تعلیم نسواںا ور اقبال

پروفیسر مظفر حنفی
کلام اقبال‘ کی پہلو داری اور ہمہ جہتی کا زمانہ قائل۔ اس طرح ان کے افکارو نظریات میں بھی بڑی رنگارنگی ہے۔ ان خیالات سے ہرشخص کا صدفی صد متفق الرائے ہونا ضروری نہیں ہے لیکن یہ بھی مناسب نہیں ہے کہ اقبال کی شاعری یاان کے جن افکار سے ہمیں اتفاق نہ ہو ان کو بالکل رد کردیں یا پھر انہیں اپنی پسند کے مطابق ڈھالنے کے لئے غلط تاویلیں اور دوراز کا ردلیلیں پیش کرنے لگیں۔ مثلاً مذہب اور سیاست کی وحدت پر علامہ کا اصرار، جمہوریت قوم اور وطن کے بارے میں عام مروجہ نظریات سے بالکل مختلف ان کا انداز فکر نیز عورت اور تعلیم نسواں سے متعلق اقبال کا منفرد تصور اگر عہد حاضر کے بعض ناقدین کی ذاتی پسند اور معیارات کاساتھ نہیں دیتے تو ان سے اقبال کے کلام اور افکار کی اہمیت و افاد

Read more

سنتوش بھارتیہ انجم جمالی ایوارڈ سے سرفراز

میرٹھ:چوتھی دنیا انٹرنیشنل اردو ویکلی کے چیف ایڈیٹر سنتوش بھارتیہ کو چیمبرآف کامرس، میرٹھ میںڈاکٹر انجم جمالی میموریل فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام منعقد ایک تقریب میں انجم جمالی ایوارڈ سے سرفرازکیا گیا۔انہیں یہ ایوارڈپروگرام کے مہمان خصوصی اتر پردیش حکومت کے سابق وزیر اور ممبر اسمبلی ایڈوکیٹ شاہد منظور،کانگریسی لیڈر و سابق وزیر ڈاکٹر معراج الدین احمد اور ضلع اسپتال کے سی ایم او ڈاکٹر سبودھ تیواری کے ہاتھوں

Read more

ہندوستان میں مسلمانوں کی سیاسی جماعت : ایک تجزیہ

محمد احمد اللہ کلیم
ہندوستان میں مسلمانوں کی معاشی بد حالی، تعلیمی پسماندگی اور بے روزگاری وغیرہ کے سلسلے میں مختلف طرح کے تجزیے کیے جاتے رہے ہیں اور اس کی کئی وجوہات بھی بیان کی جاتی ہیں، ان میں ایک بنیادی وجہ ہندوستانی سیاست میں مسلمانوں کے اثر و رسوخ کا نہ ہونا بھی بیان کیا جاتا ہے۔ یہ خلاف واقعہ بھی نہیں ہے کہ آبادی کے اعتبار سے پارلیمانی اور اسمبلی انتخابات میںمسلمانوں کو جتنی سیٹوں کی نمائندگی ملنی چاہئے ،ان کی آدھی سیٹیوں پر بھی مس

Read more

اسمبلی انتخابات: عوام کے مسائل اور چیلنج

ششی شیکھر
پانچ ریاستوں میں ہونے جا رہے اسمبلی انتخابات میں ابھی تک بات سیاسی اتحاد کی ہو رہی ہے، امکانات کی ہو رہی ہے۔ کون بنے گا وزیر اعلیٰ یا کس پارٹی کاکس پارٹی سے ہوگا اتحاد اور کن شرائط پر، لیکن ان سب کے درمیان عوام کی بات یعنی عوام کے مسائل پر جتنا غور و خوض ہونا چاہئے، اتنا نہیں ہو رہا ہے۔ مغربی بنگال میں 34سالوں سے کمیونسٹ پارٹی قابض ہے، لیکن اس بار طویل

Read more

بدعنوانیوں کو فروغ دے گا انیمی پر اپرٹی بل

ڈاکٹر ظفرا لاسلام خان
دشمن جائداد قانون، انیمی پراپرٹی ایکٹ1968، 20 اگست 1968 میں نافذ ہوا۔ اصل میں 1965میں پاکستان سے جنگ کے پس منظر میں ڈیفنس آف انڈین رولس1971 کے تحت بنے کسٹوڈین آف انیمی پراپرٹی کے سلسلے میں اس ایکٹ کو لایا گیا تھا۔ یہ ایکٹ ایک عبوری قانون تھا اور ایک خاص مقصد کے لئے بنا تھا جو اصل مالک (یا اس کے وارث) کو اس کے حق سے محروم نہیں کرتا اور گورنمنٹ کو اس کا مالک نہیں بناتا۔ تاہم کسٹوڈین آف انیمی پراپرٹی کے محکمہ میں زبردست دھاندلیاں اور بے اعتدالیاں ہیں جن کے باعث عملاًاصل مالکوں سے زیادہ اسے اختیار ملے ہوئے ہیں۔ یاد رہے کہ کیمبریج یونیورسٹی کے پروفیسر جیا چی

Read more

بابا رام دیو جی ! پہلے اس ملک کو تو سمجھئے

سنتوش بھارتیہ
ہم نے بابا رام دیو سے کئی سوال کئے۔ ہمیں بابا رام دیو سے کوئی شکایت نہیں ہے اب شکایت کیوں نہیں ہے، وہ اس لئے نہیں ہے کہ ملک میں کوئی بھی آدمی کچھ بھی کاروبار کرنے کے لئے آزاد ہے۔ خواہ وہ کاروبار کاروں کا ہو، مٹھائی بنانے کا ہو یا پھر یوگ سکھانے کا یا دوائیاں بنانے کا ہو۔ بہت سے لوگ کر بھی رہے ہیں، لیکن جب آپ اپنے دائرہ کو چھوڑ کر باہر نکلتے ہیں اور آپ ملک کے دائرہ میں آتے ہیں تو پھر آپ کو ان سوالوں کا جواب دینے کے لئے تیار رہنا چاہئے، جن سوالوں

Read more

عرب انقلاب کا سفر

عتیق احمد صدیقی
تاریخ یقینا اپنے آپ کو دہراتی ہوگی لیکن یہ 360 ڈگری کا چکر کاٹ کر واپس اپنے نقطہ آغاز کی طرف کبھی نہیں لوٹتی ۔تاریخ کا سفر کسی دائرے کا سفر نہیں ہوتا بلکہ یہ ایک سیدھی لکیر کا سفر ہوتا ہے جو آگے ہی بڑھتا رہتا ہے۔ بعض فرعونی قوتیں البتہ یہ کوشش ضرور کرتی ہیں کہ تاریخ دائرے میں سفر کرے یا پھر کم از کم ایک ہی مقام پر رک جائے مگر قوانین قدرت ایسا نہیں ہونے دیتے زندگی آگے بڑھتی رہتی ہے۔
گزشتہ کئی دنوں سے عرب عوام کی جرأت مندانہ جدوجہد اور عرب سڑکوں پر بہتے ہوئے انسانی خون کے مناظر دیکھتے ہوئے سوچ رہا تھا ک

Read more

میں بھی حاضر تھا وہاں

فیض احمد فیضؔ پر سہ روزہ بین الاقوامی سمینار کا انعقاد
نئی دہلی: ساہتیہ اکادمی کے زیراہتمام فیض احمد فیضؔ پر سہ روزہ بین الاقوامی سمینار کا انعقاد رویندر بھون آڈیٹوریم میں کیا گیا، جس کے افتتاحی اجلاس میں کلیدی خطبہ پیش کرتے ہوئے پروفیسر گوپی چند نارنگ نے کہا کہ فیض کی شاعری ایک روشن الاؤ کی طرح ہے جو وقت کے ساتھ ساتھ دہک رہا ہے۔ اردو میں اقبال کے بعد کسی کو وہ مقبولیت نصیب نہیں ہوئی جو فیض کے حصے میں آئی۔ وہ اردو کو ترقی پسندی کی سب سے بڑی دین ہیں۔پاکستان کی ممتاز شاعرہ زہرہ نگاہ نے سمینارکا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ

Read more