راجستھان میں پارلیمانی انتخابات: کیا اسمبلی انتخابات کے نتائج سے متاثر ہوں گے

اان دنوں پورا ملک لوک سبھا انتخابات 2014کے خمار میں ڈوبا ہوا ہے۔ شہر شہر، گاؤں گاؤں اور گلی کوچوں میں اس الیکشن کے چرچے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ اس بار نئی نسل کے کروڑوں نوجوان پہلی بار اپنے ووٹ کے حق کا استعمال کریں گے، اس لیے الیکشن کے تعلق سے ان میں ایک نیا جوش وولولہ ہے۔ ملک کی تمام سیاسی پارٹیوں نے اپنے امیدوار انتخابی میدان میں اتار دیے ہیں، اب دیکھنا یہ ہے کہ ملک کے عوام کس پارٹی کو دلّی کی گدّی سونپیں گے؟ آئیے دیکھتے ہیںلوک سبھا انتخابات 2014کی راجستھان میں کیا سرگرمیاں ہیں اور یہاںعوامی رجحان کس کے حق میں ہے۔ راجستھان وہی ریاست ہے ، جہاں2013 کے اسمبلی

Read more

تیسرے مورچے کی قواعد پھر شروع

ایک زمانہ تھا جب ہندوستان پر ایک سیاسی پارٹی راج کیا کرتی تھی اور پورے ملک میں کانگریس کی طوطی بولتی تھی، لیکن جب سے قومی پارٹیوں خاص طور سے کانگریس نے عوام میں اپنا اعتماد کھویا ہے، علاقائی پارٹیوں نے اپنی اپنی ریاست میں تسلط قائم کر لیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ قومی پارٹیاں، علاقائی پارٹیوں کے بغیر اقتدار تو کجا، حکومت سازی کی دعویداری کا خواب بھی نہیں دیکھپاتیں۔ اسی سبب ہندوستان میں اتحاد و محاذ قائم کرنے کا دور گزشتہ کئی سالوں سے چل رہا ہے۔

Read more

ٹونک کا مسلمان بھی کانگریس مخالف

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ریاست راجستھان میں عوام بشمول مسلمان کانگریس سے اکتا چکا ہے۔ تبھی تو گزشتہ 6ماہ سے ریاست کے مختلف شہروں میں مائنارٹی ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر سوسائٹی کے زیر اہتمام متعدد کانفرنسوں میں یہی رجحان ابھر کر سامنے آیا ہے۔ اس سے پہلے الور ، جے پور، بیکانیر، بھرت پوراور کوٹا کے بعد 22ستمبر کو ٹونک میں منعقد ہوئی کانفرنس میں یہی بات دیکھنے کو ملی۔ اس میں راجستھان کے دور دراز علاقوں میں رہنے والے مسلمانوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ اس موقع پر علاقے کی سرکردہ مسلم شخصیات نے موجودہ کانگریسی سرکار کی نااہلی اور ناکار کردگی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ یہ سرکار نکمی ہے، نا اہل ہے، اس نے اپنی مدت کار میں ہمیں محض اپنے پُرکشش

Read more

بی جے پی کا ہندوتو ایجنڈا اس بار کام نہیں آنے والا

بھارتیہ جنتا پارٹی آئندہ ہونے والے عام انتخابات میں اقتدارحاصل کرنے کے لیے اپنے ’ہندوتو ایجنڈے‘ کواٹھائے گی اور ملک کی فضا میں فرقہ پرستی کا زہر گھولے گی، اس کا اندازہ تو اسی وقت ہو گیا تھا، جب گوا میں اس کی جانب سے گجرات کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی کو انتخابی مہم کمیٹی کاچیئر مین مقرر کیا گیا تھا۔ چنانچہ اب مودی نے اپنا مورچہ سنبھال لیا ہے اور انھوں نے خود کو ہندو راشٹر وادی کہتے ہوئے ، مسلمانوں کے خلاف آگ اور انگارے بھی اگلنا شروع کردیے ہیں۔حال ہی میں ایک بین الاقوامی نیوز ایجنسی نے انٹر ویو کے دوران مودی سے پوچھا کہ کیا 2002کے فسادات کے دوران انھوں نے صحیح کام کیا تھا؟ اس پر مودی نے جواب دیا، بالکل صحیح، تبھی اس معاملے میں سپریم کورٹ نے جو اسپیشل

Read more

کمل ہاسن کی فلم تنازعہ کا شکار

شاہد نعیم
تمل فلم انڈسٹری کے سُپر اسٹار کمل ہاسن کی فلم ’وشو روپم‘ تنازع کا شکار ہو گئی۔ یہ فلم 25 جنوری کو ریلیز ہونا تھی، لیکن مسلم تنظیموںکے احتجاج کے سبب ریاستی حکومت نے اس فلم کی نمائش پر پابندی لگادی۔کمل ہاسن نے حکومت کے فیصلہ کے خلاف مدراس ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ، جہاں سے انھیں کچھ لمحوں کی راحت بھی ملی، لیکن تمل ناڈو سرکاریہ معاملہ مد

Read more

گاندھی سے پہلے گاندھی

شاہد نعیم
گاندھی سے پہلے گاندھی‘فلمی دنیا کے مشہور قلم کار اقبال درانی کا پہلا ہندی ناول ہے، جو جھارکھنڈکے آدیواسی علاقہ میں جنم لینے والے برسا منڈا کی زندگی کے واقعات پر مبنی ہے۔ یہ ناول انیسویں صدی کی ہندوستانی جدوجہد آزادی کے ان پہلوؤں پر روشنی ڈالتا ہے ، جنھیں تاریخ نے نظر انداز کر دیا تھا۔ اقبال درانی کا شمار فلمی دنیا کے ممتاز قلم کاروں میں ہوتا ہے۔ انھوں نے پچاس سے زیادہ فلموں کی کہانیاں لکھیں ،جن میںدرجنوں فلمیں تو باکس آفس پرسپر ہٹ ثابت ہوئیں۔ کئی اسٹاروں کوسپر اسٹاربن

Read more

تبصرۂ کتب

جیسا کہ کتاب کے عنوان سے ہی ظاہر ہے کہ متین امروہوی کا یہ مجموعہ کلام ان کے مرزا غالب کی زمین پر کہے ہوئے کلام پر مشتمل ہے۔ متین امروہوی کومرزا غالب سے اتنی عقیدت ومحبت ہے یا یوں کہا جائے کہ انھیںمرزاغالب کی شاعری پر اتنا عبور حاصل ہے کہ انھوں نے غالب کی غزلوں کی زمین پر غزلیں کہہ کرایک پورا مجموعہ ہی ترتیب کر ڈالا، اس کا اندازہ’گلہائیسخنبر زمین غالب‘کا

Read more

تبصرۂ کتب

نام کتاب : ننھا بہادر
مصنف : رئیس صدیقی
صفحات : 88
قیمت : 30 روپے
تبصرہ نگار : شاہد نعیم

بچوں کا ادب تخلیق کرنا خاصا مشکل کام ہے کیونکہ بچوں کی نفسیات سمجھنا، ان کے احساسات و جذبات کو محسوس کرنا،ان کی خواہش اور مزاج سے واقف ہونا اور پھر ان تمام باتوں کو محسوس کرتے ہوئے اور اخلاقیات کا درس دیتے ہوئے، انہی کی زبان میں لکھنا اور پھر اپنے مقصد میں کامیاب بھی ہونا، یہ کوئی آسان کام نہیں ہے۔ لیکن قدرت نے جنہیں صلاحیت عطا کی ہے وہ اس مشکل کام کو بھی آسانی کے ساتھ انجام تک پہنچا رہے ہیں۔

Read more