حاجیوں کے لئے سعودی حکومت کے کچھ خصوصی اقدامات

وسیم احمد
حج کا موسم شروع ہوچکا ہے ۔ اس مبارک موقع پر دنیا کے مختلف حصوں سے تقریباً25 لاکھ حجاج مکہ مکرمہ میں جمع ہوتے ہیں جن کی دیکھ ریکھ اور ان کے سفر و رہائش کا انتظام کرنا ایک بہت بڑا مسئلہ ہوتا ہے۔ اس سلسلے میں سعودی حکومت کی تعریف کرنی ہوگی کہ اتنے بڑے مجمع کے نظم و نسق اور ان کی دیکھ بھال کے لئے بہترین انتظام کرتی ہے ۔ ہر حاجی جب اپنے وطن کو لوٹتا ہے تو

Read more

خواتین کے تئیں، مسلم ملکوں کا بدلتا رجحان

وسیم احمد
معاشرے کو ترقی دینے میں عورت کا کردار اہم ہوتا ہے۔جس قوم یا ملک نے اس حقیقت کو سمجھ لیا ،اس نے ترقی کرلی اور جس نے اس حقیقت کو قبول کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس کی وہ پیچھے رہ جاتا ہے۔اس کی مثال ان مسلم ملکوں سے دی جاسکتی ہے جو ہیں تو ایسے سائنسی دور میں ،جس میں وقت کے ایک ایک پل کی بڑی قیمت ہوتی ہے ،جس میں معاشرے کا ہر فرد چاہے مرد ہو یا عورت، قیمتی اور بارآور ہوتا ہے، مگران میں ماضی کی روایت اور قدامت پسندی اس طرح رچ بس گئی ہے کہ وہ سائنسی دور م

Read more

کھاپ پنچایت کا فیصلہ

وسیم احمد
استحصال کسی نہ کسی شکل میں ہمارے سماج میں موجود ہے۔کہیں پر گوتر میں شادی کرنے کے نام پر بیٹے بیٹیوں کو سخت اذیت دینا تو کہیں پر ان کے جذبوں اور خیالوں کی کلنگ (قتل )کا بدصورت چہرہ سامنے آتا ہے اور یہ سب ہمارے نام نہاد پنچایتوں کی طرف سے ہوتا ہے جو اپنی تہذیب و روایت کی حفاظت کرنے کے نام پر غیر آئینی کام انجام دے رہے ہیں۔یہ سچ ہے کہ ہندوستان میں تہذیب و روایت کو ایک اہم مقام حاصل ہے مگر اس کا یہ مطلب نہیں ہے ہم تہذیب کے بھرم میں قدامت پسندی سے

Read more

شام کے بحران کا حل کون کرے گا

وسیم احمد
شام جل رہا ہے۔ملک شدید بحران کی زد میںہے مگر عالمی برادری اب تک کوئی قابل ذکر کردار ادانہیں کر سکی ہے اور عرب لیگ اور اقوم متحدہ وہاں جاری قتل و غارت گری کو روکنے میں پوری طرح ناکا م ہیں۔عالمی برادری کی اس بے توجہی اور بشار الاسد کی ضد کی وجہ سے خطے میں عدم استحکام کی کیفیت طاری ہے جس کو زائل کرنے کے لئے سپر پاور سے شامی افواج کے خلاف فضائی حملوں ، پناہ گزینوں کے لئے محفوظ بستیوں کے قیام اور شامی باغیوں کو اسلحہ فراہم کرنے کے مطالبات کیے جارہے ہیں۔ امریکی

Read more

کیا مسلمانوں کی سوچ منفی ہے؟

وسیم احمد
آج کل کچھ لوگ مسلمانوں کے بارے میں یہ کہنے لگے ہیں کہ’’ ان کی سوچ منفی ہے۔ اپنی ہر ناکامی کا ذمہ دار دوسروں کو ٹھہراتے ہیں اور اپنی کمزوری کو نہیں دیکھتے ہیں۔ اگر سرکاری نوکری یا پرائیویٹ سیکٹر میں کام نہ ملے تو فوراً یہ کہتے ہیں کہ وہ مسلمان ہیں، اس لیے ان کے ساتھ تعصب برتا گیا اور انہیں نوکری نہیں دی گئی۔ کسی دفتر میں جاتے ہیں، ان کا کام نہیں ہوتا ہے تو بھی یہی کہتے ہیں کہ یہ مسلمان تھے، اس لیے ان کا کام نہیں ہوا‘‘۔ ہو سکتا ہے اس میں کسی حد تک سچائی بھی ہو۔ کبھی کبھی انسان کی خود کی کمزوری

Read more

اف! اتنی شرائط : مسلم طلبہ کو اسکالرشپ ملے تو کیسے؟

وسم احمد
ہندوستان میں آج بھی 41 فیصد سے زائد آبادی غربت کی زندگی گزارنے پر مجبور ہے اور خواندگی کی صورت حال بھی ابتر ہے ۔ مردوں میں 82.14 اور خواتین میں 65.46 فیصدکا اوسط ہے ۔کسی بھی ملک میں اس طرح کی صورت حال جہالت اور بچہ مزدوری جیسے حالات پیدا کرتی ہے۔ایسی صورت حال سے نمٹنے کے لئے تعلیمی اسکالر شپ ایک ہتھیار کی حیثیت رکھتی ہے۔ تعلیمی اسکالر

Read more

مسلم دربار میں بھاجپاکی حاضری

وسیم احمد
مسلمانوں کا ووٹ قیمتی ہے مگر اس کی قیمت کوئی نہیں دیتا ۔ ووٹ کی قیمت کا مطلب روپیہ پیسہ نہیں ہے بلکہ ووٹر نے جس مقصد سے ووٹ دیا ہے اور لیڈروں نے جس وعدے کے ساتھ ووٹ لیا ہے ان وعدوں کو پورا کیا جائے،یہی ووٹ کی قیمت ہوتی ہے۔بدقسمتی سے ملک کو آزاد ہوئے 6 دہائی سے زیادہ ہوگئے مگر آج تک کسی بھی پارٹی نے ووٹ کی اس قیمت کو نہیں سمجھایا سمجھ کر نظر انداز کیا۔ہاں جب الیکشن کا وقت قریب آتا ہے تو انہیں ووٹ کی قیمت کا اندازہ ہونے لگتا ہے ا

Read more

ٹریفک نظام شریعت کی نظر میں

وسیم احمد
کچھ لوگوں کو تیز رفتاری سے گاڑی چلانے کی عادت پڑ جاتی ہے۔ بھیڑ بھاڑ والا علاقہ ہو یا مین روڈ ،ان کی رفتار کم نہیں ہوتی ہے۔ان کی اس عادت کی وجہ سے محلے اور بازاروںکی سڑکوں پر گزرنے والوں کو پریشانیاں ہوتی ہیں، چوٹیں آتی ہیں ۔ان کی اس عادت کی وجہ سے مین روڈ پر حادثے ہوتے ہیں مگر پھر بھی ایسے لوگ اپنی اس بری عادتوں سے باز نہیں آتے ہیں۔وہ گاڑی چلاتے وقت اس بات کو بھول جاتے ہیں کہ ٹریفک نظام کی پاسداری کرنا اخلاقی ،شرعی اور سماجی ذمہ داری ہے۔اگر ہم ٹریفک نظام کو نظر انداز کرتے ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ ہم نہ صرف قومی آئین سے روگردانی کررہے ہیں بلکہ مذہبی تقاضے کو بھی پسِ پشت ڈا

Read more

مدرسہ بورڈ سے کیوں کتراتے ہیں علماء کرام

وسیم احمد
نئی نسل میں عصری تعلیم کے سلسلے میں علماء کا نظریہ صاف نہیں ہے۔یوں تو سب دعویٰ کرتے ہیں کہ عصری تعلیم ضروری ہے مگر ان کے عمل سے ایسا نہیں لگتا ہے کہ وہ ماڈرن ایجوکیشن یعنی عصری تعلیم کے تئیں مخلص ہیں ۔اگر کبھی عملی طور پر قدم بڑھاتے بھی ہیں تو اس کا فائدہ مسلمانوں کے مخصوص طبقے تک ہی محدود رہتا ہے اور یہی طبقہ ماڈرن ایجوکیشن کا فائدہ اٹھا پاتا ہے، لیکن جو بچے مدرسے میں پڑھتے ہیں ان کی تعداد اچھی خاصی ہے۔ سچر کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق مسلمانوں کے تقریباً 4 فیصد بچے ان مدرسوں میں پڑھتے ہیں۔کسی بھی کمیونٹی میں یہ فیصد بہت ہوتی ہے ۔ مگر ان کو ماڈرن ایجوکیشن سے جوڑنے میں علماء کرام اور دانشوران ملت تشویش کے شکار ہیں۔ان کوماڈرن ایجوکیشن اور نئی ٹکنالوجی سے جوڑنے کے لیے مرکزی

Read more

عازمین سے کئے گئے وعدے کہیں سراب نہ ثابت ہوں

وسیم احمد
حاجیوں کے مسائل پر غو رو فکر کرنے اور حج سبسڈی پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد پیش آنے والی صورت حال کو مد نظر رکھتے ہوئے وگیان بھون میں ایک قومی سطح کی کانفرنس ہوئی ،اس کانفرنس میں ملک کے سیاسی و ملی دانشوروں کے علاوہ حج کے انتظامی امور سے جڑے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ اس کانفرنس میں کئی ایسی تجاویز پیش کی گئیں جن کو عمل میں لایا جائے تو بہت سے مسائل جن سے عازمین دوچار ہوتے ہیں ،ان کا خاتمہ ہوسکتا ہے مگر شاید ایسا نہ ہو کیونکہ یہ ایک پرانی روایت ہے کہ

Read more