تبدیلی کی لہر سے پریشان بایاں محاذ

بمل رائے
ریاستی اسمبلی انتخابات کے آخری مرحلہ میں نئے نئے موضوعات کے ذریعہ سیاسی پینترے بازی کے نت نئے روپ دیکھنے کو مل رہے ہیں۔بلیک منی اور بدعنوانی کا ایشو تو پورے ملک میں گرم ہے۔لیکن بنگال میں ہاؤسنگ منسٹر گوتم دیو نے ترنمول پر بلیک منی جمع کرنے کا الزام لگاکر الیکشن مہم کو ایک نئی رنگت دے دی ہے۔یہ اس لیے بھی اہم ہے کیونکہ پارٹی سربراہ ممتا بنرجی پر آج تک بدعنوانی کا کوئی الزام نہیں لگا ہے۔ملک میں بلیک منی کا پتہ لگانے میں بھلے ہی مرکزی حکومت کو پسینے آرہے ہیں لیکن مارکس نواز کمیونسٹ پارٹی نے اس مبینہ بلیک منی کا پتہ اپنے کارکنان کے ذریعہ لگایا ہے۔ہاؤسنگ منسٹر کی باتوں پر یقین کریں تو گزشتہ25ما

Read more

مغربی بنگال : فیصلہ کی گھڑی قریب ہے

بمل رائے
اسمبلی انتخابات اپنے آخری مرحلے میںہیں، فیصلہ کی گھڑی قریب ہے۔ دو تین سالوں کے رجحانات اور امید وںکی بنیاد پر ہم ایک نتیجہ تک پہنچتے رہے ہیں، لیکن معاملہ صرف 5-7فیصد ووٹوں کے ادھر ادھر ہونے کا ہے۔ قومی اور صوبائی لیڈران کے ذریعہ زبردست تشہیر جاری ہے۔ترنمول کے نئے گڑھ یادو پور سے کھڑے وزیراعلیٰ بدھا دیب بھٹاچاریہ کھلی جیپ میں ریلیاں نکال رہے ہیں تو وہیں ممتا پیدل مارچ کر رہی ہیںاور وہ بھی چار چار کلو میٹر کا پید ل سفرکر کے۔بستی کے گھرئو اور سومارو جب اپنی دیدی کے سامنے آ کر ہاتھ ملاتے ہیں تو چھتوں سے پھولوں کی بارش ہونے لگتی ہے۔ بدھا دیب کی جیپ تک چھوٹے لوگوں کے ہاتھ نہیں پہنچ پات

Read more

مغربی بنگال: فیصلہ کن کردا ر میں مسلمان

بمل رائے
شمالی بنگال کے 6اضلاع کی 54 اسمبلی سیٹوں کے لیے پہلے مرحلہ کے انتخابی اعداد و شمار جنوبی بنگال کے مقابلے میں کئی معنوں میں الگ ہیں۔ کوچ بہار، جل پائی گوڑی، دارجلنگ، شمالی دیناجپور، جنوبی دیناجپور اور مالدہ میں 18 اپریل کو ہونے والے انتخابات میں ست رنگی نتائج برآمد ہوسکتے ہیں۔خلیج بنگال سے اٹھی تبدیلی کی ہوا چائے باغان سے ہوتے ہوئے پہاڑیوں سے ٹکراکر جیسیرک گئی ہے۔ یہ علاقہ مکمل طور پر بنگالیوں کا ہے بھی نہیں اور نہ یہاں کی تہذیب کولکاتہ جیسی ہے۔ یہاں گورکھا ہیں، راج ونشی ہیں، بہار، اترپردیش، راجستھان کے لوگ ہیں اور انگریزوں کے زمانے سے چائے کے باغانوں میں کام کر رہے جھارکھنڈ کے قبائلی

Read more

مایوس نوجوانوں کے سہارے کی ضرورت

بمل رائے
گرد کے غبار میں آگ کی تصاویر دھندلی نظر آتی ہیں، لیکن وہ آگ اگر کسی انسان کے بدن میں لگی ہو تو کسی بھی دیکھنے والے کے جذبات کو جھلسانے کے لیے کافی ہے۔بنگال میں اس وقت انتخابی گرد کا کہرا ہے اور پرسون دتا جیسے بے روزگار نوجوان کی خود کشی کی کوشش ، اور وہ بھی بنگال کی امید ممتا بنرجی کے گھر کے سامنے ، ایک قومی ایشو بنتا ہے۔انتخابی موسم میں ویسے تو بہت سارے ایشو ایک ساتھ تن کر کھڑے ہو جاتے ہیں، لیکن پرسون کا معاملہ کئی معاملوں میں الگ ہے۔ریاست میں الیکشن کرانے کے اعلان کے بعد 6مارچ کو مایوس بے رو زگار نو جوان پرسون دتا ممتا کے کالی گھاٹ والے گھر آتا ہے۔ آفس کے ملازمین سے پہلے وہ اپنی دیدی کے بارے میں پوچھتا ہے۔جب اسے بتایا جاتا ہے کہ وہ دہلی می

Read more

نئے سال میں مزید سرخ ہوگی سرزمین بنگال

بمل رائے
دو ہزار دس کے آخری ماہ میں یہاںپھیلی شر پسندی اور انارکی نے یہ اشارہ کر دیا ہے کہ 2011کے اسمبلی انتخابات تک کیا ہونے والا ہے؟ پہلے بھی کئی مرتبہ لکھا جا چکا ہے کہ بنگال کی مستقبل کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی انتخابات تک خاموش نہیں بیٹھنے والی ہیں۔ادھر، بایاں محاذ نے بھی پلٹ کر کھڑے ہونے کی حکمت عملی کو بھی زمین پر اتار دیا ہے۔ حکومت اور اپوزیشن دونوں کی حکمت عملی کا اشارہ خوفناک نظر آ رہا ہے۔ ان پالیسیوں میں نیا رنگ

Read more

سیاسی دشمنی کی آگ میں سلگتا بنگال

بمل رائے
اقتدار کی تبدیلی کے دہانے پر کھڑے مغربی بنگال میں سیاسی عداوت نے اب نہایت سنگین شکل اختیار کرلی ہے۔ سیاسی جماعتوں کے لیڈروں کی حرکتوں کو دیکھ کر کارکنان بہت ہی جذباتی اور مشتعل ہورہے ہیں۔ خصوصاً سی پی آئی(ایم) اور ترنمول کیڈروں کے درمیان خونی جنگ تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ ایسا کسی اور ریاست میں شاید ہی دیکھنے میں آیاہو کہ وزیر اعلیٰ اور حزب اختلاف کی اعلیٰ قیادت ایک دوسرے سے آنکھیں ملانے سے کتراتے ہوں۔ اس عمل میںساری اخلاقی قدریں پامال ہورہی ہیں۔ بنگال کی تہذیب تار تار ہوتے ہوئے سبھی لوگ دیکھ رہے ہ

Read more

مشرق نہ جانا سیّاں۔۔۔نوکری نہیں ہے

بمل رائے
وہ دور 30-40سال قبل کا تھا، جب بہار اور یو پی میں مہندر مشرا کا ایک گانا بہت گایا جاتاتھا، رقص یا نوٹنکی میں اس طرح کے گانے چلتے تھے۔ ان کی خوب فرمائش بھی ہوتی تھی۔ اس زمانہ میں کمائی کے لئے مشرق کا کریز تھا اور پردیس میں رہنے والے مزدور محنت مزدوری کرنے کے لئے بوریا بستر لے کر نکل پڑتے تھے۔ان کا رخ مشرق کی جانب یعنی آسام اور مغربی بنگال کی جانب ہوتا تھا۔ آسام میں خاص طور سے اینٹ بھٹوں اور چائے کے باغات میں بہاری مزدور ہی کام کرتے تھے۔ بھوجپوری گانوں کے ایماسے تو مزدور میانمار کے مورنگ تک پہنچ

Read more

بہار میں ممتا اور راہل کی سیاسی جنگ

بمل رائے
کیا میں آپ کو چڑیا جیسا نظر آتا ہوں؟ کانگریس کے یوراج نے کولکاتا میں اخبارنویسوں سے جب یہ بات پوچھی تو سبھی حیرت زدہ رہ گئے۔ حالانکہ اشارہ سمجھنے میں انہیں دیر نہیں لگی۔ 15سے17ستمبر تک بنگال میں راہل کے طوفانی دورے کے ٹھیک ایک دن پہلے سلی گوڑی میں ممتا بنرجی نے کہا تھا کہ ہم موسم بہار کی کوئل نہیں ہیں۔ ہم یہاں ایک دن کے لئے نہیں آتے، ہر وقت خوشی اور غم میں آپ کے ساتھ رہتے ہیں۔
اس طرح کچھ علاقوں میں سوکھے کے شکار بنگال میںتشبیہ وتمثیل کی خوب بارش ہوئی۔ نتیجہ یہ ہوا کہ نوجوان کانگریس کی ممبرشپ مہم شروع کرنے کے لئے بنگال آئے راہل نے یہاں کی

Read more

بنگال میں ممتا کی سیاست

بمل رائو
ملکمیں ماؤنوازوں کے خلاف چل رہی جنگ کو بنگال کی سیاسی ہلچل نے کافی الجھادیا ہے۔ آدیواسیوں اور حقوق انسانی کے بڑے بڑے علم برداروں کا چہرہ بے نقاب ہورہا ہے۔ بنگال میں ہورہی اس ہلچل کا خمیازہ ملک کے دوسرے حصوں کو بھی بھگتنا پڑ رہا ہے۔ بہار کے لکھی سرائے میں بہار پولس کے جوانوں کو یرغمال بنانے کا جوواقعہ پیش آیا، اس کاچسکا نکسلیوں کو بنگال میں ملی کامیابی سے لگا۔ آپ کو یاد ہوگا کہ گزشتہ سال 20اکتوبر کو ماؤنوازوں نے سانکرائل تھانے کے او سی اتیندرناتھ دت کو یرغمال بنالیا تھا اور اس کے عوض حکومت کو

Read more

اسمگلنگ کی شکار خواتین کے چاروں طرف اندھیرا

بمل رائے
چاند دیکھنے سے لگتا ہے جیسے دل کے اندر تصویر دیکھ رہی ہوں/چاند کی بولی میٹھی لگتی ہے/ اگر آپ چاند کو چھوتے ہو تو وہ برف جیسا ٹھنڈا لگتا ہے /جب تم چاند کو سونگھتے ہو تو لگتا ہے کہ یہ خوشبو دل کے اند ربیٹھے اس آدمی کی ہے/ جو تم سے محبت کرتا ہے۔
یہ نظم بنگلہ سے ترجمہ کی گئی ہے۔

Read more