بابری مسجد معاملہ کے مدعی اقبال انصاری کوملی دھمکی،ملزم گرفتار

Share Article
iqbal-ansari
بابری مسجدمعاملہ کے مدعی اقبال انصاری کودھمکی بھراخط ملاہے۔اس خط کوبھیجنے والے شخص کوپولس نے امیٹھی سے گرفتارکرلیاہے۔خط میں ملزم نے کئی متنازعہ باتیں لکھی ہیں اوراقبال انصاری کو دھمکی دیتے ہوئے معاملہ واپس لینے کوکہاہے۔ملزم کی شناخت سوریہ پرکاش سنگھ کے طورپر ہوئی ہے، جسے امیٹھی پولس نے فیض آبادپولس کوسونپ دیاہے۔پولس میں خط میں لکھے نام اورپتے کی بنیاد پرملزم کا پتہ لگایاتھا۔
بتایاجارہاہے کہ بدھ کوہی اقبال انصاری کودھمکی بھراخط ملاتھا جس میں انہیں بابری مسجد کی پیروی چھوڑنے کی بات کہی گئی تھی۔اقبال انصاری کی شکایت کے بعد سے ہی پولس سرگرم ہوگئی اوریوپی کے امیٹھی ضلع سے اسے ڈھونڈ نکالا۔ ملزم نے خط لکھنے کی بات قبول لیاہے۔ خط میں ملزم نے لکھاتھاکہ اقبال انصاری کے پیروی نہ چھوڑنے پرانہیں سرحد پربھیج دیاجائے گا۔خبروں کے مطابق خط بھیجنے والے نے اپنا نام سوریہ پرکاش سنگھ لکھا ہے اور دعوی کیا ہے کہ وہ وی ایچ پی (وشو ہندو پریشد) کا گؤ رکشا پرمکھ ہے۔ اس کا یہ بھی دعوی ہے کہ وہ رام جنم بھومی کارسیوا سمیتی کا رکن ہے۔
اس خط ملنے کے بعد پولس نے اقبال انصاری کی سیکوریٹی بڑھا دی ہے۔ انصاری نے کہاکہ ایودھیا میں انہیں کبھی کوئی خطرہ نہیں رہاہے۔باہرکے لوگ انہیں دھمکارہے ہیں۔انہو ں نے بتایاکہ انہیں پہلے بھی اس طرح کی خطوط ملے تھے لیکن ان میں نام وپتہ نہیں تھے۔بہرکیف فی الحال فیض آباد پولس معاملے کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے۔خیال رہے کہ اقبال انصاری مرحوم ہاشم انصاری کے صاحبزادے ہیں۔ہاشم انصاری کی موت کے بعد بابری مسجد کی پیروی اقبال انصاری کررہے ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *