بہار میں پردے کے پیچھے سے بیانات کے تیروں کی بوچھار

راشٹریہجنتا دل، جنتا دل یونائٹیڈ اور کانگریس کے بیچ قائم ہوئے اتحاد میں ان دنوں پردے کے پیچھے سے لیڈروں نے ایک دوسرے پر دبائو بنانے والے بیانوں کے تیروں کی بوچھار کر رکھی ہے۔ ان تیروں کا مقصد صرف بہار میں اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں اپنی پارٹیوں کے لئے زیادہ سے زیادہ سیٹیں حاصل کرنا ہے۔ لیکن بد قسمتی ہے کہ ان تیروں کی لپیٹ میں کبھی کبھی ریاست کے وزیر اعلیٰ جیتن رام مانجھی بھی آجاتے ہیں۔

Read more

بہار: مانجھی کو کون ڈرا رہا ہے ؟

سننے میں بڑا عجیب لگتا ہے، لیکن خود بہار کے وزیر اعلیٰ جیتن رام مانجھی کہتے ہیں کہ فیصلہ لینے میں مجھے ڈر لگتا ہے۔ کوئی عام آدمی یا پھر عام افسر ایسی بات کہے، تو کچھ دیر کے لیے سمجھ میں آتا ہے، لیکن خود وزیر اعلیٰ ایسی بات کہیں تو لگتا ہے کہ بات کافی سنگین ہے۔ آخر مانجھی کے اس بیان کے بعد اقتدار اور سرکار کا راستہ جاتا کدھر ہے؟ کیا یہ مانا جا سکتا ہے کہ کہیں نہ کہیں کوئی ایسی دوسری اقتدار کی طاقت ہے، جو

Read more

حاشیہ پر شرد یادو

لوک سبھا انتخابات ختم ہونے کے بعد تمام سیاسی جماعتیں اپنی شکست اور فتح کا جائزہ لینے میں صروف ہو گئی ہیں۔ اسی سلسلہ میں ایک تجزیہ جے ڈی یو میں بھی ہو رہا ہے کہ لوک سبھا انتخابات سے لے کر مانجھی حکومت کبھی این ڈی اے کے کنوینر رہے شرد یادو سیاسی حاشیہ پر پہنچ گئے ہیں؟ کیا حالات واقعی ایسے ہو گئے ہیں کہ راجیہ سبھا کی محض ایک سیٹ کے لئے شرد یادو کوئی بھی سمجھوتہ کرنے کے لئے تیار ہو گئے ہیں۔ لوک سبھا انتخابات کی پسند اور ناپسند کو لے کر نتیش کمار کے رویہ سے یہ سمجھا جا سکتا ہے کہ جے ڈی یو میں شرد یادو کی سیاسی حیثیت اب کیا رہ گئی ہے۔ ویسے یہ بات بھی عام ہو چکی ہے کہ شرد یادو مدھے

Read more

بہار کی پاٹلی پتر اور پٹنہ صاحب سیٹ: چاچا ، بھتیجی اور بہاری بابو کے درمیان سہ رخی مقابلہ

بہار کی سیاست کی نبض پہچاننی ہو، تو پٹنہ میں اقتدار کے گلیاروں میں گھومنا ضروری ہے۔ لیکن، ابھی تو ان گلیاروں میں پٹنہ کی دو وی آئی پی سیٹ، یعنی پاٹلی پتر اور پٹنہ صاحب کی ہی چرچا ہے۔ ایک طرف جہاں پاٹلی پتر میں چچا رام کرپال یادو اور بھتیجی میسا بھارتی کے درمیان مہابھارت چھڑی ہوئی ہے، وہیں دوسری طرف پٹنہ صاحب میں سب کی نظر شتروگھن سنہا کے ڈائلاگوں پر لگی ہوئی ہے۔ پہلے ان دونوں سیٹوں پر مباحثہ اس بات کو

Read more

دہلی کے بہاریوں نے نتیش کو خارج کیا

بڑے لیڈروں کے بارے میں کہا اور سمجھا جاتا ہے، وہ یہ ہے کہ وہ ملک میں کہیں بھی ووٹروں کو متاثر کر سکتے ہیں اور اپنے امیدواروں کو فائدہ پہنچا سکتے ہیں۔ کیا دہلی اور کیا بہار، ہر جگہ جادو چلنے کی گارنٹی۔ لیکن لگتا ہے نتیش کمار اس معاملے میں چوک گئے۔ معاملہ دہلی اسمبلی الیکشن کا ہے، جہاں جے ڈی یو نے اپنے 27 امیدواروں کو میدان میں اتارا تھا۔ میدان سجانے کی ذمہ داری بڑبولے صابر علی کے پاس تھی، کیوں کہ شرد یادو تو نہ کھیلنے والے کپتان کے رول میں آ گئے ہیں۔ دعویٰ بڑا کیا گیا کہ اس بار تو دہلی میں رہ رہے

Read more

نتیش کے لئے نظم و نسق اب بھی چیلنج

سال 2005میں نتیش کمار کے بر سراقتدار ہوتے ہی اگلے سال دسہرے پر ایک اخبار کی سرخیاںکچھ اس طرح تھیں’’ ڈر کا راون بھاگا، رات بھر پٹنا جاگا‘‘ لیکن اقتدار حاصل کرنے کے تقریباً آٹھ سال بعد اسی اخبار کی سرخیاں قتل و غارت گری اورلوٹ کی خبروں سے بھری پڑی ہیں۔ خصوصاً ،جب سے بی جے پی حکومت

Read more

لالو یا نتیش کس سے ہاتھ ملائین

سونیا گاندھی گاندھی اور راہل گاندھی کی تعریف میں پارلیمنٹ سے لے کر سڑک تک الفاظ کی حد بار بار پار کرنے والے لالو پرساد یادو اِن دنوں ان سے خاصے ناراض بتائے جا رہے ہیں۔ داغی لیڈروں والے آرڈی ننس پر راہل گاندھی کے اینگری ینگ مین والے ایپروچ نے لالو پرساد کو اندر سے دوبارہ سوچنے پر مجبور کر دیا ہے۔ لالو بھلے ہی کھل کر اپنی ناراضگی کا اظہار نہیں کر رہے ہیں، لیکن رانچی سے ان سے مناراضگی کا اظہار ل کر لوٹ رہے لیڈروں میں سے کچھ نے بتایا کہ لالو کو راہل گاندھی اور کانگریس سے اس طرح کے رویے کی امید نہیں تھی۔ لالو کے من میں تھا کہ پریشانی کی گھڑی میں کانگریس ایک بھروسے والے دوست کا رول نبھائے گی اور کسی نہ کسی طرح ان کی مدد کرکے راستے کو آسان بنا دے گی۔

Read more

سیلاب کے قہر سے بچنے کی تیاری ادھوری ہے

سروج سنگھ
برسات کا موسم آتے ہی سرکار سیلاب کنٹرول اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ پر اپنی روٹین میٹنگیں شروع کر دیتی ہے۔ کچھ فیصلے ہوتے ہیں، کچھ اضافی فنڈ بھی ریلیز کیا جاتا ہے اور شروع ہو جاتا ہے بندربانٹ کا کھیل۔ بارش کم ہوئی تو عزت بچی رہ جاتی ہے، لیکن جب کوسی جیسا الم ناک سانحہ پیش آتا ہے، تو تمام دعووں کی پول کھل جاتی ہے۔ سرکار اس معاملے میں کتنی سنجیدہ ہے، اس کا اندازہ کُسہا میں تباہ ہوئے خاندانوں کے درد سے لگایا جاسکتا ہے۔ متاثرین کو پھر سے آباد کرنے کا کام کس رفتار سے چل رہا ہے، اسے سب جانتے ہیں۔ دراصل، اوپر سے نیچے تک کا انتظامی امور سے وابستہ عملہ سیلاب میں اپنی آمدنی بڑھانے میں لگا رہتا ہے۔ نتیجتاً، جو لوگ اس الم ناک سانحہ میں تباہ و برباد ہوتے ہیں، ان کا دُکھ درد

Read more

انا حامیوں کا گاندھی میدان بھرنے کا عزم

سروج سنگھ
تیس جنوری کو انا ہزارے کی پٹنہ میں ہونے والی ریلی کو لے کر پورے بہار میں زبردست جوش و خروش کا ماحول ہے۔ پٹنہ میں ہونے والی اس ریلی کے رہنما جنرل وی کے سنگھ کے دو روزہ پٹنہ دورے سے تو کارکنان کا حوصلہ اتنا بڑھ گیا ہے کہ ہر کوئی انا کی ریلی میں آنے کی بات کرنے لگا ہے۔ جنرل وی کے سنگھ کے دورے سے سب سے بڑی بات یہ ہوئی کہ انا ہزارے کا خیرخواہ ہر

Read more

تعلیم پر کھنچی تلوار

سروج سنگھ
تین دنوں تک پٹنہ میں چلے اکھل بھارتیہ ودیارتھی پرشید ے قومی کنونشن میں یوں تو ملک کی سلامتی اور بہتری کے تمام مدعوں پرسنجیدگی سے غور خوض ہوا لیکن ملک اور خصوصاً ریاست بہار میں تعلیم کے معیار میں آ رہی تنزلی پر مرکز ی حکومت اور بہار حکومت کے خلاف کنونشن میں آر پار کی لڑائی کا آغاز ہو گیا۔ اتفاق رائے سے طے ہوا کہ اگر ملک کو سپر پاور بننا ہے تو پہلے اسے

Read more
Page 5 of 9« First...34567...Last »