لاتور کے ذریعہ ملک کا مستقبل دیکھئے

ایسا کئی سالوں سے کہا جارہاہے کہ تیسری عالمی جنگ پانی کے لئے ہوگی۔ یہ عالمی جنگ کب ہوگی، کیسے ہوگی، یہ تو ابھی معلوم نہیں، لیکن ہمارے اپنے ملک میں پانی کو لے کر لڑائیاں ہونی شروع ہو گئی ہیں۔ گزشتہ دنوں مہاراشٹر کے لاتور شہر میں دفعہ 144 لگائی گئی۔ مدھیہ پردیش کے ٹیکم گڑھ میں ایک تالاب کے پانی کی سیکورٹی کے لئے بندوق بردار گارڈ تعینات کئے گئے۔ یہ سب اس لئے ہوا کیونکہ فی الحال ملک کے 12 صوبوں کے تقریباً 35 فیصد اضلاع بھیانک سوکھے کی زدمیں ہیں۔ کھیتی باڑی تو چھوڑیئے، پینے کے لئے پانی ملنا مشکل ہو رہا ہے۔ لاتور میں ٹرین سے پانی پہنچایا جارہا ہے۔ تاکہ لوگوں کو پینے کے لئے پانی مل سکے۔

Read more

دو ہزار انیس میں گٹھ بندھنوں کا گٹھ بندھن ہوسکتا ہے

حالانکہ پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخاب کے نتائج کا بے چینی سے انتظار کیا جارہا ہے، لیکن 2019 کے بڑے میچ کی تیاری ابھی سے شروع ہوگئی ہے۔ آپ کہہ سکتے ہیں کہ ہر ایک ریاست کے انتخاب کے نتیجے اگلے عام انتخابات کی سمت طے کریں گے۔ پچھلے سال بہار اور دہلی انتخابات کے نتائج نے بی جے پی / این ڈی اے مخالف خیمے میں جوش بھردیاتھا۔ لہٰذا آگے کی لڑائی کے لےے بی جے پی مخالف طاقتوں کو منظم کرنے کی قواعد شروع ہوگئی ہے۔ ایک طرف جے ڈی یو کا کچھ حد تک بڑا گٹھ بندھن ہے،جسے اترپردیش میں انتخاب کی حکمت عملی کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ لیکن اس کے ایک سے زیادہمطلب ہیں۔ یہ حکمت عملی نتیش کمار کو 2019 میں بی جے پی مخالف گٹھ بندھن کے لیڈرکی مضبوط دعویداری کے لےے اپنائی جارہی ہے۔ کانگریس نے پہلے سے ہی اس گٹھ بندھن میںشامل ہونے کی اپنی خواہش ظاہر کردی ہے۔

Read more

گلیمر کی چکاچوندھ دنیا کا سیاہ پہلو

چھوٹے پردے کی مقبول اداکارہ اور مقبول ٹی وی سیریل ’بالیکا ودھو‘ میںآنندی کا کردار نبھانے والی پرتیوشا بنرجی نے پھانسی لگاکر خودکشی کرلی۔ پرتیوشا کی لاش گورے گاؤں میں واقع ان کی رہائش پر مشتبہ حالت میںپھانسی کے پھندے پر لٹکی ملی۔ ان کے دوستوں کا کہنا ہے کہ ان کی بوائے فرینڈ راہل راج سنگھ سے ان بن چل رہی تھی اور راہل کی پہلی گرل

Read more

ورلڈ چمپئن ویسٹ انڈیز

ویسٹ انڈیز کے کھلاڑی بریوو نے جب ’چمپئن چمپئن‘ گیت لکھا، اس وقت انھوںنے خواب میںبھی نہیں سوچا ہوگا کہ یہ گیت ویسٹ انڈیز کی ٹی 20- ورلڈ کپ جیت کا فتح گیت بن کر تاریخ کے صفحات میں درج ہوجائے گا۔ کارلوس بریتھویٹ کے بلے سے جیت کا چھکا لگتے ہی ساری دنیا ’چمپئن چمپئن‘ گیت کی دھن کے ساتھ جشن میںڈوب گئی۔ کیربیائی آل راؤنڈر کارلوس بریتھویٹ نے انگلینڈ کے خلاف کھیلے گئے ورلڈ کپ فائنل میںچار چھکے جڑ کر کولکاتا کے ایڈین گارڈن میںتاریخ رقم کی اور ویسٹ انڈیز کودوسری بار فٹافٹ کرکٹ کا بادشاہ بنا دیا۔ یہ سال کیربیائی کرکٹ کے لیے کامیابیوں کا سال ہے۔ 49دن میں ویسٹ انڈیز ٹیم تین بار ورلڈ چمپئن بنی۔ سب سے پہلے ویسٹ انڈیز کی انڈر 19- ٹیم بنگلہ دیش میںہندوستان کوہراکر ورلڈ چمپئن بنی۔ اس کے بعد 3 اپریل کی شام کو اسٹیفنی ٹیلر کی قیادت والی خواتین کرکٹ ٹیم نے پچھلی تین بار کی ورلڈ چمپئن آسٹریلیا کے وجے رتھ کو روک کر ٹی 20- ورلڈ کپ پر پہلی بار قبضہ کیا۔ اس کے بعد باری تھی مردوںکی، جنھوںنے بڑے ہی بے خوف اور دھماکے دار انداز میںانگلینڈ کو چار وکٹ سے مات دے کر اس کے دوسری بار ٹی 20- ورلڈکپ جیتنے کے خواب پر پانی پھیر دیا۔

Read more

تین طلاق کا مسئلہ: طریقۂ طلاق کو قرآن کی طرف لوٹایا جائے

31مارچ2016کو سپریم کورٹ نے حکومت کو حکم دیاہے کہ زبانی طلاق، طلاق ثلاثہ(تین طلاق) اورتعددازواج(ایک سے زیادہ بیویاں) کے سلسلے میںرپورٹ کو چھ ہفتے کے اندر عدالت کے سامنے پیش کرے۔یہ حکم اتراکھنڈ کی ایک خاتون سائرہ بانوکی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے دیاگیا۔سائرہ بانونے اپنی عرضی میںعدالت سے درخواست کی ہے کہ اس کے شوہر نے اسے ایک ہی بار میںتین طلاقیں دے دی ہیں جو کہ خلاف قرآن ہے لہٰذااسے انصاف دلوایاجائے۔واضح رہے کہ سابقہ یوپی اے حکومت نے فروری 2012 میں وزارت خواتین اوربہبود اطفال کے تحت ایک چودہ رکنی کمیٹی رام راجپوت (ڈائریکٹرسینٹر فار وومن اسٹڈیز پنجاب یونیورسٹی)کے زیرنگرانی قائم کی تھی جس کا مقصدحکومت کو طلاق ثلاثہ(تین طلاق) اورتعدد ازواج(ایک سے زیادہ بیویاں) کے

Read more

اترا کھنڈ میں سیاسی کھیل، مودی کی تاناشاہی کا چرچا

بی جے پی کے ذریعہ ’کانگریس سے پاک ہندوستان‘ کے تحت اترا کھنڈ میں صدر راج نافذ کئے جانے کے بعد سیاسی گلیاروں میں مودی سرکار کی اس تانا شاہی کا چرچا ہے۔ مودی سرکار ثابت کرنا چاہتی ہے کہ سیاست میں نہ باتیں سیدھی ہوتی ہیں نہ چالیں۔ اس لئے اترا کھنڈ میں عوام کے ذریعہ منتخب ہریش راوت سرکار کے ساتھ جو سلوک کیا گیا، کانگریس نے اسے بڑی ناانصافی کہا ہے۔ 27تاریخ کو صدر راج لگانے کا فیصلہ خود وزیر اعظم مودی کے اشارے پر لیا گیا، جبکہ 28مارچ کو گورنر ڈاکٹر کرشن کانت پال کے ذریعہ ہریش راوت کو اکثریت ثابت کرنے کو کہا گیا تھا۔

Read more

راجستھان کے دو پکے سنگھی، سیاست کا نیا کھیل شروع، کہیں تو ہورہی ہے سیاست

راجستھان کی سیاست میں ان دنوں کچھ الگ طرح کی آہٹ ہے۔ یہ آہٹ پیدا ہوئی ہے سنگھ کے دو پرانے سو ئم سیوکوں کے پھر سے ایک ساتھ آنے کو لے کر۔ دراصل ہوا کچھ یوں ہے کہ صوبہ میں طاقتور سیاسی حیثیت رکھنے والے وزیر داخلہ گلاب چند کٹریا اور ایک زمانے میں ان کے قریبی دوست ایم ایل اے دھن شیام تیواڑی ایک بار پھر ساتھ آتے دکھائی دے رہے ہیں۔ اس سیاسی امکان کو طاقت تب ملی جب مارچ کے آخری ہفتہ میں اودے پور میں راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ کی ایک

Read more

بہار پنچایتی انتخاب میں گرج سکتی ہیں بندوقیں

بہار میں موسم کی گرمی تو عام لوگوں کو پریشان کرہی رہی ہے، سیاسی گرمی بھی امیدواروں کے لئے پریشانی کا سبب بنی ہوئی ہے۔ بہتے پسینے سے لت پت امیدوار گھر گھر جاکر دستک دے ووٹروں کو اپنی اپنی طرف راغب کرنے کی کوشش میں لگے ہیں۔ لیکن ووٹروں کی خاموشی ٹوٹنے کا نام ہی نہیں لے رہی ہے۔ کسی علاقے میں ترقی نہیں ہونے سے ووٹر ناراض ہیں تو کسی ضلع میں ترقی کے کام کے نام پر ہوئی لوٹ کو لے کر ووٹر کے بیچ ناراضگی پائی جاتی ہے۔ وارڈ سے لے کر پنچایت کی سطح تک عام انتخابی گہما گہمی کے بیچ انتخابی مہروں کو سجانے کا دور چل رہا ہے۔ دس مرحلوں میں منعقد ہونے والیپنچایتی انتخاب میں کون امیدوار جیت کے ہیرو بنیں گے اور کن کے نصیب میں شکست لکھی ہے ،یہ کہنا تو جلد بازی ہوگی، لیکن انتخا بی بساط

Read more

دیر سے ہی سہی انصاف کی جیت ہوئی، 25 سال بعد پولیس کا چہرہ بے نقاب

اپنے خاندان کے ساتھ تیرتھ یاترا پر نکلے سکھ خاندانوں کے 11 نوجوانوں کو بس سے اتارکر یوپی پولیس نے ان کا قتل کردیا تھا۔ پولیس نے اس قتل کیس کو مڈبھیڑ بتایا اور مرنے والے سکھوں کو دہشت گرد۔ پولیس نے خوب شاباشی بٹوری اور ترقی پائی۔ 12 جولائی 1991 کو اترپردیش کے پیلی بھیت ضلع میں پولیس نے یہ گھناؤنی حرکت کی تھی۔ واقعہ کے 25 سال بعد سی بی آئی کی عدالت نے جب 47 پولیس اہلکاروں کو عمرقید کی سزا سنائی، تو پولیس والے اپنے بنیادی کردار پر آگئے۔ کورٹ میںہی خوب ہنگامہ کیا اور توڑ پھوڑ کی۔ مجرم ثابت ہوئے پولیس والے کورٹ میںچار گھنٹے تک وبال مچاتے رہے اور کورٹ روم سے گیلری تک ہنگامہ کھڑا کردیا۔ پولیس اہلکاروں نے چلّا چلّا کر عدالت پر بھید بھاؤ کا الزام لگایا اور

Read more

سب سے زیادہ پھانسی کی سزا مسلم ملکوں میں دی جاتی ہے۔

موت کی سزا پر روک لگانے کے لئے انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیموں کی طرف سے مانگیں کی جاتی ہیں مگر اب تک ان مانگوں پر کئی ملکوں میں کوئی عمل نہیں ہورہا ہے ۔ ان ملکوں میں کچھ ایسے ہیں جہاں مجرم کو پھانسی کے پھندے پر لٹکاکر سزا دی جاتی ہے۔حیرت کی بات یہ ہے کہ جن ملکوں میں سب سے زیادہ پھانسی کی سزا سنائی گئی ہے ان میں مسلم ممالک سب سے آگے ہیں۔ البتہ چین کے بارے میں کوئی حتمی معلومات نہیں ہیں کہ وہاں کتنے لوگوں کو موت کی سزا دی گئی اور ان میں سے کتنے کو پھانسی پر لٹکا کر موت کے گھاٹ اتارا گیا۔ کیونکہ چین میں موت کی سزا کو خفیہ رکھا جاتا ہے۔

Read more