!مغربی ایشیا اور امریکی مفادات

سنتوش بھارتیہ
ہم لوگ یا ہندوستان کے لوگ بھول گئے ہیں کہ مغربی ایشیا میں، لیبیا میں لڑائی چل رہی ہے۔یمن میں عوام سڑکوں پر ہیں۔شام میں لوگ بشارالاسد کی مخالفت کر رہے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ جہاں سے یہ کہانی شروع ہوئی تھی یعنی مصر، وہاں بھی تحریر چوک پر لوگ ڈٹے ہوئے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ فوج کو اقتدار چھوڑنا چاہئے اور انتخابات کرانے چاہئیں، لیکن اس میں سب سے زیادہ نقصان لیبیا کے لوگوں کا ہوا اور لیبیا کو لیکر ہی ہمیںزیادہ حساس ہونے کی ضرورت ہے۔ لیبیا کے اوپر اچانک

Read more

یہ آزادی کی دوسری لڑائی ہے

سنتوش بھارتیہ
ہندوستان سب سے بڑا جمہوری ملک ہونے کے با وجود دنیا کا سب سے بدعنوان ملک ہے۔دنیا میں 86 ایسے ملک ہیں جہاں ہندوستان سے کم بدعنوانی ہے۔آزادی کے بعد سے ہی ہم بد عنوانی سے جوجھ رہے ہیں۔بدعنوانی کے خلاف کارگر قانون بنانے کا منصوبہ اندراگاندھی کے دور سے چل رہا ہے۔42سال گزر گئے، پھر بھی ہماری پارلیمنٹ لوک پال قانون نہیں بنا سکی۔یہ جان کر ہر ہندوستانی کا سر شرم سے جھک جاتا ہے۔ کیا ہم بدعنوانی کو ختم کرنے کے لیے کچھ نہیں کر سکتے؟ اس سوال کو لے کر لوگوں میں غصہ ہے۔کشن بپٹ بابو راؤ ہزارے ع

Read more

کرکٹ میچ میں فتح، کرکٹ ڈپلومیسی میں شکست

سنتوش بھارتیہ
ہندوستان اور پاکستان کے درمیان سیمی فائنل کا میچ عالمی کپ کا سب سے بڑا میچ رہا۔ میڈیا نے اس میچ سے پہلے ایسا ماحول بنایا،جیسے یہ کوئی کرکٹ میچ نہیں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان جنگ ہے۔ میڈیا کا کردار سب سے اہم رہا۔ ٹی وی اینکروں نے اسے کرکٹ میچ کے بجائے قومی وقار کا سوال بنا دیا۔
میڈیا کاایسا برتاؤ حکومت ہند کے ایک فیصلہ کی وجہ سے ہوا۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان سیمی فائنل ہوگا، یہ خبر ملتے ہی وزیراعظم دفتر اور وزارت خارجہ اس سے فائدہ اٹھانے کی تیاری کرنے لگے۔ کرکٹ ڈپلومیسی کا پانسہ پھینکا گیا۔ پاکستان کے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو میچ کا دعوت نامہ

Read more

نوجوانوں کو سڑک پر اترنا ہوگا

سنتوش بھارتیہ
تیئس مارچ 1931 کی صبح 7 بجے لاہور جیل میں بھگت سنگھ، راج گرو اور سکھ دیو کو پھانسی دے دی گئی۔ یہ جانباز جنگ آزادی کے عظیم ہیرو تھے۔ ان کی آنکھوں میں آزاد ہندوستان کا خواب تھا۔ ایک ایسا ہندوستان جو دنیا بھر میں جمہوریت کی ایک مثال بنے گا۔ عوام کی قیادت کرنے والے لیڈر سچے اور ایماندار ہوںگے۔ 80 سال کے بعد یعنی 23 مارچ 2011 کو آزاد ہندوستان کی پارلیمنٹ میں اس موضوع پر بحث ہو رہی تھی کہ حکومت کو بچانے کے لیے ممبران پارلیمنٹ کی خری

Read more

بابا رام دیو جی ! پہلے اس ملک کو تو سمجھئے

سنتوش بھارتیہ
ہم نے بابا رام دیو سے کئی سوال کئے۔ ہمیں بابا رام دیو سے کوئی شکایت نہیں ہے اب شکایت کیوں نہیں ہے، وہ اس لئے نہیں ہے کہ ملک میں کوئی بھی آدمی کچھ بھی کاروبار کرنے کے لئے آزاد ہے۔ خواہ وہ کاروبار کاروں کا ہو، مٹھائی بنانے کا ہو یا پھر یوگ سکھانے کا یا دوائیاں بنانے کا ہو۔ بہت سے لوگ کر بھی رہے ہیں، لیکن جب آپ اپنے دائرہ کو چھوڑ کر باہر نکلتے ہیں اور آپ ملک کے دائرہ میں آتے ہیں تو پھر آپ کو ان سوالوں کا جواب دینے کے لئے تیار رہنا چاہئے، جن سوالوں

