بہار: کمبل میں دبا بیٹھا تھا سانپ، باپ بیٹی کو ڈسا، دونوں کی موت

Share Article

شور سننے کے بعد مقتول کے لواحقین اور ارد گرد کے لوگ دوڑ کر آئے لیکن اس وقت تک کافی دیر ہو چکی تھی. زہر وویکانند ساہ کے پورے جسم میں پھیل چکا تھا۔

پورنیہ کے وپی تھانہ علاقہ کے گوٹھ گاؤں میں پیر دیر رات سانپ کے ڈسنے سے باپ اور بیٹی کی موت ہو گئی. رپورٹ کے مطابق، باپ اور بیٹی جیسے ہی کمبل اوڑھنے چلے، اس میں پہلے سے بیٹھے سانپ نے دونوں کو ڈس لیا، جس سے دونوں کی موت ہو گئی۔

میت کے اہل خانہ نے بتایا کہ پیر کی رات 32 سال کے وویکانند ساہ اور ان کی تین سالہ بیٹی لکشمی کماری سوئے ہوئے تھے. رات میں کمبل نکال کر جیسے ہی اوڑھنے لگے تبھی دونوں کو زہریلا سانپ نے ڈس لیا. شور سننے کے بعد مقتول کے لواحقین اور ارد گرد کے لوگ دوڑ کر آئے لیکن اس وقت تک کافی دیر ہو چکی تھی. زہر وویکانند ساہ کے پورے جسم میں پھیل چکا تھا اور ہسپتال لے جانے کے دوران ان کی موت ہو گئی. اس سے پہلے ساہ کی بیٹی لکشمی کی موقع پر ہی موت ہو گئی. اس کے جسم میں بھی زہر پھیل گیا تھا۔

وویکانند ساہ کو پہلے روپولي کے ریفرل ہسپتال میں داخل کرایا گیا. ڈاکٹروں نے نازک حالت دیکھ کر انہیں بڑے ہسپتال میں ریفر کر دیا. رشتہ داروں کے مطابق، ساہ کو روپولي سے بھواني پور لے جانے کے لئے میں ہی موت ہو گئی۔

میت کی بیوی رادھا دیوی نے کہا کہ شور سن کر وہ شوہر کو گرد دوڑی. اس نے دیکھا زمین پر سانپ اور کمبل دونوں پڑے ہیں. سانپ انگلی جتنا پتلا تھا. دونوں متاثرین کو پہلے مندر لے جایا گیا اس کے بعد ہسپتال جانے کی تیاری تھی. اسی درمیان لکشمی کی موت ہو گئی. جبکہ ساہ کی موت ہسپتال لے جاتے وقت ہو گئی. اس واقعہ کے بعد پورے گاؤں میں ماتمی لباس چھایا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *