اے خاک نشینو! اٹھ بیٹھو، وہ وقت قریب آ پہنچا ہے

ڈاکٹر منیش کمار
ایک کہاوت ہے، پیاز بھی کھائی اور جوتے بھی کھائے۔ زیادہ تر لوگ اس کہاوت کو جانتے ہیں، لیکن بہت کم لوگوں کو ہی پتہ ہے کہ اس کے پیچھے کی کہانی کیا ہے۔ایک مرتبہ کسی مجرم کو بادشاہ کے سامنے پیش کیا گیا ۔ بادشاہ نے سزا سنائی کہ غلطی کرنے والا یا تو سو پیاز کھائے یا سو جوتے۔ سزا منتخب کرنے کا موقع اس نے غلطی کرنے والے کو دیا۔ گلطی کرنے والے شخص نے سوچا ہ پیاز کھانا زیادہ آسان ہے، اس لئے اس نے سو پیاز کھانے کی سزا چنی۔اس نے جیسے ہی دس پیاز کھائے،

Read more

کامن ویلتھ پر سی اے جی رپورٹ: گھوٹالہ بازوں کو جیل بھیجنے کے لئے کافی ہے

سی اے جی (کمپٹرولر اینڈ آڈیٹر جنرل) کی رپورٹ آئی تو سیاسی حلقوں میں ہنگامہ برپا ہوگیا۔ دہلی کی وزیر اعلیٰ شیلا دکشت حزب اختلاف کے نشانے پر آ گئیں۔ رپورٹ سے ملک کے عوام کو پتہ چلا کہ دولت مشترکہ کھیل دراصل لیڈروں اور حکام کے لیے لوٹنے کا تیوہار بن گیا۔ کانگریس پارٹی کی طرف سے دلیل دی گئی کہ سی اے جی کی رپورٹ حتمی نہیں ہے، اس لیے کوئی کارروائی نہیں ہوگی۔ اب پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) میں فیصلہ ہوگا۔ اگر اب کوئی کانگریس پر یہ الزام لگائے کہ یہ سی اے جی کی معتبریت کو نقصان پہنچا رہی ہے تو یہ غلط نہیں ہوگا۔ ویسے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کو کانگریس پارٹی نے ٹو جی اسپیکٹرم معاملے میں پہلے ہی سیاست کی بھینٹ چڑھا دیا ہے

Read more

لوک پال بل: یہ عوام کے ساتھ دھوکہ ہے

ڈاکٹر منیش کمار
حکومت نے لوک پال بل کا مسودہ تیار کر لیا ہے۔ اس مسودہ کی ایک دلچسپ جانکاری یہ ہے کہ اگر کوئی شخص کسی افسر کے خلاف شکایت کرتا ہے اور اگروہ جھوٹی نکلتی ہے تو اسے 2سال کی سزا اور اگر صحیح ثابت ہوتی ہے تو بدعنوان افسر کو صرف 6مہینہ کی سزا۔ مطلب یہ کہ بدعنوانی کرنے والوں کی سزا کم اور اسے اجاگر کرنے والے کی سزا زیادہ۔ اس کے علاوہ بدعنوانی کے ملزم افسران کو مقدمہ لڑنے کے لیے مفت سرکاری وکیل ملے گا، جبکہ اسے بدعنوان اور خود کو صحیح ثابت کرنے کے لیے شکایت کنندہ کو اپنے ہی خرچ پر مقدمہ لڑنا ہوگا۔ یہ حکومت کا بدعنوانی سے لڑنے کا نایاب طریقہ ہے۔ حکومت نے اپنی پالیسیاں، ذہنیت اور نظریات واضح کر دیے ہیں کہ وہ بدعنوانی کے ایشو پرکتنی سنجیدہ ہے۔ ایک شرمناک بیان ملک

Read more

یہ کارڈ خطرناک ہے

ڈاکٹر منیش کمار
سال 1991 میںہندوستانی سرکار کے وزیر خزانہ نے ایسا ہی کچھ بھرم پھیلایا تھا کہ نجکاری اور لبرل ازم سے 2010 تک ملک کی اقتصادی صورت حال بہتر ہو جائے گی، بے روزگاری ختم ہو جائے گی، بنیادی سہولیات سے متعلق سارے مسائل ختم ہو جائیں گے اور ملک ترقی یافتہ ہو جائے گا۔ وزیر خزانہ اب وزیر اعظم بن چکے ہیں۔ 20 سال بعد سرکار کی طرف سے بھرم پھیلا یا جارہا ہے، رپورٹس لکھوائی جا رہی ہیں، عوام کو یہ سمجھانے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ آدھار کارڈ بنتے ہی ملک میں سرکاری کام آسان ہو جائے گا، ساری اسکیمیں کامیاب ہونے لگیں گی، جو اسکیم غریبوں تک نہیں پہنچ پاتی وہ پہنچنے لگے گی اور صحیح لوگوں کو بیج اور کھاد کی سبسڈی ملنے لگے گی۔ لیکن اگر یہ سب نہیں ہوا تو اس کے لیے کسے ذمہ دار مانا جائے

Read more

آرمی چیف کے خلاف حکومت کی سازش

والا ہے۔ آزاد ہندوستان کی پہلی حکومت منموہن سنگھ کی حکومت ہوگی، جسے شاید تاریخ کی سب سے سنگین شرمندگی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ہندوستانی فوج کا اعلیٰ افسر، ہندوستانی بری فوج کاسربراہ انصاف کے لیے وزیر دفاع اور وزیرا عظم کا چہرہ دیکھ رہا ہے، لیکن انھوں نے انصاف دینے

Read more

بی جے پی میں بہت دم ہے ۔۔۔۔

ڈاکٹر منیش کمار
بھارتیہ جنتا پارٹی اب ’پارٹی وِد ڈیفرنس‘ کی بجائے ’پارٹی اِن ڈائلیما‘ بن گئی ہے۔ دوسری پارٹیوں سے الگ ہونے کا دَم بھرنے والی پارٹی اب کشمکش میں مبتلا ہو چکی ہے۔ وہ سنگین گروہ بندی کی چپیٹ میں ہے، جس کی وجہ سے پارٹی کارکن عام جنتا سے دور ہوتے جارہے ہیں اور پارٹی کے لیڈروں اور کارکنوں میں دوریاں بڑھ گئی ہیں۔ پارٹی کی اندرونی کھینچا تانی کا حال یہ ہے کہ حزب اختلاف کی لیڈر کا کوئی بیان آتا ہے تو پارٹی کے دوسرے لیڈر ناراض ہو جاتے ہیں۔ حزب اختلاف کی لیڈر اور پارٹی صدر کے درمیان مہینوں بات چیت ہی نہیں ہوتی۔ صدر سب کی رائے سننے کے چکّر میں کوئی فیصلہ نہیں کر پاتے۔ کوئی صوبائی صدر کچھ بیان دے دیتا ہے تو پوری پارٹی ا

Read more

تیل کمپنیاں یا سرکار : ملک کون چلا رہا ہے

ڈاکٹر منیش کمار
یہ کیسی سرکار ہے، جو عوام کے خرچ کو بڑھا رہی ہے اور معیارِ زندگی کو گرا رہی ہے۔ ویسے دعویٰ تو یہ ٹھیک اس کے برخلاف کرتی ہے۔ وزیر خزانہ پرنب مکھرجی کہتے ہیں کہ سرکار اپنی پالیسیوں کے ذریعہ شہریوں کی کاسٹ آف لیونگ کو گھٹانا اور معیارِ زندگی کو بلند کرنا چاہتی ہے۔ لیکن وہ کون سی مجبوری ہے، جس کی وجہ سے پٹرول، ڈیزل اور رسوئی گیس کی قیمتیں بڑھائی جاتی ہیں۔ وزیر برائے پٹرولیم جے پال ریڈی کہتے ہیں کہ وہ اقتصادیات اور شہرت کے درمیان پھنس گئے۔ ویسے یہ اچھا بہانہ ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ قیمتیں اس لیے بڑھائی گئی ہیں، کیوں کہ بین الاقوامی بازار میں خام تیل کی قیمت بڑھ گئی ہے۔ یہ ایک جھوٹ ہے۔ وہ اس لیے، کیوں

Read more

منموہن سنگھ صدر اور راہل گاندھی وزیراعظم بنیں گے

سنتوش بھارتیہ
ہندوستان کے ایک طاقتور وزیر نے سی بی آئی کے ڈائریکٹر کو ملنے کے لیے بلایا۔ جب وہ ملنے آئے تو اس وزیر نے چائے منگوائی۔ جب چائے کا پہلا گھونٹ وزیر اور سی بی آئی ڈائریکٹر نے لے لیا تو وزیر نے کچھ کہنا چاہا۔ سی بی آئی ڈائریکٹر نے انہیں روکتے ہوئے بڑے ادب سے کہا کہ وزیر صاحب، آپ نے بلایا، میں پروٹوکول کے تحت آپ سے ملنے چلا آیا۔ پروٹوکول کہتا ہے کہ جب بھی کوئی مرکزی وزیر بلائے، مجھے جانا چاہیے۔ لیکن اب جو بھی آپ مجھے کہیں گے یا حکم دیں گ

Read more

اب لوک پال نہیں بنے گا

ڈاکٹر منیش کمار
جس بات کا ڈر تھا وہی سچ ہونے جا رہا ہے۔ ملک میں اب ایک سچا اور بدعنوانیوں سے نجات دلانے والا لوک پال نہیں بنے گا۔ اس کے لیے حکومت، کانگریس پارٹی ، اپوزیشن پارٹیاں اور انا ہزارے ذمہ دار ہیں۔ ان سب سے غلطیاں ہوئی ہیں ۔ ایسی غلطیاں جسے ملک کے عوام کبھی معاف نہیں کریں گے۔ لوک پال کے نام پر ملک میں جو سیاسی ماحول بنا ہے وہ باکسنگ سے کم نہیں ہے، جسے جہاں موقع ملتا ہے پنچ مار دیتا ہے۔ کانگریس انا ہزارے کو کبھی آر ایس ایس کا ایجنٹ بتاتی ہے تو کبھی تانا شاہ۔ انا ہزارے اور ان کے معاون حکومت کو دھوکہ باز اور جھوٹا بتاتے ہیں ۔ بھارتیہ جنتا پارتی اور کانگریس میں الگ تو تو میں میں چل رہی ہے ۔ ملک کے عوام بدعن

Read more