ان نوجوان طلبا کے لئے کون سوچے گا؟

سماجی کارکن انا ہزارے نے بدعنوانی کے خلاف لڑائی کی اپنی مہم میں نوجوانوں کے جوش اور جذبے کو مضبوطی دیتے ہوئے کئی بار یہ کہا ہے کہ نوجوان طاقت ہی قومی طاقت ہے، لیکن سیاسی جماعتوں نے اپنے مفاد کے لئے انہیں اپنے حق میں اس طرح کر لیا کہ طلبا کی سیاست اور ان کے مدعے انہیں پارٹیوں کے ہو کر رہ گئے ہیں۔ طلبا خود کو جتنی جلدی اس بدنظمی سے باہر نکالیں گے اور سیاست میں پھیلی بدعنوانی کے خلاف آواز اٹھائیں گے،اتنی ہی جلدی صحیح معنوں میں ملک آزاد ہو پائے گا۔

Read more

یہ تیسرا مورچہ نہیں ہے

جب 14 پارٹیوں کے 17 لیڈروں نے ایک دوسرے کا ہاتھ اٹھاکر یہ تصویر کھنچوائی، تو وی پی سنگھ کے راشٹریہ مورچہ کی یاد تازہ ہو گئی۔ ایسی ہی تصویریں اُن دنوں اخباروں میں شائع ہوا کرتی تھیں۔ وہ الگ وقت تھا۔ آج کا دور الگ ہے۔ وی پی سنگھ کئی سیاسی پارٹیوں کو متحد کرنے میں کامیاب ہوئے تھے۔ بدعنوانی کے خلاف کامیاب تحریک کی تھی اور کانگریس مخالف لہر پیدا کی تھی۔ وہ تیسرے مورچہ کی کامیاب کوشش ثابت ہوئی۔ کانگریس ہاری اور وی پی سنگھ وزیر اعظم بنے۔ اس تصویر میں لیڈر تو ساتھ دکھائی دے رہے ہیں، لیکن ان میں نہ کوئی قوتِ ارادی ہے، نہ دور اندیشی ہے، نہ پلاننگ ہے اور نہ ہی اتحاد ہے۔ یہ تصویر اپنے آپ میں کئی تضادات لیے ہوئے ہے، اس لیے تیسرا مورچہ بننے سے پہلے ہی ٹوٹتا ہوا نظر آ رہا ہے۔

Read more

انتخابی سروے لوگوں کو گمراہ کرنے کے لئے ہیں

عام آدمی پارٹی کا دعویٰ ہے کہ وہ دہلی میں سرکار بنائے گی۔ اس دعوے کی بنیاد عام آدمی پارٹی کے ذریعہ کیا گیا سروے ہے۔ اگر سروے ہی انتخاب کا معیار ہوتے تو صرف ہندوستان ہی کیوں، دنیا کے کسی بھی ملک میں لوگ انتخاب کے نتیجہ کا انتظار ہی نہیں کرتے۔ اروند کیجریوال کا دعویٰ ہے کہ عام آدمی پارٹی کو 32فیصد ووٹ ملیں گے ا ور 70میں سے 46سیٹ پر ان کی پارٹی کے امیدوار جیت درج کرائیں گے۔ ویسے اس طرح کا دعویٰ کرنا سیاسی لحاظ سے غلط نہیں ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ ایک ہی دن، ایک ہی علاقے میں اگر دس سروے ایک ساتھ ہوتے ہیں، تو یہ مان کر چلئے کہ ان سبھی کے نتائج مختلف ہوں گے۔ تاہم سروے کی بنیا دپر خود کو فاتح قرار دینا افواہیں پھیلانے کی کوشش ہے۔ ہندوستان میں پہلی بار

Read more

عام آدمی پارٹی کو انا ہزارے کی حمایت حاصل نہیں ہے

دہلی کے اسمبلی انتخابات میں عام آدمی پارٹی کی سب سے بڑی پریشانی انّا ہزارے بنے ہوئے ہیں۔ یہ پارٹی انّا ہزارے کی تحریک سے الگ ہو کر بنی ہے۔ اس پارٹی کی بنیاد انّا ہزارے کی معتبریت،مقبولیت، ان کے اصول اورقربانی ہے۔ لیکن انّا ہزارے کا صاف صاف حکم یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی ان کے نام، ان کی تصویر، ان کی ٹوپی اور ان کی کسی بھی چیز کو استعمال نہیں کر سکتی ہے۔ انّا کے بغیر پارٹی کی معتبریت پر سوال اٹھتا ہے اور انّا کا نام لینے سے انّا ناراض ہو جاتے ہیںجب کہ حقیقت یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی کے امیدوار انّا کا نام

Read more

سعودی عرب میں بدعنوانی: توسیع حرم بھی اس کی لپیٹ میں

لیکن گزشتہ چند برسوں سے سعودی عرب جن خصوصیات کی بدولت ہردلعزیز تھا،اب ان پر گہن لگتا جارہا ہے اور جن باتوں کو لے کر پوری دنیا کے مسلمان اس ملک پرفخر کرتے تھے ، اس میں تیزی سے کمی آنی شروع ہوگئی ہے۔بلکہ یہ سن کر تو بہت ہی افسوس ہوتا ہے کہ ملک کے فرمانروا جن کو خادم الحرمین کے خطاب سے یاد کیا جاتا ہے اور جس حرمین کا خادم بننے میں فرمانروا بھی فخر محسوس کرتے ہیں ،آج اسی حرم کیلئے مختص بجٹ میں ان کے رشتہ دار بد عنوانی کرر ہے ہیں اور خادم حرمین رشتہ داری کے لحاظ میں خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔

Read more

صحافت کا سیاہ چہرہ

بیرونی ممالک میں ہندوستان کے مفادات کو لے کر جاسوسی کرنا جس طرح ہندوستان کا حق ہے، اسی طرح سے دوسرے ملکوں کا اپنے ملک کے لیے جاسوسی کرنا ان کا حق ہے۔ ان کے جاسوس ہمارے ملک سمیت کئی ملکوں میں بکھرے پڑے ہیں اور ہمارے جاسوس بھی پڑوسی ملکوں سمیت کئی ملکوں میں بکھرے پڑے ہیں۔ جاسوس پکڑے بھی جاتے ہیں، جاسوس خبریں بھی بھیجتے ہیں، اُن خبروں میں جو ملک کی سیکورٹی سے جڑی خبریں ہوتی ہیں، ان خبروں کے اوپر عمل ہوتا ہے اور باقی خبریں ردّی کی ٹوکری میں ڈال دی جاتی ہیں۔ جنرل وی کے سنگھ نے ٹی ایس ڈی کو اسی طرز پر بنایا۔

Read more

نریندر مودی خوش فہمی میں ہیں

2014 کے الیکشن میں کچھ لوگ فسادات کو پیمانہ بنانا چاہتے ہیں، لیکن خود مودی ترقی کو پیمانہ بنانا چاہتے ہیں۔ اس لیے مودی کے اس دعویٰ کو جانچنے پرکھنے کی ضرورت ہے۔ پچاس کی دہائی سے ہی صنعت کاری کی سمت میں گجرات ملک میں سب سے آگے تھا۔ ہندوستان کی سب سے بڑی کمپنی ریلائنس گجرات میں ہے۔ ہندوستان کی ساری بڑی ریفائنری گجرات میں ہے۔ سارے بڑے پاور پروجیکٹ گجرات میں ہیں۔ گجرات ملک کا واحد ایسا ساحل سمندر ہے، جہاں سے دورِ قدیم سے ہی تجارت ہوتی رہی ہے۔ اس لیے فطری ہے کہ گجرات میں سب سے زیادہ صنعت کاری ہوگی ہی۔ یہ نریندر مودی کی وجہ سے نہیں ہے۔ یہ گجرات کی روایتی اقتصادی مضبوطی کی وجہ سے ہے۔ اگر دہلی میں ڈیڑھ کروڑ لوگ آکر بس رہے ہیں، تو اس میں شیلا دیکشت کا کوئی کمال نہیں ہے، کیوں کہ اس کی وجہ ہے کہ دہلی میں ہی سارے بڑے دفتر ہیں۔ دہلی سے ہی راج کاج چلتا ہے، اس لیے دہلی میں لوگ آئیں گے ہی اور بسیں گے ہی۔

Read more

فسادات شروع ہو چکے ہیں

مغربی اتر پردیش کا شاملی اور مظفر نگر ضلع فرقہ وارانہ فسادات کی زد میں ہے، جس کی وجہ سے اب تک سینکڑوں لوگوں کی موت ہو چکی ہے اور ہزاروں فیملی اپنا گھر بار چھوڑ کر محفوظ جگہوں کی تلاش میں نقل مکانی کر رہے ہیں۔ اس علاقہ کے زیادہ تر لوگ عام طور سے کسان ہیں۔ ہندو مسلم بھائی چارے کی زندگی جیتے چلے آئے ہیں۔ اس علاقے میں کبھی فسادات نہیں ہوئے۔ ایسے میں یہ سوال اٹھتا ہے کہ آخر کیا وجہ تھی کہ یہا فرقہ وارانہ تناؤ بڑھا اور فسادات نے اتنی خطرناک صورت اختیار کر لی۔ میڈیا کے ذریعے یہ معلوم ہوا کہ ایک برادری کی لڑکی کے ساتھ دوسری برادری کے لڑکے کا عشق اور پھر اس کے نتیجہ میں دونوں فرقوں کے تین لڑکوں کا قتل ہو جانا ہی فساد کی اصل وجہ بنا۔ اسی کو بہانہ

Read more

آئی بی ، سی بی آئی تنازعہ: ملک کے اتحاد و سا لمیت کے لئے خطرہ

حکومت خود کو سیکولر ثابت کرنے کے لیے اس قدر بے چین ہے کہ اس نے حکومت کے لیے کام کرنے والی سی بی آئی کو ذریعہ بنا کر ملک کے لیے کام کرنے والی آئی بی کو کٹہرے میں لا کھڑا کیا ہے۔ آئی بی افسران حکومت کے تئیں بے حد مشتعل ہیں۔ فی الحال آئی بی وزارت داخلہ یا ریاستی حکومتوں سے اندرونی سلامتی سے متعلق اطلاعات راست طور پر شیئر نہیں کر رہی ہے اور نہ ہی دہشت گردی سے متعلق کسی آپریشن میں وہ ریاستی حکومتوں سے کوئی تعاون کر رہی ہے۔ آئی بی کے چیف آصف ابراہیم نے اس سلسلہ میں وزیر

Read more
Page 20 of 39« First...10...1819202122...30...Last »