فوج کے لئے ایک سنہرا موقع ہے

سنتوش بھارتیہ
ہندوستانی فوج ملک کی شان ہے اور شان اس لیے ہے، کیوں کہ ملک کا نوجوان موت کو چنتا ہے۔ جو بھی فوج میں جاتا ہے، اس کے جانے کی ایک ہی قیمت ہے کہ جب بھی جنگ ہو یا ملک میں کہیں پر بھی بد امنی ہو تو فوج کا جوان وہاں ہتھیار لیے ہوئے مستعد رہے۔ اس پروفیشن کی صرف یہی ایک شرط ہے۔ اس کا سیدھا مطلب اپنی خوشی

Read more

۔۔۔اور اس طرح کانگریس ہار گئی

سنتوش بھارتیہ
دگ وجے سنگھ اور پرویز ہاشمی کو پھانسی کی سزا سنانے کی تیاری ہو چکی ہے۔ کانگریس اعلیٰ کمان ان دونوں کی سیاسی زندگی پر ایک لمبا فل اسٹاپ لگانے کا فیصلہ کر چکی ہے۔ بس اس کا باقاعدہ اعلان ہونا باقی ہے۔ اتر پردیش کے زیادہ تر کانگریسی کارکن کہہ رہے ہیں کہ پہلے دگ وجے سنگھ نے کانگریس کی تنظیم چوپٹ کی اور غلط پی سی سی ممبر بنائے گئے۔ ضلع اور بلاک کی سطح پر کانگریس کا صدر انہیں بنایا گیا ہے جو تنظیم چلانے کی حیثیت

Read more

کارپوریٹ سیکٹر اپنی سماجی ذمہ داری کو سمجھے

سنتوش بھارتیہ
ستائیس فروری کو بنگلور میں ای ٹی وی اردو اور ای ٹی وی کنڑ نے ایک سمینار منعقد کیا۔ سمینار کا موضوع تھا ’فیوچر آف کارپوریٹس اِن انڈیا‘ یعنی ہندوستان میں کارپوریٹ گھرانوں کا مستقبل۔ اس سمینار کے سب سے اہم مقرر، کمپنی افیئرس کے مرکزی وزیر شری ویرپا موئلی تھے اور مہمانِ خصوصی کرناٹک کے وزیر اعلیٰ سدانند گوڑا تھے۔ سمینار میں جعفر شریف، ایم وی راج شیکھر اور ضمیر پاشا بھی شامل تھے، جو کرناٹک کی بڑی ہستیاں ہیں۔ ویرپا موئلی ا

Read more

عوام کو اپنی ذمہ داری سمجھنی چاہئے

سنتوش بھارتیہ
اتر پردیش اسمبلی چنائو میں مہنگائی، بے روزگاری، تعلیم اور ہیلتھ سسٹم کی بد حالی اور بدعنوانی وغیرہ مدعے صاف دکھائی دیتے ہیں،لیکن ان کے ساتھ ایک اور اہم مدعا دکھائی دیتا ہے ، وہ ہے جرم۔جرم براہ راست اور جرم بالواسطہ، لیکن براہ راست اور بالواسطہ جرم سے بھی زیادہ اہم ہے سیاست میں جرم کا شامل ہونا یا مجرموں کا سیاست میں بے خوف داخلہ۔ یہ سارے سوال صرف اتر پردیش کے نہیں ہیں،بلکہ پورے ملک کے ہیں۔ ملک کے عوام ان سوالوں کا سامنا کر رہے ہیں اور انہیں جواب نہیں مل رہا ہے

Read more

مایوسی پیدا کرنے والا فیصلہ

سنتوش بھارتیہ
سپریم کورٹ کے فیصلے کا سبھی احترام کریں گے۔آخر یہ ہندوستان کے سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے لیکن سپریم کورٹ کے اس فیصلے سے ان لوگوں کو مایوسی ہوئی جو ایمانداری میں یقین رکھتے ہیں۔ملک کا سپریم کورٹ یہ کہتا ہے کہ ہمیں ایمانداری اور انٹی گریٹی سے کوئی مطلب نہیں ہے، تو پھر سوالپیدا ہوتا ہے کہ کیا ملک ایمانداری چھوڑ دے۔کیا اس ملک میں ان لوگوں کی ہی سنی جائے گی جو بد عنوان یا بے ایمان ہیں۔ شاید کہیں چوک ہوئی ہے اور اس لئے سپریم کورٹ سے یہ امید کرنی چاہئے کہ وہ ایک بڑی ب

Read more

قومی سیاست کی نئی راہ نکلنے کی امید

سنتوش بھارتیہ
اتر پردیش کے انتخاب مستقبل کا کیا اشارہ دیں گے، یہ پتہ نہیں۔ لیکن اتر پردیش کے انتخاب ایک اشارہ تو دے رہے ہیں، اور یہ اشارہ ہے کہ یو پی اے اور این ڈی اے میں نہ بھرنے والی دراڑ پڑ چکی ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی نے جس طرح آخری وقت تک شرد یادو اور نتیش کمار کو اندھیرے میں رکھا اور انہیں یہ کہتے رہے کہ سمجھوتہ کریں گے، اور آخر میں یہ کہہ دیا کہ اب سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ اس سے نتیش کمار اور شرد یادو کو دھکہ لگنا فطری ہے اور ان کا غم زدہ ہونا بھی فطری ہے۔ آخری وقت میں انہوں نے ات

Read more

انا اور رام دیو نے عوام کا اعتماد کھو دیا

سنتوش بھارتیہ
اناہزارے اور بابا رام دیو کا اِن پانچ صوبوں میں گھومنا اچھا اشارہ ہے۔ اچھا اشارہ اس لیے ہے، کیوں کہ انا ہزارے کی زبان کانگریس مخالف تھی اور بابا رام دیو تو کانگریس کی جڑ میں مٹھا ڈالنے کا ہی کام کر رہے تھے۔ اس سے یہ عوام کی طاقت کی علامت نہ بنے رہ کر کانگریس پارٹی کی مخالف طاقت کی علامت بن رہے تھے۔ انہوں نے کبھی عوام کی طاقت، خراب ہوتی جمہوریت، خراب ہوتے انتخاب اور امیدیں توڑتے لیڈروں کو اپنا نشانہ نہیں بنایا۔ انہوں نے ایک ایک مدعا پکڑا اور اس مدعے کو لے کر پارٹی م

Read more

سیاسی پارٹیوں نے جمہوریت کو مذاق بنا دیا

سنتوش بھارتیہ
اتر پردیش کے انتخاب میں یا پھر سبھی پانچ ریاستوں میں ہونے والے انتخابات میں ایک بڑا سوال ابھر کر سامنے آیا ہے کہ ہم جمہوریت کے تئیں سنجیدہ ہیں بھی یا نہیں۔ انتخاب کے وقت تمام پارٹیاں اپنا اچھا چہرہ عوام کے پاس لاتی ہیں۔ اچھا چہرہ لانے کا مطلب ہوتا ہے اُن کا منشور، جس میں وہ جھوٹے ہی سہی، لیکن وعدے کرتی ہیں۔ اُن وعدوں میں جہاں ایک طرف عام لوگوں کو یہ بتایا جاتا ہے کہ ان کے لیے پارٹی کیا کرنے والی ہے، وہیں دوسری طرف پارٹی بھی یہ ظاہر کرتی ہے کہ وہ لوگوں کے تئیں کتنی ایماندا

Read more

کمزوروں کا حق دیے بغیر ملک میں امن کو برقرار رکھنا مشکل ہے

سنتوش بھارتیہ
اتر پردیش کے انتخاب کا سوال کیا ہے اور یو پی کے انتخاب میں کن سوالوں کے جواب یہاں کے عوام دیں گے، اس کے بارے میں صرف اتنا کہنا چاہتے ہیں کہ جن سوالوں پر عوام کو جواب دینا چاہیے، وہ سوال عوام کے سامنے نہیں لائے جا رہے ہیں۔ جن سوالوں پر عوام کو خاموش رہنا چاہیے، وہ سوال سامنے لائے جا رہے ہیں۔ لوگوں کے اِموشن سے بھی کھیلنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ سوال چاہے ذات کا ہو، مذہب کا ہو، زبان کا ہو، ہر طرح کے سوال اٹھائے جا رہے ہیں۔ عوام بھولے ہوتے ہیں، لیکن بیوقوف نہیں ہوتے۔ او

Read more

جنرل وی کے سنگھ کے ساتھ انصاف ہونا چاہئے

سنتوش بھارتیہ
ہندوستانی فوج کے سربراہ کے ساتھ ایک طرف حکومت مذاق کر رہی ہے تو دوسری طرف میڈیا مذاق کر رہا ہے۔ حکومت بار بار ایک غلط بات کو صحیح ثابت کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ حکومت کو چاہیے کہ وہ سپریم کورٹ میں جاکر کہے کہ ہندوستان میں کسی بھی ڈیٹ آف برتھ کے سوال کو ہائی اسکول کے سرٹیفکٹ سے حل نہیں کیا جائے گا، بلکہ اس محکمہ کا سربراہ جو ڈیٹ آف برتھ طے کرے، اس سے حل کیا جائے گا۔ حالانکہ سپریم کورٹ نے یہ فیصلہ کئی کیسوں میں دیا ہے کہ جب بھی تاریخ پیدائش پر کوئ

Read more
Page 30 of 41« First...1020...2829303132...40...Last »