کملا نگر تھانہ کے تحت منڈوا بستی میں نو سال کی معصوم کے ساتھ عصمت دری کے بعد کئے گئے قتل کا انعامی ملزم کو پولیس نے پیر کی صبح کھنڈوا سے گرفتار کر لیا۔ پولیس کے لئے یہ بڑی کامیابی ہے، لیکن بستی کے لوگ اب بھی مشتعل ہیں۔ انہوں نے آج صبح واقعہ کی مخالفت میں نہرو نگر چوراہے پر چکاجام کیا اور تھانے کا گھیراؤ کرتے ہوئے مجرم کو پھانسی کی سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔
 
ایس پی اکھل پٹیل نے بتایا ہے کہ عصمت دری اورقتل کاواقعہ اتوار کا ہے۔ فرار ملزم وشنو (35) عرف ببلو پر 20 ہزار کے انعام کا اعلان کیا گیا تھا۔ اس کی گرفتاری کے لئے پولیس کی تین ٹیم بنائی گئی تھی۔ ایک ٹیم کو ملزم کا لوکیشن اجین کی جانب ملا تھا۔ آخر کار پیر کی صبح اس اونکاریشور کے پاس سے گرفتار کر لیا گیا۔ وشنو آبائی طورپر کھنڈوا کا ہی رہنے والا ہے۔ یہاں واردات کو انجام دینے کے بعد وہ بھاگ آیا تھا، پولیس اسے لے کر بھوپال آ رہی ہے۔
 
اے ایس پی اکھل پٹیل نے واقعہ کے خلاف مظاہرہ کر رہے لوگوں سے کہا ہے کہ ان کی کوشش ہوگی کہ مجرم کو جلد سے جلد سزا ملے۔ موقع پر پہنچے ڈی آئی جی ارشاد ولی نے بھی بچی کے والدین کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اس معاملے میں فوری کارروائی کی جائے گی۔ ان کی یقین دہانی پر ہی لوگوں نے جام ختم کیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here