آندھرا پردیش کے دورے سے پہلے وزیراعظم مودی کی مخالفت، امراوتی میں لگے پوسٹر

Share Article

وزیراعظم اتوار کو آندھرا پردیش کے علاوہ تمل ناڈو اور کرناٹک کا بھی دورہ کریں گے۔ اس دوران انہوں نے بہت سے ترقیاتی منصوبوں کا سنگ بنیاد اور افتتاح کریں گے۔

 

 

وزیر اعظم نریندر مودی کے آندھرا پردیش دورے سے ایک دن پہلے امراوتی میں ان کی مخالفت میں بہت پوسٹر دکھائی دیے۔ پوسٹر پر ‘مودی ’نیوراگین‘اور # نومورمودي اور # مودی ایمسٹیک لکھا گیا ہے۔ پوسٹر کس پارٹی یا تنظیم نے لگائے ہیں، یہ اب تک صاف نہیں ہو پایا ہے۔

अमरावती में दिखे मोदी विरोधी पोस्टर (फोटो-ANI)

وزیر اعظم اتوار کو جنوبی ہندوستان کے تین ریاست کے دورے پر ہیں۔ آندھرا پردیش کے علاوہ وہ تمل ناڈو اور کرناٹک میں جائیں گے۔ ان ریاستوں کے مختلف اضلاع میں ترقیاتی منصوبوں کا سنگ بنیاد اور افتتاح کریں گے۔ اس دوران وزیر اعظم انتخابی جلسوں کو بھی خطاب کریں گے۔دورے سے پہلے آندھرا پردیش کی مجوزہ دارالحکومت امراوتی میں مودی مخالف پوسٹر نظر کے بعد سیاست ابتدائی ہوتا ہے۔ آندھرا کے وزیر اعلی چندرا بابو نائیڈو نے اپنی پارٹی کے کارکنوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ وزیر اعظم کے دورے کا گاندھی وادی طریقے سے مخالفت کریں۔اپنے کارکنوں کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے نائیڈو نے کہا، ‘کل (اتوار) سیاہ دن ہے۔ وزیر اعظم اس ناانصافی کو دیکھنے آندھرا پردیش آ رہے ہیں جو انہوں نے یہاں کے عوام کے ساتھ ہے۔ مودی ریاستوں اور آئینی اداروں کو کمزور کر رہے ہیں۔رافیل سودے میں وزیر اعظم کے دفتر کی مداخلت ملک کے ساتھ توہین ہے۔ لہٰذا ہم لوگ پیلی قمیض پہن کر اور ہاتھ میں غبارے لے کر وزیر اعظم مودی کا گاندھی طریقے سے مخالفت کریں گے۔

Image result for pm modi in andhra pradesh against protest

چندرا بابو نائیڈو اور ان کی پارٹی کئی ماہ سے آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ مرکزی حکومت کی جانب سے اس کی مانگ کو ٹھکرائے جانے کے بعد نائیڈو نے اپنا احتجاج تیز کر دیا ہے۔ انہوں نے این ڈی اے سوائے اپوزیشن سے ہاتھ ملا لیا ہے۔ اگلے انتخابات میں نائیڈو مجوزہ مهاگٹھ بدھن کا ساتھ دیں گے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *