سرکار خشک سالی کو قومی مسئلہ اعلان کرکے حل تلاش کرے

ابھی ابھی جب میں ایڈیٹوریل لکھنے بیٹھا ہوں تو خبر آئی کہ پنجاب میں چار کسانوں نے خود کشی کرلی ہے۔ خود کشی کی خبریں اتنی عام ہو گئی ہیں کہ ان کی پرواہ نہ ٹیلی ویژن کو ہے، نہ اخباروں کو ہے اور نہ پارلیمنٹ کو ہے۔ہماری پارلیمنٹ میں کسی بھی طرح کی بد عنوانی کے معاملے پر بی جے پی، کانگریس پر اور کانگریس، بی جے پی پر الزام تراشیاں کرتی ہیں، نتیجہ کچھ نہیں نکلتا، بس وقت نکل جاتا ہے اور ایسا لگتا ہے کہ پارلیمنٹ چاہے وہ لوک سبھا ہو یا راجیہ سبھا، ایک گھٹیا ٹیلی ویژن سیریل کا متبادل بن گئی ہے۔

Read more

صدر راج کی آئینی حیثیت کی نئی تشریح ہونی چاہےے

یہ اداریہ لکھتے ہوئے تھوڑی جھجک ہورہی ہے،کیونکہ جب یہ شمارہ آپ کے پاس ہوگا، تب تک ہوسکتا ہے آپ کے سامنے صورت حال خود بخود واضح ہوچکی ہو۔اتراکھنڈ میںہائی کورٹ نے کچھ ایسے تبصرے کےے ہیں، جن کے اوپر سپریم کورٹ کے ذریعہ حتمی طور پر آئینی حیثیت کی تشریح ہونی چاہےے۔ اتراکھنڈ میںجس طرح صدر راج لگا اسے ہائی کورٹ میںہریش راوت نے چنوتی دی اور ہائی کورٹ نے یہ فیصلہ دیا کہ اتراکھنڈ میںصدر راج غلط لگایا گیا ہے اور اس نے اس صدر راج کو ختم کردیا۔ اس سے پہلے ہائیکورٹ نے تبصرہ کیاکہ راشٹرپتی راجہ نہیںہے، راشٹرپتی بھگوان نہیں ہے،جس کے اوپر بات چیت نہ کی جاسکے۔اس تبصرے کے پیچھے مرکزی سرکار کا یہ بیان تھا کہ کہیںپر بھی راشٹرپتی کے ذریعہ دی گئی صلاح کے اوپر سوال نہیںاٹھایا جاسکتا ہے۔

Read more

نتیش کی خواتین تحریک

کمار بہار کے وزیر اعلیٰ ہیں۔ انھوںنے بہار میںمکمل شراب بندی کا اعلان کردیا ہے۔ گجرات کے بعدبہار دوسری ریاست ہے، جہاںمکمل شراب بندی لاگو ہے۔ وہ لوگ جو شراب پیتے تھے، پریشان ہیں، جو شراب بیچتے تھے، ان سے زیادہ پریشان ہیں۔ سب سے زیادہ خوش بہار کی خواتین ہیں، جن سے نتیش کمار کو دل سے آشیرواد مل رہے ہیں۔ آج سے 6 ماہ پہلے جب نتیش کمار نے پہلی بار اعلان کیا تھا کہ بہار میںمکمل شراب بندی لاگو کریںگے، تب میرے پاس کئی طرح کی خبریں آئیں، جن میںسب سے بڑی خبر تھی کہ نتیش کمار شراب بندی کا اعلان کریںگے، لیکن مرحلہ وار

Read more

وزیر اعظم صاحب، زراعت اور کسان کی خیر خبر لیجئے

دل میں ایک کشمکش ہے کہ آخر اپنی بات کہیں، تو کس سے کہیں؟ وزیر اعظم نریندر مودی سے کہیں یا وزیر مالیات ارون جیٹلی سے کہیں؟ کشمکش اس لیے ہے کہ کون ہے، جو باتوں کو سن سکتاہے۔ مجھے لگتا ہے کہ سرکار اور بھارتیہ جنتا پارٹی، دونوں سے درخواست کرنا چاہیے۔

Read more

ہاشم پورہ ملیانہ کے ثبوت ختم قوم کے زخم پر سسٹم کا نمک

اب اس میں ذرہ برابر بھی شک نہیں رہا کہ اگر سرکار یا انتظامیہ نہ چاہے تو انصاف ملنے کا امکان بھی ختم ہو جاتا ہے۔ ہاشم پورہ اور ملیانہ میں سالوں پہلے قتل کا واقعہ ہوا،28 کے آس پاس لوگ مارے گئے۔ غازی آباد کے اس وقت کے ایس ایس پی، وی این رائے نے ایک کتاب لکھی ہے، جس میں اس قتل واقعہ ، اس کے طریقے اور اس میں ملوث افسروں کی تفصیلی وضاحت دی گئی ہے۔ قتل کی جائے واردات غازی آباد ضلع کی ایک نہر تھی اور اس وقت غازی آباد کے کلکٹر نسیم زیدی تھے، جو اس وقت ملک کے چیف الیکشن کمشنر ہیں۔ اس واقعہ کی جانچ ہوئی، سرکاروں نے انصاف دلانے کے وعدے کئے۔ تقریباً ہر پارٹی کی سرکار اتر پردیش میں آئی، ، متاثرہ خاندانوں کے ممبر انصاف کی دہلیز پر اور سرکار کی دہلیز پر اپنا سر پٹختے رہے، لیکن بالآخر انہیں انصاف نہیں ملا۔ اب میرٹھ کے موجودہ ایس ایس پی نے کہا ہے کہ ہاشم پورہ اور ملیانہ حادثے کے تمام ثبوت ختم ہو گئے ہیں۔ کس نے ختم کئے، کیسے ختم کئے ، کچھ پتہ نہیں ۔لیکن ایک نتیجہ کہ ہاشم پورا اور ملیانہ واقعہ کے ثبوت ختم ہو گئے ہیں۔

Read more

پدم ایوارڈز کی گھٹتی ساکھ

ایک وقت تھا، جب پدم ایوارڈز کا بہت احترام ہوتا تھا۔ جسے پدم شری، پدم بھوشن اورپدم وبھوشن ملتے تھے، اسے مانا جاتا تھا کہ یہ سماج کا ایسا شخص ہے،جس نے سماج کے عام آدمیوں سے ہٹ کر بہت اچھا کام کیا ہے۔ اور اس شعبہ میں ، جس کے لیے اسے پدم ایوارڈ ملا، غیر معمولی کام کا احترام ہوتا تھا۔ اب بھی مختلف شعبوں کے ایسے لوگ یاد آتے ہیں،جو سچ مچ منفرد تھے اور جن کا نام لیتے ہی ان کا کام یاد آجاتا ہے۔

Read more

دہلی سرکار کی قابل ستائش کوشش

دہلی سرکار نے ایک اچھی کوشش کی ہے اور دہلی کے رہنے والوں نے اس کوشش میں جس طرح سے ساتھ دیا ہے، وہ بتاتا ہے کہ ہم دھیرے دھیرے پختہ ہورہے ہیں۔میں کچھ مہینے پہلے چین گیا تھا۔ چین میں آبادی کے حساب سے سڑکوں پر جس آسانی سے گاڑیاں چل رہی تھیں، اس نے مجھے حیرت میں ڈال دیا۔ جب میں نے پتہ کیا، تو مجھے پتہ چلا کہ وہاں پر اوڈ -ایون فارمولہ لاگو ہے اور لوگ اپنے آپ اس کو فالو کرتے ہیں،کیونکہ پورے شہر میں مجھے کہیں پولیس نہیں دکھائی دی، ٹریفک پولیس تو کہیں نہیں ۔ میں بیجنگ کی بات کررہا ہوں۔میں نے پتہ کیا کہ کیا لوگ اس فارمولے کی حمایت کررہے ہیں، تو مجھے بتایا گیا کہ لوگ بہت خوشی سے اس فارمولے کی سپورٹ کرتے ہیں۔اتنا ہی نہیں ،چین میں کار خریدنا مشکل نہیں ہے،لیکن اس کارجسٹریشن نمبر حاصل کرنا بہت مشکل ہے۔ رجسٹریشن نمبر حاصل کرنے کے بعد ہی کوئی کار خرید سکتا ہے۔ میں نے سوچا کہ کیا یہ کبھی ہندوستان میں نافذ ہو پائے گا؟لوٹ کر میں نے اس کے بارے میں لکھا بھی تھا۔

