بھوپال اسپورٹس اکیڈمی میں غیر شادی شدہ سیلنگ کھلاڑی نے بچی کو دیاجنم ، کئی افسران تفتیش کے دائرے میں

Share Article
bhopal-kayaking-player

بھوپال کے وزارت کھیل میں افرا تفری کا ماحول ہے۔وزارت میں موجود افسران سے لے کر صاحب تک منہ چھپاتے پھر رہے ہیں۔ ان کے اس حالت کی وجہ ہے بھوپال واقع واٹر اسپورٹ اکیڈمی میں ایک غیر شادی شدہ پلیئر کے ذریعہ بچی کو جنم دینا۔ اب کسی کو سمجھ نہیں آ رہا ہے کی اکیڈمی میں رہتے ہوئے 19 سال کی یہ پلیئر حاملہ کیسے ہوئی۔

جس پلیئر نے بچی کو جنم دیا ہے وہ مدھیہ پردیش کے کٹنی کی رہنے والی ہے۔ والدین کی موت کے بعد وہ بھوپال میں ٹی ٹی نگر اسٹیڈیم میں کھیل اکیڈمی کے ہاسٹل میں رہ رہی تھی ۔ اس خبر کے بعد وزارت میں افرا تفری کا ماحول ہے۔ چیف سکریٹری کھیل انیرودھ مکھرجی نے معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

جو معلومات سامنے آئی ہے اس کے مطابق لڑکی حاملہ تھی اور کسی کو اس کی جانکاری نہیں تھی۔ لیکن جب وہ بھوپال کے بڑے تالاب میں پریکٹس کے لئے گئی تھی۔ اچانک وہیں اس کے پیٹ میں درد ہوا اور اسے اسپتال لے جایا گیا، جہاں اس نے پری میچور بچی کو جنم دیا۔

جیسے ہی یہ خبر اہلکاروں تک پہنچی ہر طرف افرا تفری مچ گئی۔ اسپتال انتظامیہ نے فوراً ٹی ٹی نگر تھانہ کو اس کی اطلاع دی اور گرورو کیندر نے کھلاڑی کے بیان درج کئے۔ یہ کھلاڑی پہلے کٹنی کے شیلٹر ہوم میں رہتی تھی۔ والدین کی موت کے بعد وہ بھوپال شفٹ ہو گئی تھی۔ اسے واٹر اسپورٹس اکیڈمی کے ہاسٹل میں رکھا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق جس سیلنگ کھلاڑی نے بچی کو جنم دیا ہے وہ سات ماہ کے حمل سے تھی۔ اب شیلٹر ہوم اور کھیل کے سیکشن دونوں پر سوال اٹھ رہا ہے کہ کھلاڑی حاملہ تھی اور محکمہ کو اس کا پتہ کس طرح نہیں چلا۔ چیف سکریٹری کھیل انیرودھ مکھرجی نے معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ انہوں نے کوچ سمیت سب کو معاملے کی تحقیقات کر رپورٹ دینے کی ہدایات دی ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *