یو پی انتخابات میں بی جے پی کو مسلم امیدواروں کو ٹکٹ دینے چاہئے تھے: راج ناتھ

نئی دہلی: مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے گزشتہ روز یو پی انتخابات سے متعلق ایک بڑا بیان دیا ہے۔ انھوں نے ایک نجی ٹی وی چینل کو دئے گئے اپنے انٹرویو میں کہا ہے کہ یو پی انتخابات میں بی جے پی کو مسلم امیدواروں کو بھی ٹکٹ دینے چاہئے تھے۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ ہم نے کئی دوسری ریاستوں میں اقلیتوں کو ٹکٹ دئے ہیں۔ یہاں (یو پی ) میں بھی اس پر بات ہونی چاہئے تھی۔ میں وہاں نہیں تھا، مجھے جو پتہ ہے اسی کی بنیاد پر بول رہا ہوں۔ ہو سکتا ہے کہ انہیں (بی جے پی پارلیمنٹری بورڈ) کو کوئی جتائو مسلم امیدوار نہیں ملا ہو۔ راج ناتھ سنگھ نے مزید کہا کہ میں مانتا ہوں کہ انہیں (مسلم) کو بھی ٹکٹ دیا جانا چاہئے تھا۔

Read more

پچاس ہزار سے زیادہ نقدی نکلانے پر لگ سکتا ہے ٹیکس، وزرائے اعلیٰ نے پی ایم مودی کو سونپی رپورٹ

نئی دہلی: بینکوں سے پچاس ہزار اور اس سے زیادہ نقد نکلانے پر ٹرانزیکشن ٹیکس لگائے جانے کی سفارش کرتے ہوئے وزرائے اعلیٰ کی کمیٹی نے وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنی حتمی رپورٹ دے دی۔ ڈیجیٹل پیمنٹ پر تشکیل

Read more

ترلوک پوری تشدد: کیوں اتنی لاچار ہو گئی ہے پولس؟

گزشتہ کچھ مہینوں میں اتر پردیش سے لے کر ملک کے مختلف حصوں میں بہت سے فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات ہو چکے ہیں اور ایک چھوٹے سے چھوٹا لاء اینڈ آر کا مسئلہ بھی فرقہ وارانہ تشدد کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ آخر کیا وجہ ہے کہ دو مخصوص فرقوں کے لوگوں کے درمیان ایک چھوٹی سی بحث بھی فرقہ وارانہ رنگ میں رنگ جاتی ہے ، کیا صرف اس لئے کہ دونوں الگ الگ مذاہب سے تعلق رکھتے ہیں یا پھر ا س میں پولس انتظامیہ کی کھوٹی نیت کا قصور ہے ۔ حال ہی میں ہوئے ملک کی راجدھانی دہلی کے ترلوک پوری علاقے کے فرقہ وارانہ تشدد میں بھی واضح طور پر پولس کی کچھوا چال کو قصوروار مانا جا رہا ہے۔ یوں تو دہلی پولس کو ملک کی بہترین پولس میں شمار کیا جاتا ہے لیکن آپ اندازہ لگایئے جب ملک کی راجدھانی میں ہی پولس انتظامیہ اپنے ناکارہ پن کا ثبوت دے تو صاف ہوتا ہے کہ میرٹھ، ملیانہ اور مظفر نگر جیسے فرقہ وارانہتشدد میں کیا ہوا ہوگا۔ اگر ترلوک پوری کی بات کریں تو یہاں ہونے والے تشدد کو قابو کرنے میں دہلی پولس کے پسینے چھوٹ گئے اور ہار تھک کر انتظامیہ کو وہاں ریپڈ ایکشن فورس اور سی آر پی ایف کو تعینا ت کر نا پڑا۔ حالانکہ تشدد میں ابھی تک کسی کے جان سے مارے جانے کی خبر نہیں ہے لیکن درجنوں لوگ شدید طور پر زخمی ہوئے ہیں اور دونوں فرقوں کے 50سے زیادہ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

Read more

ستارےبھی ذمہ داری شہری بھی

اکثر دیکھا جاتا ہے کہ بالی ووڈ کے نامور ستارے سماجی فلاح و بہود کے کاموں میں ہمیشہ آگے رہتے ہیں اور لوگوں کی مدد کرنے میں کوئی کوتاہی نہیں کرتے اور اس کے لئے بڑے بڑے شوز بھی کرتے ہیں تاکہ اس پیسے سے ضرورت مندوں کی مدد ہو سکے لیکن اگر بات کریں ان کی جمہوری ذمہ داری کی تو یہ بڑے بڑے ہیرو زیرو نظر آتے ہیں۔ المیہ یہ ہے کہ اکثر ٹی وی چینلوں پر انہیں لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ ہندوستانی جمہوریت کو مضبوط کرنے کے لئے آپ اپنے ووٹ کا استعمال ضرور کریں، لیکن کیا یہ ستارے الیکشن اور ووٹ کو لے کر خود اتنے سنجیدہ ہوتے ہیں؟ جب ہم نے یہی جاننے کی کوشش کی تو پتہ چلا کہ ان ستاروں کے چمکتے دمکتے چہروں کے پیچھے ایک بے حس چہرہ بھی چھپا ہے ، جس کا مظاہرہ انھوں نے گزشتہ دنوں ہوئی ممبئی

