بہار اسمبلی الیکشن پر ’چوتھی دنیا‘ کا پہلا سروے: نتیش کمار سب سے آگے

بہار کا آئندہ اسمبلی الیکشن تاریخی ہونے والا ہے۔ یہ پیچیدہ ہونے کے ساتھ ساتھ مستقبل کی سیاست کا راستہ متعین کرنے والا ثابت ہوگا۔ فاتح کون ہوگا، یہ نتیجہ آنے کے بعد ہی پتہ چل پاتا ہے، لیکن سب یہی جاننے کے خواہش مند ہیں کہ الیکشن کا نتیجہ کیا ہوگا؟ بہار میں پچھلے دو تین سالوں میں کافی سیاسی اٹھا پٹک ہوئی ہے۔ بی جے پی – جے ڈی یو کا اتحاد ٹوٹا۔ نتیش اور مودی کی سیاسی دشمنی ہوئی۔ لالو یادو کو جیل کی سزا ہو گئی اور وہ فی الحال انتخابی سیاست سے باہر ہو گئے۔

Read more

ملک کا سب سے بڑا گھوٹالہ

بجلی گھوٹالے میں پولس کی فائنل رپورٹ کا اپنے دائرۂ اختیار سے باہر جا کرنوٹس لینے اور تین سال تک اس رپورٹ کو دباکر رکھنے والے جج کے خلاف آلہ آباد ہائی کورٹ کے وجیلنس بیورو نے کارروائی شروع کر دی ہے۔ مذکورہ جج کے خلاف شکایت یہ بھی ہے کہ انہوں نے محکمہ انصاف میں پرنسپل سکریٹری رہتے ہوئے حساس امور کو چھپا کر ایک متنازع سرکاری وکیل کے جج بننے میں مدد کی تھی۔ اس معاملہ کے سامنے آتے ہی اتر پردیش کے پاور سیکٹر میں ہوئے اربوں کے گھوٹالے کی لیپا پوتی میں لگے ججوں، نوکر شاہوں اور محکمہ جاتی افسروں کے ساتھ ساتھ سی بی آئی کے بھی قانون کے شکنجے میں آنے کا امکان بڑھ گیا ہے۔ اتر پردیش کا بجلی گھوٹالہ ملک کا سب سے بڑا گھوٹالہ ثابت ہونے والا ہے، جس میں نہ صرف نیتا اور نوکر شاہ، بلکہ جج اور سی بی آئی کے افسر بھی ملوث ہیں۔ یہ دلچسپ اور مزاحیہ ہی ہے کہ اربوں کے بجلی گھوٹالے کی سی بی آئی جانچ کا سرکاری فرمان جاری ہو جانے کے بعد بھی اسے عدالت میں دبائے رکھا گیا اور آخر کار سی بی آئی نے ہی جانچ کرنے سے منع کر دیا۔ بجلی گھوٹالے میں سی بی آئی بھی ملزم ہے۔

Read more

گھوٹالوں کا کارپوریشن این ٹی پی سی

نیشنل تھرمل پاور کارپوریشن لمیٹڈ (این ٹی پی سی) نے سرکاری پروجیکٹ کے لیے قبضے میں لی گئی زمین خفیہ طریقے سے بوفورس – فیم ہندوجا گروپ کو دے دی۔ سرکار کے سیمادری پروجیکٹ کی سینکڑوں ایکڑ زمین ہندوجا گروپ کو دیے جانے کے معاملے میں وزارتِ توانائی مشتبہ طریقے سے خاموشی اختیار کیے ہوئے ہے، جب کہ سنٹرل وجیلنس کمیشن (سی وی سی) نے ضروری کارروائی کے لیے اسے وزارتِ توانائی کو پہلے ہی بھیج دیا تھا۔ یہاں تک کہ وزیر اعظم کے دفتر (پی ایم او) تک کو اس کا علم ہے۔ این ٹی پی سی کے چیئر مین و منیجنگ ڈائرکٹر (سی ایم ڈی) اروپ رائے چودھری نے آندھرا پردیش کے وشاکھاپٹنم میں واقع سیمادری پروجیکٹ کی تحویل میں لی گئی زمین ہندوجا گروپ کو دے کر قانون کی تو دھجیاں اڑائیں ہی، این ٹی پی سی اور ملک کو زبردست اقتصادی اور تجارتی نقصان بھی پہنچایا۔ 19 جون، 2014 کو این ٹی پی سی بورڈ کی میٹنگ میں تجویز پاس کرکے ہندوجا گروپ کو زمین دے دی گئی تھی۔

Read more

راہل تک نہیں پہنچ رہی ہے کانگریسیوں کے رونے کی آواز

انیس سو چوراسی میں بی جے پی دو سیٹوں پر سمٹ گئی تھی اور آج بھارتیہ جنتا پارٹی کی مرکز میں سرکار ہے۔ تجزیہ کریں تو پاتے ہیں کہ تب بھی بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈروں اور کارکنوں کے من میں ناامیدی نہیں آئی تھی۔ وہ لگاتار کام کرتے رہے۔ اٹل بہاری واجپئی اور لال کرشن اڈوانی کی قیادت میں اعتماد رکھتے ہوئے انتخابی لڑائیاں لڑتے رہے۔ یہ الگ بات ہے کہ آج اٹل جی بیمار ہیں اور بی جے پی کے دوسرے قائد شری لال کرشن اڈوانی سیاسی جلا وطنی جھیل رہے ہیں۔ کوئی بھی انہیں یا مرلی منوہر جوشی کو فرنٹ لائن میں نہیں دیکھ پا رہا ہے۔ آج کے دور کے قائد کا چہرہ بدل چکا ہے۔ آج نریندر مودی بھارتیہ جنتا پارٹی کے نہ صرف مقبولِ عام لیڈر ہیں، بلکہ بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے راہبر بھی ہیں۔

Read more

ایک بار پھر خطرے میں دہلی کی 123 وقف املاک

تقریباً ایک برس قبل 2 مارچ، 2014 کو دہلی کی 123 وقف املاک کی ملکیت دہلی وقف بورڈ کے حوالے کر دی گئی تھی۔ بعد ازاں، 22 مئی کو وشو ہندو پریشد نے دہلی ہائی کورٹ میں یو پی اے حکومت کے مذکورہ بالا آرڈر کو چیلنج کر دیا۔ عدالت نے موجودہ این ڈی اے حکومت کی وزارتِ شہری ترقیات کو ہدایت دی کہ وہ تمام فریقین بشمول دہلی وقف بورڈ، وشو ہندو پریشد، دیگر تنظیموں اور سرکاری باڈیز کے نمائندوں کی میٹنگ بلائے اور پھر ان کی تفصیلات اسے پیش کرے۔ مذکورہ میٹنگ تو ابھی ہونی ہے۔ دریں اثنا یہ خبر بھی گشت کر رہی ہے کہ حکومت نے یہ جاننے کے لیے انکوائری شروع کر دی ہے کہ کہیں دہلی وقف بورڈ کو سابقہ مرکزی حکومت کے ذریعے ان املاک کو غیر قانونی طور پر تو ٹرانسفر نہیں کیا گیا ہے؟ اس طرح 123 وقف املاک کا معاملہ حل ہونے کے بعد بھی مزید الجھتا ہی جا رہا ہے اور یہ املاک بے یقینی کی کیفیت میں مبتلا ہیں اور غیر قانونی قبضہ کا شکار ہیں۔ ’چوتھی دنیا‘ کو یہ کریڈٹ حاصل ہے کہ اس نے 2 مارچ، 2014 کو ڈی نوٹیفکیشن سے پونے دو ماہ قبل (27 جنوری، 2014 کے اپنے شمارہ میں) اس تعلق سے 123 وقف املاک کی مکمل فہرست کے ساتھ انکشافاتی رپورٹ پیش کی تھی اور پھر اپنے 17 مارچ کے شمارہ میں اس تاریخی فیصلہ کو کور کیا تھا۔ اب یہ جائزہ لینے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ کیا ہے نیا واویلا اور اس کا پس منظر؟

Read more

دہلی اسمبلی انتخابات: یہاں مدعے نہیں شخصیت کی لڑائی ہے

دہلی اسمبلی الیکشن میں تیزی سے تبدیلی دکھائی دے رہی ہے۔ سبھی پارٹیاں حملہ آور نظر آ رہی ہیں۔ تشہیر و تبلیغ میں کوئی کسی سے پیچھے نہیں ہے۔ سبھی پارٹیاں پانی کی طرح پیسہ بہا رہی ہیں۔ لیکن، افسوس اس بات کا ہے کہ دہلی اسمبلی الیکشن مدعے سے خالی ہو گیا ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی، عام آدمی پارٹی اور کانگریس پارٹی دہلی کے عوام سے جڑے مدعوں پر انتخاب نہیں لڑ رہی ہیں۔ یہ تینوں پارٹیاں مدعوں کو چھوڑ کر چہرے کے بھروسے الیکشن لڑ رہی ہیں۔ ان کے درمیان ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کی مقابلہ آرائی چل رہی ہے۔ ایک دوسرے پر الزام لگا کر بحث جیتنے کی ہوڑ لگی ہے۔ عوام کا دل جیتنے کی کوشش کوئی بھی نہیں کر رہا ہے۔ تینوں پارٹیوں نے الیکشن کو مدعوں سے بھٹکا کر شخصیت کی لڑائی بنا دیا ہے۔ اس درمیان عام آدمی پارٹی کی الجھنیں بڑھ گئی ہیں۔ پارٹیوں کو مخالفین سے زیادہ اپنے ہی لیڈروں کے بیانوں سے نقصان ہو رہا ہے۔

Read more

دہلی اسمبلی الیکشن: بی جے پی اور ’آپ‘ کا وقار دائو پر

دہلی اسمبلی انتخابات کا ہائی وولٹیج ڈرامہ جاری ہے۔ یہ الیکشن ایک سسپنس تھریلر سنیما کی طرح بن گیا ہے۔ الیکشن کون جیتے گا، سرکار کون بنائے گا، اس بارے میں ووٹوں کی گنتی کے بعد ہی کچھ کہا جا سکتا ہے۔ وجہ یہ کہ اس الیکشن میں ہر پارٹی کا رول ہے، چاہے وہ بھارتیہ جنتا پارٹی ہو، عام آدمی پارٹی ہو، کانگریس ہو، بہوجن سماج پارٹی ہو یا پھر آزاد امیدوار ہی کیوں نہ ہوں، ان سبھی کا انتخابی نتائج میں دخل ہوگا، کیوں کہ ان میں سے کوئی جیتے گا، کوئی جتائے گا، تو کوئی کسی کی لٹیا ڈبوئے گا۔ مطلب یہ کہ ہر سیٹ پر کانٹے کی ٹکر ہونے والی ہے۔

Read more

اڑیسہ میں جندل کا میگا مائننگ گھوٹالہ

ہندوستان میں سب سے زیادہ اسٹیل پیدا کرنے والوں میں سے ایک، جندل گروپ اڑیسہ کے ایک بڑے مائننگ گھوٹالے میں ملوث دکھائی دے رہا ہے۔ سپریم کورٹ کے ذریعے تشکیل کردہ ایک کمیٹی نے اپنی حالیہ رپورٹ میں شاردا مائنس پرائیویٹ لمیٹڈ (ایس ایم پی ایل) کے ذریعے مائننگ کے قوانین کی خلاف ورزی اور غلط استعمال کے کئی معاملوں کا ذکر کیا ہے۔ جندل اسٹیل اینڈ پاور لمیٹڈ (جے ایس پی ایل) اورایس ایم پی ایل کے درمیان تجارتی معاہدہ ہے، جس کے تحت جندل اسٹیل اپنی اڑیسہ اور چھتیس گڑھ کے رائے گڑھ میں واقع اسٹیل اکائیوں کے لیے ایس ایم پی ایل سے کچا لوہا خریدتا ہے۔

Read more

پشاور میں مر گئی انسایت

پاکستان کے پشاور میں تحریک طالبان پاکستان کے دہشت گردوں نے ایک اسکول پر حملہ کرکے بچوں سمیت تقریباً 150 لوگوں کو قتل کر دیا، ساتھ ہی اس حملے میں سینکڑوں لوگ زخمی بھی ہوئے۔ پاکستان دہشت گردوں کی آماجگاہ بن چکا ہے۔ اب تک پاکستان میں موجود دہشت گرد تنظیمیں صرف ہندوستان اور دوسرے ملکوں کے شہریوں کو نشانہ بناتی رہی ہیں، لیکن اس بار پاکستان کے پشاور میں دہشت گردی کا ایسا کھیل کھیلا گیا، جس سے انسانیت مر گئی۔ تمام میڈیا رپورٹس، اخباروں اور چشم دیدوں نے اسکول کے اندر کی جو کہانی بیان کی، اس سے ہر انسان کا دل دہل اٹھتا ہے۔ پیش ہے، پشاور کے آرمی پبلک اسکول میں ہوئے حملے کی پوری کہانی …

Read more

دہلی اسمبلی الیکشن: کیجریوال کے وجود کا سوال ہے

دہلی میں آج ہر جگہ کجریوال کی گونج سنائی دے رہی ہے۔ ریڈیو پر کجریوال، میٹرو میں کجریوال، آٹو پر کجریوال، ہورڈِنگ میں کجریوال، ہر جگہ کجریوال نظر آ رہے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ دہلی میں ہونے والا اسمبلی انتخاب عام آدمی پارٹی کے لیے وجود کا سوال ہے۔ مسئلہ یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی کے پاس کجریوال کے چہرے کے علاوہ کچھ نہیں بچا ہے۔ پارٹی کارکن مایوس ہیں۔ کچھ کو چھوڑ کر پارٹی کا ہر چھوٹا بڑا لیڈر مستقبل کو لے کر فکرمند ہے۔ کئی پرانے ساتھی پارٹی چھوڑ چکے ہیں۔ ممبرانِ اسمبلی اور سینئر کارکنوں کا پارٹی چھوڑنا بھی شروع ہو گیا ہے۔ سب سے خطرے کی بات یہ کہ پارٹی کو لے کر عوام بھی مایوس ہیں۔ پارٹی لیڈروں کو لگتا ہے کہ پارٹی ایسے موڑ پر کھڑی ہے، جہاں الیکشن میں لگا ایک جھٹکا پارٹی کو تاریخ بنا سکتا ہے۔ سوال یہ ہے کہ کیا عام آدمی پارٹی ’وَن ٹائم ونڈر‘ یا ایک بار کرشمہ دکھانے والی پارٹی بن کر رہ جائے گی یا اس بار بھی اپنی ساکھ بچانے میں کامیاب رہے گی؟

Read more
Page 10 of 34« First...89101112...2030...Last »