Read more

ملک کام کے طریقہ کار میں تبدیلی چاہتا ہے

سال 2015 گزرچکا ہے او رجب ہم ملک کی اقتصادی حالت کو دیکھتے ہیں، تو بڑی حیرانی ہوتی ہے۔ کابینہ بدلنے سے سرکاریں بدلتی ہیں،یہ صرف کہا جاتا ہے۔ دراصل سرکا رکا مطلب نوکرشاہی ہوتا ہے اور ہماری نوکر شاہی ، سیاسی قیادت کو پریشان کرتی ہے۔ پریشان اس معنی میں کرتی ہے کہ نہ اسے عوام کی فکر ہوتی ہے اور نہ اس سیاسی پارٹی کی،جس کے تحت وہ کام کرتی ہے۔ وہ اپنے ڈھنگ سے چلتی ہے اور نتیجہ یہ ہوتا ہے کہ ملک قرض کے بوجھ تلے دبتا چلا جاتا ہے۔ یہیں پر موجودہ سرکار کا سوال آتا ہے۔ اگر وزیرخزانہ اچھاہو، تووہ ان چیزوں کے اوپر دباو¿ بنا سکتا ہے۔ اگر وزیر خزانہ اچھا نہ ہو یا اسے مالیاتی معاملات کی جانکاری کم ہو یا اس کے پاس وزارت خزانہ دیکھنے کا وقت نہ ہو یا وہ ماہرین نہ رکھ پائے یا پھر جن سوالوں کے جواب لینے چاہئیں، انھیںنہ لے پائے، تو مشکل کھڑی ہوجاتی ہے۔

Read more

ملک کام کے طریقہ کار میں تبدیلی چاہتا ہے

سال 2015 گزرچکا ہے او رجب ہم ملک کی اقتصادی حالت کو دیکھتے ہیں، تو بڑی حیرانی ہوتی ہے۔ کابینہ بدلنے سے سرکاریں بدلتی ہیں،یہ صرف کہا جاتا ہے۔ دراصل سرکا رکا مطلب نوکرشاہی ہوتا ہے اور ہماری نوکر شاہی ، سیاسی قیادت کو پریشان کرتی ہے۔ پریشان اس معنی میں کرتی ہے کہ نہ اسے عوام کی فکر ہوتی ہے اور نہ اس سیاسی پارٹی کی،جس کے تحت وہ کام کرتی ہے۔ وہ اپنے ڈھنگ سے چلتی ہے اور نتیجہ یہ ہوتا ہے کہ ملک قرض کے بوجھ تلے دبتا چلا جاتا ہے۔ یہیں پر موجودہ سرکار کا سوال آتا ہے۔ اگر وزیرخزانہ اچھاہو، تووہ ان چیزوں کے اوپر دباو¿ بنا سکتا ہے۔ اگر وزیر خزانہ اچھا نہ ہو یا اسے مالیاتی معاملات کی جانکاری کم ہو یا اس کے پاس وزارت خزانہ دیکھنے کا وقت نہ ہو یا وہ ماہرین نہ رکھ پائے یا پھر جن سوالوں کے جواب لینے چاہئیں، انھیںنہ لے پائے، تو مشکل کھڑی ہوجاتی ہے۔

Read more

ارکان پارلیمنٹ کے تئیں یہ دوہرا معیار کیوں

ان دنوں ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہ اور الاو¿نس بڑھانے کی تجویز پر پورے میڈیا میں شور مچ رہا ہے۔ میڈیا کاکہنا ہے کہ یہ شور عوامی جذبات کی وجہ سے مچا ہوا ہے، عوامی جذبات اس کے خلاف ہیں۔ ان کی دلیل ہے کہ ملک میں اتنی پریشانی ہو، اتنی غریبی ہو او ردوسری طرف ارکان پارلیمنٹ ، پارلیمنٹ میں کام نہ کررہے ہوں، تو انھیں اپنی تنخواہ او ر الاو¿نس بڑھانے کے بارے میں دور دور تک نہیں سوچنا چاہےے اور عوامی جذبات کا احترام کرنا چاہےے۔

Read more
Page 10 of 33« First...89101112...2030...Last »