بی جے پی کی شاندارجیت پر بہاری بابو کے بدلے سر ،سوشل میڈیا پر لوگوں نے کیا ٹرول

Share Article

 

لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کی اکثریت کے بعدوزیراعظم نریندر مودی اور بی جے پی صدر امت شاہ کے ناقد رہے شتروگھن سنہا ان کے پرستار ہو گئے ہیں۔ بی جے پی کی جیت پر ان دونوں لیڈروں کو مبارکباد دیتے ہوئے بہاری بابو نے اسے عظیم بتایا۔
اپنے ٹویٹ میں شتروگھن سنہا نے روی شنکر پرساد کو خاندانی دوست بتایا ہے۔ لوک سبھا انتخابات میں پٹنہ صاحب سیٹ پر روی شنکر پرساد نے شتروگھن سنہا کو شکست دی تھی۔ شتروگھن سنہا کا یہ ٹویٹ بڑی تیزی سے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگا ہے۔ لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کو دو لوگوں کی پارٹی بتانے والے شتروگھن سنہا کے بدلے سر پر یوزرس بہاری بابو پر طنز کس رہے ہیں۔ بہاری بابو نے اپنی ٹویٹ میں لکھا ہے کہ’محترم وزیر اعظم نریندر مودی، ماسٹرپالیسی ساز امت شاہ اور خاص طور پر ہمارے خاندانی دوست روی شنکر پرساد کو بھاری جیت کی مبارک باد۔یہ اس پارٹی میں جشن کا وقت ہے، جو حال تک میری بھی تھی۔ میں سب کو دل و جان سے سلام کرتا ہوں۔

 

بہاری بابو کے اس ٹویٹ پر ایک یوزر پرملا نے شتروگھن سنہا سے تلخ انداز میں پوچھا ہے-’اوقات سمجھ میں آ گئی؟ کیا سوچتے تھے کہ عوام کو ووٹ دیتی تھی، کسی بھی پارٹی میں رہوں گا جیت جاؤں گا؟ ایک سیٹ نہیں نکال پائے اور برابری مودی کی کرتے ہیں، جس نے اکیلے اپنے بل بوتے پر 350 نشستیں جیت دلا دی۔ ایسے ہی کئی اور یوزرس اسی طرح کا سوال کر رہے ہیں۔ دو دنوں کے اندر یہ ٹویٹ قریب ایک ہزار بار ری ٹویٹ کیا گیا اور اسے قریب 10 ہزار لائک ملے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *