالم اور اقتدار کے لالچی تاناشاہوں کی طرح مصر میں بھی صدر حسنی مبارک نے اپنی انتظامی گرفت بے حد مضبوط کر رکھی تھی۔ ایسا محسوس نہیں ہورہا تھا کہ مبارک کو ان کے جیتے جی کبھی اقتدار سے بے دخل بھی ہونا پڑ سکتا ہے، لیکن یہ سارے قیاس اس وقت ختم ہوگئے جب پرامن اور عدم تشددکے ملک گیر احتجاج کے سبب 18 دنوں تک چلے لمبے ٹکراؤ کے بعد مبارک کو اپنی گدی چھوڑنی پڑی۔ مبارک کی تین دہائیوں

Read more

انقلاب تو ہے مگر شعوری یا لاشعوری؟

عفاف اظہر
مصر میں اب تک کے سب سے بڑے عوامی احتجاج میں ہزاروں کی تعداد میں مظاہرین قاہرہ کے التحریر اسکوائر میں جمع ہوئے اور صدر حسنی مبارک سے اقتدار چھوڑنے کا مطالبہ کیا۔ مصر کی سڑکوں پر لاکھوں کی تعداد میں جمع مظاہرین کا مقصد صرف یہ ہے کہ تیس سال سے صدارت کی کرسی پر براجمان حسنی مبارک فوری طور پر صدارت چھوڑ دیں ۔مصری عوام کا کہنا ہے کہ انکا سب سے بڑا مسئلہ صدر حسنی خود ہیں ۔ دوسری طرف صدر حسنی مبارک پر اقتدار سے فوری طور پر الگ ہو جانے کے لئے بین الاقوامی سطح پر بھی دباؤ بڑھتا جا

Read more

لندن نامہ

حیدر طبا طبائی
قاہرہ کے تحریر اسکوائر کے بعد لندن کی سڑکوں پر مصری عوام سرگرم عمل ہیں۔ تیونس میں زین العابدین بن علی کے بعد پورے مشرق و سطیٰ میں ارتعاش سا آگیا ہے۔ محکوموں، مظلوموں اور مجبوروں کو لگا کہ ان کی تقدیر اپنے ہاتھ میں ہے۔ مصر میں اس عوامی بیداری کا ہدف اول بنا دنیابھر کے ڈکٹیٹروں کی طرح حسنی مبارک۔ وہ اس زعم میں مبتلا رہا کہ مصر اس کی مٹھی میں ہے اور کوئی توانا حزب اختلاف منظم ہی نہیں ہو پائی۔ اخوان المسلمین کو سالہا سال سے ریاستی جبر وتشدد کی چکی میں پیسا جارہا ہے۔ اخوان المسلمین میں اتنا دم خم نہیں ہے کہ وہ سربلند کر کے انقلاب کا نعرہ بلند کرسکے۔ مبارک کا کہنا ہے کہ ساڑھے تین لاکھ سے زیادہ نفری رکھنے والی سیاہ پوش مصری پولس میری وفادار ہے جو کسی بھی شورش کو کچلن

Read more
Page 49 of 61« First...102030...4748495051...60...Last »