دلیپ چیرین
ریاست میں آئی اے ایس افسروں کی کمی نے مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ اشوک چوان کو اپنے سیاسی مخالفوں کے مقابلے برتری کی حالت میں لادیا ہے۔ کچھ دن پہلے ریاستی حکومت نے اگلے پانچ سالوں کے لئے 15آئی اے ایس افسروں کی مانگ کی تھی۔ لیکن کیڈر ریویو 2012میں ہونا ہے اور ایسا لگتا ہے کہ ریاست کو ابھی نوکر شاہوں کی کمی جھیلنی پڑے گی۔ وزیر اعلیٰ اشوک چوان نے موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ریاستی کیڈر کے افسروں کو کلکٹر کے عہدے پر ترقی دینی شروع کر دی ہے، جو عام طور پر آئی اے ایس افسروں کی ذمہ داری ہوتی ہے۔ مہاراشٹر میں پہچان کی سیاست کی پرانی روایت رہی ہے اور چوان نے نوکر شاہی میں تازہ پھیر بدل میں اس بات کا خاص خیال رکھا کہ پرموشن پانے والے بیشتر افسر ریاستی کیڈر کے ہی ہوں۔ وزیر اعلیٰ اب ریاستی افسروں کو ترقی دینے کی اپنی اس پالیسی کا سیاسی فائدہ اٹھانے کی اسکیم بنارہے ہیں۔ بہر حال چوان کے اس قدم سے ریاستی کیڈر کے افسروں اور مراٹھی مانس کے درمیان ان کی مقبولیت بڑھ سکتی ہے، لیکن ریاست میں آئی اے ایس افسروں کی لابی کی حمایت انہیں کھونابھی پڑ سکتی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here