امریکہ اب اسامہ بن لادن کے بیٹے کے پیچھے،رکھا 70 کروڑ روپے کا انعام

Share Article

bin-laden-us

بین الاقوامی دہشت گرد تنظیم القاعدہ کے سرغنہ رہے اسامہ بن لادن کے بیٹے کا پتہ بتانے پر امریکہ نے 10 لاکھ ڈالر کے انعام کا اعلان کیا ہے۔ امریکہ کے مطابق اسامہ بن لادن کا بیٹا حمزہ بن لادن، ان دنوں امریکہ پر حملے کی سازش رچ رہا ہے۔ حمزہ اپنے باپ کی موت کا بدلہ امریکہ سے لینا چاہتا ہے۔

سیکورٹی ایجنسیوں سے ملے ان پٹ کے بعد امریکہ نے یہ اعلان کیا ہے۔ جمعہ کو امریکہ کی وزارت خارجہ نے اس انعامی رقم کا اعلان کیا۔ امریکی محکمہ خارجہ کے افسران ایم ٹی ایوانوف نے کہا کہ یہ قدم امریکہ کی دہشت گردی کے خلاف جنگ اور سنجیدگی کی عکاسی کرتا ہے۔ بھارتی کرنسی کے مطابق حمزہ پر رکھی انعامی رقم 70 کروڑ روپے کے قریب ہو جاتی ہے۔

انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق حمزہ گزشتہ کئی سالوں سے پوشیدہ ہے اور وہ پاکستان، افغانستان، شام یا پھر ایران میں ہو سکتا ہے۔ایران میں اسے نظر بند ہونے کے آثار جتائے جا رہے ہیں، ایسا کہا جاتا ہے کہ حمزہ اب القاعدہ میں کافی اونچے عہدے پر پہنچ چکا ہے اور اب وہ اپنے والد کا بدلہ بھی لے سکتا ہے، لہٰذا امریکہ کوئی کسر نہیں چھوڑنا چاہتا ہے۔

امریکی سلامتی کے محکمہ کے حکام نے کہا کہ امریکی لیڈر اپنے کام کیلئے سنجیدہ ہیں۔ القاعدہ کافی عرصے سے خاموش ہیں لیکن یہ صرف ایک اسٹریٹجک خاموشی ہے نہ کہ ہتھیار ڈالنا۔

اسامہ کی موت کے بعد سے اس کی تین بیویاں اور بچے سعودی عرب میں پناہ لینے کے لئے پہنچے تھے لیکن حمزہ کا ٹھکانہ سعودی عرب میں رہنا تنازعات کا موضوع رہا، ایسا مانا جاتا ہے کہ وہ ایران میں اپنی ایک ماں کے ساتھ کئی سالوں تک رہا۔ لادن کے بیٹے حمزہ نے گزشتہ دنوں شادی کی تھی،اس کی شادی 9/11 حملے میں پیلن ہائی جیک کرنے والے محمد عطا کی بیٹی سے کی تھی۔ ایک اخبار کو انٹرویو میں حمزہ کے سوتیلے بھائیوں نے اس شادی کا ذکر کیا تھا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا تھا کہ حمزہ کے ٹھکانے کے بارے میں کسی کو صحیح معلومات نہیں ہے لیکن وہ افغانستان میں بھی ہو سکتا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *