آر ایس ایس لیڈر کی بھتیجی کی مسلم لڑکے سے شادی،سوشل میڈیا پر لوگوں نے کہا:’ لو جہاد‘

Share Article

marriage-photo

گورکھپور:آر ایس ایس لیڈر اوربی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری رام لال کی بھتیجی شریا گپتا کی شادی سوشل میڈیا پر خوب شرخیاں بٹور رہی ہے،جہاں ایک طرف اس شاہی شادی میں بی جے پی کے تمام سینئر لیڈر نظر آئے وہیں دوسری طرف سوشل میڈیا پر لوگوں نے آر ایس ایس اوربی جے پی پر ڈبل کردار کا الزام لگاتے ہوئے جم کر طنز کسے ہیں۔

marriage-photo-1

رپورٹ کے مطابق بی جے پی لیڈر رام لال کی بھتیجی شریا گپتا نے اتوار کو گورکھپور کے فیضان کریم نامی ایک مسلم نوجوان کے ساتھ شادی کر لی۔ اس موقع پر یوگی حکومت کے کئی وزیر بھی نظر آئے۔ اتر پردیش کے گورنر رام نائک، نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ، ڈاکٹر دنیش شرما، شہر ترقی کے وزیر سریش کھنہ، ہوابازی کے وزیر نند گوپال نندی، مرکزی اقلیتی بہبود کے وزیر مختار عباس نقوی بھی نئے جوڑے کو دعائیں دینے پہنچے تھے۔وہیں ایک بی جے پی لیڈر کی بھتیجی کی مسلم نوجوان سے شادی کرنے کی خبر ملتے ہی سوشل میڈیا پر ہنگامہ مچ گیا۔ لوگوں نے آر ایس ایس اور بی جے پی پر ڈبل کردار کا الزام لگاتے ہوئے جم کر طنز کسے۔ اس کے ساتھ ہی کچھ لوگ اسے لو جہاد کہتے ہوئے بھی نظر آئے، اگرچہ کچھ سوشل میڈیا یوزرس نے اسے ان کا ذاتی معاملہ قرار دیتے ہوئے لو جہاد کہنے پر اعتراض بھی ظاہر کیا ہے۔

غور طلب ہے کہ آر ایس ایس اوربی جے پی ایک ہندو تنظیم کے طور پر جانی جاتی ہے، ایسے میں تنظیم سے منسلک بڑے لیڈر جو آر ایس ایس کے لئے پروموشنل بھی کر چکے ہیں، ان کی بھتیجی کی ایک مسلم نوجوان سے شادی کرنے کی خبریں جیسے ہی باہر آئی تو سوشل میڈیا یوزرس نے اسے لپک لیا اورآر ایس ایس – بی جے پی پر جم کر طنز کسے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *