پناہ گزینوں کی بڑھتی آبادی عالمی معیشت کے لئے اچھی علامت نہیں ہے

p-8cمیں پناہ گزینوں کی تعداد ساڑھے چھ کروڑ سے زیادہ ہوگئی ہے۔جنگوں، تشدد اور دہشت گردی کے باعث بے گھر اور ہجرت پر مجبور افراد کی تعداد میں گزشتہ چند سال میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے اور ان کی تعداد جنگ عظیم دوم کے دوران بے گھر افراد سے بھی زیادہ ہوچکی ہے۔ 18دسمبر کو پناہ گزینوں کا دن’’بے گھر ہونے والے افراد کی مدد کیلئے ایک منٹ کا وقت دیں”کے نظریہ کے تحت منایا جائیگا تاکہ ایسے لوگوں کی حوصلہ افزائی کی جا سکے جن کو تشدد اور اختلافی خطرات کے باعث اپنا آبائی وطن

Read more

یوروپین یونین سے برطانیہکی علاحدگی کا اثر ہندوستانی معیشت پر

p-8bبرطانیہ اب یوروپین یونین (EU) کا حصہ نہیں رہے گا۔تاریخی ریفرنڈم میں 52 فیصد لوگوں نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ ملک یورپی یونین سے الگ ہو جائے۔ 48فیصد لوگوں نے کہا کہ برطانیہ کو 28 ممالک کے یونین میں بنے رہنا چاہئے۔ نتائج کا ہندوستان کے حصص بازاروں پر بھی اثر دیکھا گیا۔ سینسیکس میں ایک ہزار پوائنٹس کی کمی آئی۔ دنیا بھر میں اسٹاک مارکٹ کمزور ہوئی۔ ریفرنڈم کے اس نتیجہ کے بعد برطانیہ کے وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے کہا کہ ’’ میں اکتوبر تک استعفی دے دوں گا. مجھے نہیں لگتا کہ ملک جس اگلے پڑاؤ پر جا رہا ہے، اس کی کمان مجھے سنبھالنی چاہئے۔ کنزرویٹو پارٹی کو نیا لیڈر منتخب کرنا چاہئے‘‘

Read more

امریکہ کے صدارتی انتخاب کی کچھ دلچسپ باتیں

امریکہ میں ہونے والے صدارتی انتخاب میں دو امیدوار مد مقابل ہوں گے۔رپبلکن جماعت کی طرف سے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ ہیں جن کے بارے میں پچھلے سال تک کوئی سوچ بھی نہیں سکتا تھا کہ وہ صدارتی امیدوار کی دوڑ میں ہوں گے اور ڈیموکریٹ جماعت کی جانب سے صدارتی امیدوار ہلیری کلنٹن ہوں گی۔اس بار امریکہ میں ہونے والا الیکشن یقینا دلچسپ ہوگا کیونکہ دونوں امیدوار وں کے دلچسپ ہونے کے ساتھ ساتھ یہاں پر ایک اور دلچسپ پہلو ہے ،وہ ہے امریکہ میں صدر بننے والوں کی عمریں ۔

Read more

امیٹھی تحصیل کے احاطے میں سماج وادی لیڈر کی غنڈہ گردی،پولیس بنی تماشائی

جیسے جیسے اسمبلی انتخاب نزدیک آتا جارہا ہے، ویسے ویسے ہی سماج وادی پارٹی کے اپنے ہی لیڈروں کے ذریعہ سماج وادی پارٹی کے لئے مشکلیں پیدا کی جارہی ہیں۔کبھی ریاست کے وزیر برائے کان کنی کے تانڈو کا درد عوام کو جھیلنا پڑتا ہے تو کبھی پارٹی کے عہدیداروں کے ذریعہ انتظامیہ کو ننگا کرکے طاقت کے مظاہرے کا مکروہ منظر دیکھنا پڑتا ہے۔ گزشتہ 21جون کو

Read more

مودی کے اچھے دن کی بدتر تصویر ممبر پارلیمنٹ نے گائوں کو گود لے کر لاوارث چھوڑ دیا

مودی کا نعرہ آتے ہی اچھے دنوں کا خواب تازہ ہو جاتا ہے۔ اچھے دن آنے کے دعوے کی عمر دو سال ہو چکی ہے،لیکن انتظار جاری ہے۔ یہ انتظار 67برسوں سے جاری ہے۔ وزیر اعظم کی تمام چہیتی اسکیموں کا یو پی کے بندیل کھنڈ میں برا حال ہے۔ یہاں کے زیادہ تر آدرش گائوں بد حالی کا شکار ہیں۔ اس علاقے میںشامل ایک گائوں تو ایسا بھی ہے جہاں نہ سڑک ہے نہ پانی۔ ایک ہزار آبادی والے اس گائوں میں آزادی سے آج تک بجلی کی دیدار تک نہیں ہوئی۔حمیر پور، تیند باری لوک سبھا سے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ کے اس گود لئے گائوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔
مہوبا ضلع کا گرام پٹھاری پپرا ماف وزیر اعظم کے اچھے دنوں کے وعدے پر زور دار طمانچہ ہے۔ سڑک ،بجلی اور پانی سے محروم اس گائوں کی بد قسمتی ہے کہ یہاں کی ایک ہزار آبادی اکیسویں صدی میں چودہویں صدی کی زندگی گزار رہی ہے۔ کہنے کو تو اسے حمیر پور ،مہوبا، تیندواری سے بی جے پی رکن پارلیمنٹ پشپندر سنگھ چندیل نے گود لے رکھا ہے، لیکن ان دو

Read more

برونی ریفائنری کا کچھ کیجئے دھرمیندر پردھان جی

مرکز میں نریندر مودی سرکار مدت کار کے دو سال مکمل ہونے کی ستائش میں ’’وکاس پرو‘‘ منا رہی ہے۔ وہیں بہار کی شان اور ملک کی دوسری ریفائنری برونی ریفائنری اپنی ترقی کو ترس رہی ہے۔ترقی کی بات تو دور رہی، اپنے قائم کیے گئے معیار سے بھی وہ پچھڑ رہی ہے۔ مرکزی وزیر برائے پیٹرولیم دھرمیندر پردھان کے سارے اعلانات ہوا ہوائی بن کر رہ گئے۔ شری پردھان کے اعلان کے مطابق برونی ریفائنری کی سالوینسی کی توسیع نہیںہوئی۔ نوجوانوں کے لیے اسکل ڈیولپمنٹ سینٹر اور خواتین کے لیے نرسنگ ٹریننگ سینٹر نہیں کھلے۔ پیٹروکیمیکل ادیوگ کمپلکس کا قیام نہیںہوا۔ وزیر اعظم ترقی کے ان گروپوں کا سنگ بنیاد رکھنے نہیں آئے۔ دو سالوں میںبرونی ریفائنری کی ذرا بھی ترقی نہیں ہوئی۔ ڈاکٹر منموہن سنگھ کی سرکار کے دور میںفائدے میںچل رہی برونی ریفائنری، نریندر مودی کے دو سالوں کی مدت کار میںخسارے میںچل رہی ہے۔

Read more

ملی ٹینسی کو اسلام کے ساتھ جوڑنے پر جموں و کشمیر کی وزیر اعلیٰ ہدف ِ تنقید

ایک ایسے وقت میں جب وادی کشمیر میں عسکریت پسندوں کی پُر تشددکارروائیوں کا گراف بڑھتاجارہا ہے،وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی جانب سے تشدد کی اِن کارروائیوں کو دین اسلام سے جوڑنے کی دانستہ یا غیر دانستہ کوششوں پر وادی کے سیاسی ، سماجی اور مذہبی حلقوں کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔
25جون کو سرینگر کے مضافات میں پانپور کے قریب نیشنل ہائے وے پر ملی ٹنٹوںنے سینٹرل ریزرو پولیس فورس( سی آر پی ایف) کی ایک کانوائے پر گھات لگا کر حملہ کیا ، جسکے نتیجے میں فورس کے 8جوان مارے گئے اور کم ازکم22زخمی ہوگئے۔محبوبہ مفتی نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا،’’میں ایک مسلمان کی حیثیت سے شرمندہ ہوںکہ رمضان کے مہینے میں اس طرح کی کارروائی کی گئی۔‘‘ اسلام مخالفانہ سوچ رکھنے کے لئے بدنام زمانہ مصنف تسلیمہ نسرین نے محبوبہ کے بیان پر ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا،’’ میڈیم سچ کہنے پر مبارکباد ہو۔ آپ نے کہا کہ دہشت گردی اسلام کا ہی شاخسانہ ہے۔ جس پر مسلمانوں کو شرمندہ ہونا چاہیے۔‘‘

Read more

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم ایک مجلس کی تین طلاق تین ہی واقع ہوتی ہے

نکاح اللہ تعالیٰ کی بڑی نعمت ہے، جس سے مردو عورت دونوں یکساں فیض یاب ہوتے ہیں، اس لئے دونوں کا فرض ہے کہ: اس نعمت کی قدر کریں، اس کی بقا واستحکام کے لئے ہر ممکن جدوجہp-11 جاری رکھیں،مشکل حالات میں صبر وتحمل ،عفو ودرگزراور ہمدردی وہم آہنگی سے کام لیں، لیکن بعض دفعہ زوجین کے درمیان ایسی کشیدگی اور ذہنی دوری پیدا ہوجاتی ہیکہ: نکاح رحمت کے بجائے زحمت بن جاتاہے،ایسی صورت میں اللہ تعالیٰ نے اجازت دی ہے کہ: خوبصورتی اور حسن سلوک

Read more

اترا کھنڈ قدرتی آفت کے ادھورے سبق

جون 2013 میں اتر اکھنڈ میں ہوئے حادثہ کے تین سال پورے ہونے کے بعد بھی سرکار گہری نیند سے بیدار نہیں ہوئی ہے۔ انوائرنمنٹ اسٹنڈرڈ کی اندیکھی کرکے علاقے میں پھر سے ڈیولپمنٹ کے کام تیزی سے کئے جارہے ہیں۔ ماہرین ماحولیات کی بار بار وارننگ کے باوجود بھی سرکار قدرتی آفتوں کو روکنے کے لئے بڑے باندھوں کی افادیت کو قبول کرنے کو تیار نہیں ہے۔ ایسے میں اب بے بس عوام قدرتی آفت کو تقدیر کا کھیل مان کر تباہی و بربادی کو جھیلنے کے لئے مجبور ہے۔

Read more