Read more

!پولس کے کردار پر سوال

سنتوش بھارتیہ
رادھیکا تنور ہمارے درمیان نہیں ہے لیکن اس کو لے کر اخبارات اور ٹیلی ویژن چینلوں میں کافی بحث ہو رہی ہے، لکھا جا رہا ہے۔ رادھیکا کا قتل ہو گیا۔ رادھیکا کا قتل جس چیز کے اوپر اشارہ کرتا ہے، وہ یہ ہے کہ ہمارا سسٹم اور سسٹم میں بھی خصوصاً وہ حصہ جو پولس سے جڑا ہوا ہے اب بیکار ہو چکا ہے۔میں ایک چیزبہت ادب سے کہنا چاہتا ہوں کہ پورے پولس محکمے کو چلانے والے برسراقتدار اور اپوزیشن لیڈران کو یہ سوچنا پڑے گا کہ ڈھیل کہاں دی گئی اورکسجگہ تبدیلی کی ضرورت ہے، پولس کی ٹریننگ میں، پولس کی نفسیات یا

Read more

پی جے تھامس کی ذلت بھری وداعی

سنتوش بھارتیہ
سی وی سی یعنی چیف ویجلنس کمشنر کے خلاف سپریم کورٹ نے اپنی رائے ظاہر کر دی اور یہ سپریم کورٹ کی رائے نہیں، یہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے کہ ان کی تقرری ناجائز ہے۔سپریم کورٹ کے اس فیصلہ سے ،جس کمیٹی نے ان کو منتخب کیا، جس میں وزیر اعظم، وزیر داخلہ اور اپوزیشن لیڈر سشما سوراج تھیں۔ اس کی کارکردگی پر ضرور سوال اٹھتاہے ، کیوں وزیر اعظم اور وزیر داخلہ نے سشما سوراج کی رائے پر توجہ نہیں دی۔سیاست میں اس طرح کا رویہ یا کارکردگی زیادہ سمجھداری بھری نہیںہے، اس لئے سمجھداری بھری ن

Read more

!جے پی سی سے امید

سنتوش بھارتیہ
لیجئے کفر ٹوٹا خدا خدا کر کے۔ آخر کارحکومت نے 2جی اسپیکٹرم معاملہ میں بدعنوانی کی تفتیش کے لئے 30افراد پر مشتمل کمیٹی کا اعلان کر ہی دیا۔ یہ کمیٹی 1998 سے 2009سے متعلق ٹیلی مواصلات کے سودوں کی بھی جانچ کرے گی اور اسپیکٹرم الاٹمنٹ اور ٹیلی مواصلات لائسنس کی قیمتوں پر مرکزی کابینہ کے فیصلوں اور اس کے نتائج کی بھی جانچ کرے گی۔
یقینا وزیر اعظم نے یہ فیصلہ بہت سوچ سمجھ کر اور بے حد دبائو کے بعد لیا ہوگا کیونکہ جس طرح مانسون اجلاس بنا کارروائی کے ختم ہو گیا اس سے یہ بات تو ثابت ہو گئی کہ وزیر اعظم کو بحالت مجبوری یہ فیصلہ لینا پڑا۔۔ اسی نے مرکزی حکومت کو یقینا جاگنے کے لئے آمادہ کیا۔ سب سے پہلے ہم بات کریں ان ممبران کی جن کو اس کمیٹی میں لیا گیا ہ

Read more

!بڑے مدیران کے چھوٹے سوال

سنتوش بھارتیہ
کسی بھی جمہوری نظام میں میڈیا کا کام ایک پہریدار کا ہوتا ہے۔ وہ حکومت کا نہیں، عوام کا پہریدار ہوتا ہے۔ میڈیا کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ حکومت جو کرتی ہے اور جو نہیں کرتی ہے، وہ اسے عوام کے سامنے لائے۔ جب کبھی حکمراں جماعت ،اپوزیشن پارٹیاں، افسران اور پولس اپنے فرائض کی ادائیگی نہیں کرتے ہیں، تب میڈیا انہیں ان کے فرائض کا احساس کراتا ہے۔ افسوس اس بات کا ہے کہ حکومت کی طرح ملک کا میڈیا بھی بحران میں ہے، وہ گمراہی کا شکار ہو گیا ہے۔
گزشتہ 16فروری کو وزیراعظم منموہن سنگھ نے ایک خصوصی پریس کانفرنس بلائی۔ خصوصی اس لئے کیونکہ اس میں صرف ٹیلی ویژن چینلوں کے چنندہ مدیران کوہی بلایا گیا ت

Read more

وزیراعظم ملک کو کہاں لے جا رہے ہیں؟

سنتوش بھارتیہ
پارلیمنٹ کو جاگنا ہوگا۔ ملک کے سارے اداروں پر خاص طور سے آئینی اداروں پر سوال کھڑے ہوگئے ہیں۔ انہیں سوالوں کے دائروں میں آنے سے بچنا چاہیے، نہیں تو نظام پر اعتمادکا خطرہ پیدا ہوجائے گا۔ نئے خطرات کے بادل نظر آرہے ہیں۔ اسرو نے ایک کمپنی کو فائدہ پہنچانے کے لیے قاعدے قوانین توڑ ڈالے۔ وزیراعظم پر ایک نیا سوال کھڑا ہوگیا، کیوں کہ اسرو وزیراعظم کے پاس ہے۔ کیا وزیراعظم کے پاس اتنا بھی وقت نہیں ہے کہ وہ اپنے ماتحت آنے والی وزارتوں کا کام کاج دیکھ سکیں، کیوں کہ اگر وزیراعظم کے علم میں یہ معاملہ آیا ہ

Read more