BJP Manifesto 2019: پھیکا پڑا BJP کا انتخابی منشور، بے روزگاری پر نہیں کوئی بات

Share Article
BJP-Manifesto-2019

لوک سبھا انتخابات سے پہلے BJP نے بھی اپنا انتخابی منشور جاری کر دیا ہے۔ بی جے پی کے اس منشور میں 75 بڑے قرارداد گئے ہیں۔ لیکن بی جے پی کے مینی فیسٹو میں بے روزگاری پر کوئی بات نہیں کی ہے۔پچھلی بار یعنی 2014 کے بی جے پی کے مینی فیسٹو میں کروڑوں نوجوانوں کو روزگار دینے کی بات کی گئی تھی۔ 48 صفحے کے قرارداد میں بی جے پی نے سب کی ترقی کا دعوی کیا ہے، گزشتہ مینی فیسٹو میں رام مندر کی تعمیر کے ذکر کو جس طرح سے کم ترجیح دی گئی تھی ٹھیک اسی طرح اس بار بھی رام مندر کو زیادہ ترجیح نہیں دی گئی ہے۔آرمی کے کارنامے کو بھی بی جے پی نے اپنے مینی فیسٹو میں جم کر لیا ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی، BJP صدر امت شاہ، راج ناتھ سنگھ، ارون جیٹلی کی قیادت میں بی جے پی کی قرارداد منشور جاری کیا گیا۔ امت شاہ نے کہا کہ ہم نے 6 کروڑ لوگوں کے ساتھ بحث کرکے اس قرارداد کو تیار کیا ہے۔2014 میں ہم نے ملک کے سامنے 5 سال کا وژن رکھا تھا، جس پر ملک کے عوام نے یقین رکھتے ہوئے ہمیں اکثریت دیا تھا۔ مکمل اکثریت کے باوجود ہم نے NDA کی حکومت بنائی اور ملک کو آگے بڑھانے کا کام کیا۔ امت شاہ نے کہا کہ پانچ سال کی مدت میں ہماری حکومت نے تاریخی کام کیا ہے، ہماری حکومت نے 50 کروڑ لوگوں کو غربت کی سطح سے اوپر اٹھایا ہے، آج ملک سپر پاور بن کر ابھرا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2014 میں ہندوستان کی معیشت 11 ویں نمبر پر تھی، آج ہم دنیا کی چھٹی سب سے بڑی معیشت ہیں اور تیزی سے 5 ویں سب سے بڑی معیشت بننے کے لئے گامزن ہیں۔

وزیر داخلہ اور پارٹی کی قرارداد خط کمیٹی کے صدر راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ ہندوستان کے من کی بات اس قرارداد خط میں رکھی گئی ہے۔ جہاں ضروری ہوا ہے وہاں ساخت تبدیلی کرنے میں بھی ہم نے کوئی گریز نہیں کیا ہے۔ہماری حکومت نے عوام کی حصہ داری کو قرارداد خط کا اہم حصہ مانا ہے، ساتھ ہی عوامی حصہ داری کو بھی یقینی بنایا ہے۔ ہم نے قریب 6 کروڑ لوگوں سے اس اپنے قرارداد خط کو لے کر بات کی ہے۔

قرارداد میں یہ ہیں خاص بات:

۔ قوم پرستی کے تئیں مکملعزم ہے۔ دہشت گردی کے خلاف زیرو ٹالرینس کی پالیسی تھی، ہے اور رہے گی۔
۔ شہری ترمیمبل کو پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں سے پاس کرائیں گے اور اس کے نافذ کریں گے۔ کسی بھی ریاست کے لوگوں کی شناخت پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔ ملک کی سلامتی پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔
۔ رام مندر پر سبھی امکانات کی تلاش کریں گے ۔ کوشش ہوگی کہ جلد سے جلد اچھا ماحول میں مندر کی تعمیر کریں گے۔
۔ کسان کریڈٹ کارڈ پر ملنے والا ایک لاکھ روپے تک لون 5 سال تک سود صفر رہے گا۔
۔ سبھی کسانوں کو ہوگا کسان سمان فنڈ کا فائدہ ملے گا۔ چھوٹے اور معمولی کسانوں کو پنشن کی سہولت دی جائے گی۔
۔ قومی ٹریڈ کمیشن کی مانگ طویل عرصے سے کی جا رہی تھی، جو بیحدافیکٹیو کمیشن ہوگا۔ چھوٹے دکانداروں کو 60 سال کے تاجروں کو بھی پنشن دیا جائے گا۔
۔ بھارت میں علاقائی عدم توازن کو پوری طرح سے ختم کریں گے۔
۔ لینڈ ریکارڈ کاڈیجیٹائزیشن کیا جائے گا۔
۔ جموں و کشمیر سے 35 اے ہٹانے کی کوشش کی جائے گی۔
۔ مینجمنٹ، انجینئرنگ اور لاء کالج نشستوں کی تعداد بڑھائی جائے گی۔
۔ 2020 تک ملک کی سبھی ریل کی پٹریوں کو الیکٹریفکیشن پورا کیا جائے گا۔
۔ ٹرینڈ ڈاکٹر اور عوام کے درمیان تناسب کو 1: 1400 کیا جائے گا۔
۔ برآمد دوگنا کرنے کی سمت میں قدم بڑھائیں گے۔
۔ ہر شخص کو 5 کلومیٹر تک بینک سہولت دینے کی کوشش کی جائے گی۔
۔ تین طلاق کے خلاف قانون بنا کر مسلم خواتین کو انصاف دلانے کی کوشش کریں گے۔

اس دوران وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا، ’ہم نے 2014 کی قرارداد خط کو پورا کرنے کی کوشش کی ہے۔ ہمارا قرارداد خط ’ٹکڑے ٹکڑے گینگ‘کو متاثر کرنے کے لئے نہیں ہے۔ 2014 میں کرپشن کا بول بالا تھااور مجبور حکومت تھی۔ بی جے پی اور ہمارے امیدوار نریندر مودی امیدکی طرح آئے۔ آج ماحول بدل چکا ہے۔ ہم ڈلیوری کرنے والی حکومت بنے ہیں۔ سائبر اسپیس سے بیرونی خلائی تک ہم نے برتری بنائی ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ یہ پہلے 5 سال ہیں جب ملک دنیا میں سب سے تیزی سے آگے بڑھنے والی معیشت بنا۔ تاریخ میں پہلی حکومت ہیں، جس نے غربت کو سب سے تیزی سے ختم کرنے کا کام کیا ہے۔پرانی حکومتوں نے صرف نعرے دیے۔ ہماری حکومت نے نتائج دیے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *