عزیز برنی سے کیوں ناراض ہیں مسلمان؟

اردو کے مشہور صحافی عزیز برنی سے مسلمان آج کل بہت ناراض چل رہے ہیں۔ ناراضگی اس لیے ہے کہ انہوں نے مسلمانوں کو بیوقوف بنانے کے لیے اب باقاعدہ سیاسی پارٹیوں کی دلالی کا کام شروع کر دیا ہے۔ ذاتی زندگی میں وہ اپنے مذہب پر عمل بھلے ہی نہ کرتے ہوں، لیکن کسی عظیم مذہبی شخصیت پر کیچڑ اچھالنے کا حق انہیں کسی بھی طرح نہیں ہے۔ وہ ملک کے وزیر اعظم بھی بننا چاہتے ہیں، جس کے لیے انہوں نے یو پی میں 20 پارٹیوں پر مشتمل اور مہاراشٹر میں 17 پارٹیوں پر مشتمل غیر بی جے پی اور غیر کانگریسی محاذ ’فورس وَن‘ میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ آخر وہ مسلمانوں کے خلاف ہی سازش کرنے میں کیوں لگے ہوئے ہیں، آئیے دیکھتے ہیں اس رپورٹ میں ……

Read more

ممتا۔جے للتا۔ مایا: کنگ میکر بن سکتی ہیں

ملک میں اس وقت 2014 کے لوک سبھا انتخابات کو لے کر مختلف سروے ایجنسیوں اور ٹی وی چینلوں کے ذریعے جتنے بھی انتخابی سروے ہو ئے ہیں، یا ہو رہے ہیں، ان سب سے ایک بات تو پوری طرح صاف ہو چکی ہے کہ اس بار مرکز میں حکومت بنانے کے لیے نہ تو این ڈی اے کو اکثریت ملنے جا رہی ہے اور نہ ہی یو پی اے کو۔ مزیدار بات یہ ہے کہ بی جے پی کی قیادت والے این ڈی اے اور کانگریس کی قیادت والے یو پی اے، دونوں کو ہی اگلی سرکار بنانے کے لیے اخیر میں دوسری پارٹیوں سے 50-60 سیٹوں کی مدد کی ضرورت پڑے گی۔ اگلی حکومت بنانے کے مضبوط دعویدار یہ

Read more

لوک سبھا میں گھٹتی مسلمانوں کی تعداد : جمہوریت کے لئے خطرہ

یہ ایک بڑا المیہ ہے کہ ہندوستان میں مسلمانوں کی تعداد لگاتار بڑھ رہی ہے، لیکن لوک سبھا میں ان کی تعداد گھٹتی جا رہی ہے۔ مسلمانوں کی پس ماندگی کے جہاں بہت سے اسباب ہیں، وہیں ان میں سے ایک مقننہ میں لگاتار گھٹتی ان کی نمائندگی بھی ہے۔ سرکاریں مسلمانوں کی فلاح و بہبود سے متعلق چاہے جتنے بھی دعوے کریں، یہ ایک حقیقت ہے کہ سیاست میں ان کی متناسب نمائندگی کے بغیر مسلم سماج کو ترقی کی دوڑ میں شامل کرنے کا خواب ادھورا ہی رہ جائے گا۔

Read more

جھوٹا پروپیگنڈہ بند کرے کانگریس: سچر کمیٹی کی 45سفارشات پر عمل ہی نہیں

سچر کمیٹی کی سفارشات کے نفاذ سے متعلق یو پی اے سرکار کا دعویٰ ہے کہ اس نے 76 میں سے 73 سفارشات کو نافذ کر دیا ہے، جب کہ چوتھی دنیا کی تفتیش یہ بتاتی ہے کہ سرکار نے سچر کمیٹی کی 76 سفارشات میں سے 45 کو نافذ نہیں کیا ہے۔ ان سب کے باوجود آخر وزیر اعظم منموہن سنگھ یا پھر ان کے مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور، کے رحمٰن خان یہ جھوٹ کیوں بول رہے ہیں کہ سچر کمیٹی کی تمام سفارشات کو نافذ کیا جا چکا ہے؟

Read more

یو پی اے سرکار مسلمانوں کو کب تک بے وقوف بناتی رہے گی؟

ہندوستانی مسلمان ملک کی دیگر برادریوں کے مقابلے کافی پچھڑا ہوا ہے۔ انہیں مذہب کی بنیاد پر ریزرویشن نہیں دیا جا سکتا، ایسا ہمارا آئین کہتا ہے۔ لیکن اس کے ساتھ ہی ہمارا آئین یہ بھی کہتا ہے کہ اگر ملک میں کوئی بھی طبقہ یا برادری سماجی و تعلیمی اعتبار سے پچھڑی ہوئی ہے، تو اس کے پچھڑے پن کو دور کرنے کے لیے ریزرویشن دیا جانا چاہیے۔ دلتوں کو آئین نے صرف 20 سالوں کے لیے ریزرویشن دینے کی بات کہی تھی، لیکن انہیں آج تک ریزرویشن مل رہا ہے۔ اوبی سی کو جو 27 فیصد ریزرویشن مل رہا ہے، اس میںاقلیتیں بھی شامل ہیں، لیکن مسلمانوں کے مقابلے دوسری اقلیتوں کو اس سے زیادہ فائدہ مل رہا ہے۔ سچر کمیٹی نے بھی اپنی تحقیقات کے بعد اس بات کا انکشاف کیا تھا کہ ہندوستانی مسلمان دلتوں سے بھی پچھڑے ہوئے ہیں۔ ایسے میں سوال یہ اٹھتا ہے کہ پس ماندگی کو سامنے رکھتے ہوئے حکومت مسلمانوں کو ریزرویشن کیوں نہیں دے رہی ہے؟

Read more

چوتھی دنیا کی کوششوں کا نتیجہ: ہمدرد یونیورسٹی کو سپریم کورٹ کا نوٹس

کیا یہ ممکن ہے کہ کسی کورس میں داخلہ پہلے مل جائے اور پھر داخلہ کا فارم بعد میں بھرا جائے اور فیس بھی تقریباً آٹھ مہینے کے بعد جمع کی جائے؟ ضروری شرائط یا تعلیمی صلاحیت کو پورا کیے بغیر کیا کسی کو پی ایچ ڈی میں داخلہ مل سکتا ہے؟ ان دونوں سوالوں کا جواب ’نا‘ ہے، لیکن دہلی میں واقع ہمدرد یونیورسٹی کے غیر قانونی وائس چانسلر ڈاکٹر غلام نبی قاضی ناممکن کو ممکن بنانے میں ماہر ہیں۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ سپریم کورٹ نے ان سب کا نوٹس لیتے ہوئے ہمدرد یونیورسٹی کو کیوں نوٹس بھیجا ہے …

Read more

گجرات کے مسلمان نہایت بدحال :ترقی محض ڈھکوسلہ

یہ بات صحیح ہے کہ گجرات میں 2002 کے بعد کوئی فرقہ وارانہ فساد نہیں ہوا۔ یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ 2012 کے گجرات اسمبلی انتخابات کے دوران ریاست کے 25 فیصد مسلمانوں نے بی جے پی کو ووٹ دیا تھا اور گجرات کے 8 مسلم اکثریتی علاقوں میں سے بی جے پی کو 6 سیٹوں پر جیت ملی تھی۔ بی جے پی ان سب کا کریڈٹ وہاں کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی اور ان کی قیادت میں ہونے والی ترقی کو دیتی ہے، لیکن مسلمانوں کو اب بھی یہ گلہ ہے کہ مودی نے اپنی ریاست میں مسلمانوں کے قتل عام پر اب تک معافی نہیں مانگی۔

Read more

پانچ ریاستوں میں بڑھتا ووٹنگ فیصد : اب ووٹ جاگ چکا ہے

90 سیٹوں والی چھتیس گڑھ اسمبلی کے لیے 11 اور 19 نومبر کو دو مرحلوں میں ووٹ ڈالے گئے۔ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ چھتیس گڑھ ایک نکسل متاثرہ ریاست ہے۔ مئی میں نکسلیوں نے بستر ضلع میں کانگریس کے ایک قافلے پر گھات لگاکر حملہ کیا، جس میں کانگریس کے سینئر لیڈر مہندر کرما سمیت 17 افراد کی موقع واردات پر ہی موت ہو گئی تھی، جب کہ 19 دیگر افراد اس حملے میں بری طرح زخمی ہوئے تھے۔ بعد میں اس حملے میں بری طرح زخمی ہوئے کانگریس کے ایک اور سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر وی سی شکلا کی موت ہو گئی تھی۔ ایسے حالات میں کانگریس کے لیے چھتیس گڑھ کا انتخاب بہت مشکل ہو گیا تھا۔ ان حملوں کے بعد کانگریس نے جہاں ایک طرف رمن سنگھ کی قیادت والی چھتیس گڑھ کی بی جے پی حکومت پر اپنے لیڈروں کو پوری طرح سیکورٹی فراہم نہ کرنے کا الزام لگایا تھا…

Read more

یو پی اے سرکار نے وقف املاک کو بچانے کے لئے کچھ نہیں کیا

سچر کمیٹی نے اپنی سفارش نمبر 59 میں کہا ہے کہ وقف ایکٹ، 1995 میں ترمیم کا کام جلد از جلد ہونا چاہیے۔ یو پی اے سرکار کا دعویٰ ہے کہ وقف ایکٹ، 1995 میں ترامیم کو کابینہ کی منظوری حاصل ہو چکی ہے اور بل کو پارلیمنٹ میں غور کرنے کے لیے بھیجا جا چکا ہے۔ پارلیمنٹ سے اس بل کے پاس ہونے کے بعد ماڈل وقف رولس کی تشکیل کی جائے گی۔ ہم سب جانتے ہیں کہ یو پی اے حکومت نے وقف ترمیمی بل کو پارلیمنٹ سے پاس کرا لیا ہے، لیکن اس کے اندر اب بھی بہت سی خامیاں ہیں، جن کی نشاندہی مذہبی تنظیموں اور علمائے کرام و مسلم لیڈران کی طرف سے کی گئی ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ اس بل کے پاس ہونے کے بعد وقف املاک کو غلط ہاتھوں سے سرکار کب تک چھڑا پاتی ہے اور اسے واپس مسلمانوں کو کب تک دلا پاتی ہے۔ جب تک وقف املاک پر سے غیر قانونی قبضے نہیں ہٹتے اور اس کا سیدھا فائدہ مسلمانوں کو نہیں ہوتا، تب تک ترمیم وغیر جیسی کارروائیوں کا کوئی فائدہ نہیں ہونے والا ہے۔

Read more

سچر کمیٹی کی سفارشات کو نافذ کرنے میں یو پی اے سرکار سنجیدہ نہیں

پھر کمیٹی نے اپنی سفارش نمبر 40 میں کہا ہے کہ وقف املاک کے بہتر استعمال سے سرکار، مسلم کمیونٹی اور پرائیویٹ سیکٹر کے درمیان پارٹنرشپ کے مواقع پیدا کرنے میں مدد ملے گی۔ سرکار کہتی ہے کہ وہ نیشنل وقف ڈیولپمنٹ کارپوریشن قائم کرنے پر غور کر رہی ہے، جس سے وقف املاک کو پبلک – پرائیویٹ پارٹنرشپ کے ذریعے بہتر ڈھنگ سے استعمال کیا جا سکے گا اور اس سے مسلم قوم کو اپنے ترقیاتی ڈھانچوں کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ یہ سب کب ہوگا، یہ کسی کو نہیں معلوم۔ یو پی اے سرکار کی دوسری مدت بھی

Read more
Page 3 of 912345...Last »