Read more

آئی پی ایل میں مسلم کھلاڑیوں کی نمائندگی کم

آئی پی ایل یعنی انڈین پریمئر لیگ جیسے جیسے اپنے عروج پر پہنچتا جا رہا ہے ، ویسے ویسے اس میں مسلم کرکٹروں کی نمائندگی کم ہوتی جا رہی ہے۔ سال 2008سے لے کر اب تک ساتویں سیزن تک ہر سیزن میں مسلم کرکٹرس کی نمائندگی میں بھاری کمی آئی ہے۔اگر مہندر سنگھ دھونی کی کپتانی والی چنئی سپر کنگ کی بات کریں تو اس میں ایک بھی مسلم کرکٹر شامل نہیں ہے۔اسی طرح اگر وجے مالیا کی روئل چیلنجر بنگلورفرنچائزی کی بات کریں تو اس بار اس میں ایک مسلم کرکٹر شاداب جکاتی شامل ہیں۔ حالانکہ پچھلے سیزن میں ان کی ٹیم محمد کیف شامل تھے ، لیکن انہیں کھیلنے کا بہت کم موقع دیا گیا تھا، لیکن اس بار پوری طرح باہر کر دیا گیا ہے

Read more

فلمی ہستیاں اور انتخابی موسم

اگر آزادی کے بعد سے ہی ہوئے تمام جمہوری انتخابات میں سبھی سیاسی پارٹیوں کی یہ ذہنیت رہی ہے کہ وہ الیکشن میں مقبول ترین ہستیوں کو اتاریں اور ان کی مقبولیت کا فائدہ اٹھا کر ووٹ بینک کو محفوظ کریں۔ خواہ وہ کھیل کا شعبہ ہو، تکنیک کا شعبہ ہو، ادب کا شعبہ یا پھر بالی ووڈ کا۔ ان تمام زمروں میں بالی ووڈ سب سے آگے ہے، جہاں سے ہر بار الیکشن کے آتے ہی سیاسی پارٹیاں ووٹروں تک مکمل رسائی کرنے کے لئے نامی فلمی ہستیوں کا سہارا لیتی ہیں۔ لیکن سوال یہ اٹھتا ہے کہ کیا ان فلمی ہستیوں کا الیکشن لڑنا واقعی عوامی مفاد کرنا ہے یا پھر یہ بھی ایک چھلاوا ہے؟

Read more

سپریم کورٹ کےنرغے میںسری نواسن کا سامراج

گزشتہ دنوں سپریم کورٹ نے سخت رخ اختیار کرتے ہوئے بی سی سی آئی کے صدر این سرینواسن پر سخت تبصرہ کیا اور کہا کہ صاف شفاف تحقیقی کی تکمیل کے لئے سری نواسن پہلے اپنے صدارتی عہدے سے مستعفی ہوں تاکہ تفتیشی غیر جانبدارانہ اور ایماندارانہ طریقہ سے مکمل کی جا سکے۔دراصل اس تبصرے سے کئی اشارے ملتے ہیں ۔ پہلا یہ کہ اگر سری نواسن تفتیش کے دائرے میں آتے ہیں اور ان کے خلاف ٹھوس ثبوت پائے جاتے ہیں تو ان کے داماد، چنئی سپر کنگ ٹیم اور ٹیم انڈیا کے کپتان مہندر سنگھ دھونی تک اس کے نرغے میں ہوں گے اور دنیائے کھیل میں کرکٹ کی شبیہ داغدار ہوگی۔

Read more

دراوڑ، لکشمن، سچن : کون سنبھالے گا ان کی وراثت

سلمان علی
دراوڑ گئے، لکشمن گئے اور اب سچن تیندولکر۔ تینوں ٹیم انڈیا کے وہ کھلاڑی تھے، جنھوں نے ہندوستانی کرکٹ کو ایک طویل عرصہ تک نئی بلندیاں عطا کیں، لیکن ان کے جانے کے ساتھ ہی ہندوستانی کرکٹ کے اس سنہرے دور کا خاتمہ ہو گیا، جس نے دنیائے کرکٹ میں اپنا لوہا منوایا۔ ان کے جانے کا مطلب ہے ٹیم میں ایک بہت بڑا خلاء پیدا ہو جانا اور شایدیہ خلاء اتنی جلد پر نہ ہو، کیونکہ کرکٹ

Read more