ڈونلڈ ٹرمپ اور سابق امریکی صدر جمی کارٹر کے درمیان تلخ بحث

Share Article
Republican presidential candidate Donald Trump; former President Jimmy Carter

 

سابق امریکی صدر جمی کارٹر نے امریکہ کے حالہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت کو’غیر آئینی’ قرار دیا جس پر صدر ٹرمپ نے سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے جمی کارٹر کو ’’ردی کی ٹوکری میں پھینکا‘‘ صدر قرار دیا۔جاپان میں ‘جی ٹوئنٹی’ اجلاس کے موقع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا ان کو دیکھو’ وہ (جمی کارٹر) ایک خوش گوار انسان تھے، مگر ان کی صدارت ایک مصیبت تھی’۔صدر ٹرمپ نے کہا کہ جمی کارٹر ڈیموکریٹس ہیں اور ڈیموکریٹس ہی کے وفادار ہیں۔ یہ ان کے لیے بحث کا مثالی نقطہ ہے’۔اس کے بعد سابق صدر کو مخاطب کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ ‘مْجھے یقین ہے کہ جس حقیقت کو سب مانتے ہیں آپ بھی اس کا ادراک رکھتے ہیں۔ میں روس کی وجہ صدر نہیں بنا اور نہ ہی میری کامیابی میں کسی اور شخص کا ہاتھ ہے’۔خبر رساں ادارے’ایسوسی ایٹڈ پریس’ کے مطابق صدر ٹرمپ نے کہا کہ میں نے سنہ 2016ء کے انتخابات میں اس لیے کامیابی حاصل کیونکہ میں نے اپنی حریف ہیلری کلنٹن سے زیادہ محنت کی تھی۔انہوں نے کہا کہ میں جمی کارٹر کے حوالے سے بہت مایوس ہوا۔ ان کی جماعت نے اْنہیں ردی کی ٹوکری میں پھینک دیا تھا۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ جمی کارٹر کو اس کی اپنی جماعت نے ٹھکرا دیا۔ میں جانتا ہوں? کے سب یہی کہتے تھے کہ جمی کارٹر اچھا صدر ثابت نہیں ہوا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *