نتیش جی ، تقریبات کے بجائے تعلیمی نظام بہتر بنایئے

ہندوستان کے اولین وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزادکی یوم ولادت کی تقریب پر راجدھانی پٹنہ میں دو روزہ ’’یوم تعلیم ‘‘ کا اہتمام کیا گیا۔ تقریب کا افتتاح خود بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے کیا۔علاوہ ازیں ریاست کے کئی دیگر وزراء و اعلیٰ افسران بھی اس تقریب میں شامل ہوئے۔تقریب میں مختلف اعلانات ہوئے، کئی وعدے کئے گئے اور اس بار کے ’’یوم تعلیم‘‘ کا تھیم ’’اسکول امپاورمنٹ‘‘ رکھا گیا۔اس دوران وزیر تعلیم پی کے شاہی اور چیف سکریٹری امر جیت سنہا نے کہا کہ وہ سبھی کو بہتر تنخواہ دینا چاہتے ہیں، لیکن ریاست کی اقتصادی صورتحال صحیح نہیں ہے۔ اس دوران گاندھی میدان اور سری کرشن میموریل ہال میں دیگر پروگراموں کا انعقاد بھی ہوا۔ تعلیم کے شعبہ میں بہتر ین خدمات انجام دینے والی شخصیات

Read more

سرتاج عزیز کی حریت لیڈروں سے ملاقات: گیلانی کی رہائی سب سیاسی کھیل ہے

جموں کشمیر میں علیحدگی پسند لیڈران دنوں سرخیوں میں رہے ہیں۔ اسکی کئی وجوہات ہیں۔ پہلی یہ کہ ریاستی حکومت نے ایک طویل عرصے کی خانہ نظر بندی کے بعد 85سالہ مزاحمتی لیڈر سید علی شاہ گیلانی کو غیر متوقع طور پر رہا کردیا۔گیلانی نے رہائی کے ساتھ ہی اپنی ’’ عوامی رابطہ مہم‘‘ میں عوامی جلسے منعقد کرانا شروع کردیئے۔ وہ کھلے عام عوام سے آنے والے انتخابات میں پولنگ بوتھوں سے دور رہنے کی اپیل کررہے ہیں۔گیلانی کی شعلہ بیانی جسے انکے ناقدین ’’اشتعال انگیزی‘‘ سے بھی تعبیر کرتے ہیں، کی وجہ سے

Read more

رائٹ ٹو رجیکٹ پر حکومت قبضہ کرنا چاہتی ہے

گزشتہ ماہ جب سپریم کورٹ کے حکم پر ملک کے عوام کو امیدواروں کو ناپسند کرنے کا حق حاصل ہوا تو یکبارگی ایسا محسوس ہوا کہ سپریم کورٹ کا یہ فرمان سیاسی جماعتوں کو اب آئینی اور پارلیمانی اصولوں کی راہ دکھائے گا۔ ساتھ ہی ملک کے عوام کو بھی یہ اختیار حاصل ہوا کہ جو جمہوری عمل کے تحت وہ نہ صرف اپنی پسند کے امیدواروں کو منتخب کرے بلکہ اس بات سے بھی آگاہ کر سکے کہ اسے کوئی امیدوار پسند نہیں ہے۔ یہ معاملہ 2001سے ہی وزارت قانون کے پاس اٹکا ہوا تھا۔ گزشتہ دنوں جب سماجی کارکن انا ہزارے جی نے رائٹ ٹو رجیکٹ اور رائٹ ٹو ری کال کو اپنے 25نکاتی پروگرام میں شامل کیا تو ملک میں اس مطالبہ کو لے کر ایک نیا ماحول بننا شروع ہوا۔ سپریم کورٹ نے جب اس سلسلہ میں

Read more

وراثت پر جنگ

تھامس جیفرسن انقلاب کی ایک ترغیب تھے یا ڈھونگی داس سوامی ؟ وینسٹن چرچل ایک ہیرو تھے یا نسل پرست؟ امریکی اور برطانوی لوگ اس موضوع پر ہمیشہ بحث کرتے رہتے ہیں، لیکن اس کے برعکس ہندوستانی اپنی حالیہ تاریخ جیسے مدعوں پر بحث کرنے کے معاملہ میں بھی شرم محسوس کرتے ہیں۔ بر سر اقتدار کانگریس، جس کے پاس اقتصادی گورننس کے مدعے پر بولنے کے لئے زیادہ کچھ نہیں ہے، نریندر مودی کے ذریعہ چیلنج کئے جانے سے پریشان ہے۔پارٹی کے سب سے مضبوط فریق کو مودی نے حال ہی چیلنج کیا ہے۔ مودی نے حال ہی میں سردار کو پٹیل کو اپنا آدرش بتایا ہے۔

Read more

مودی کا ایک ہفتے میں بہار کا دوسرا دورہ، ماحول بگاڑنے کی سازش

غیر بی جے پی ریاستوں میں غالباً پہلی ریاست ہے جہاں اس وقت ہر طرف نمونمو کاجاپ ہورہاہے اور بی جے پی کے وزیر اعظم کے عہدہ کے امیدوار نریندر مودی کے حق میں ہواچلتی نظر آرہی ہے۔ یہ غیر متوقع تبدیلی بہار کی راجدھانی پٹنہ کے تاریخی گاندھی میدان میں گذشتہ 27اکتوبر کو منعقدہ بی جے پی کی ہونکار ریلی سے قبل پٹنہ میں ہوئے سلسلہ وار بم دھماکوں اور اس میں انڈین مجاہدین کا نام آنے کے بعد رونما ہوئی ہے۔ دھماکوں کے درمیان ریلی کے اختتام کے دوسرے ہی دن سے بی جے پی نے اس معاملے پر جس طرح کا رویہ اپنایا اور دھماکوں کا اصلی ٹارگیٹ نریندر مودی کو قرار دیا اس سے بھی ہوا بنانے میں مدد ملی۔

Read more

مسلمانوں کی یہ ذہنی تبدیلی مودی کے لئے خوش آئند ہو سکتی ہے

بھارتیہ جنتا پارٹی کے وزیر اعظم عہدہ کے امیدوار نریندر مودی کا خوف دکھا کر مسلم ووٹ ہتھیانے کی کوشش میں کانگریس اور سماجوادی پارٹی کے ہتھکنڈے کامیاب نہیں ہو پا رہے ہیں۔مسلمانوں میں تعلیم یافتہ اور بیدار طبقہ ان ہتھکنڈوں کی مخالفت کرنے لگا ہے۔اس کی شروعات اتر پردیش سے ہوئی ہے۔ جہاں مسلم ووٹوں کے لئے کانگریس، سماجوادی اور بی ایس پی کی تکڑی میں زبردست رشہ کشی ہوتی ہے۔کئی مسلم مذہبی رہنمائوں کے بھی مودی کے تئیں نرمی برتنے سے کانگریس ، سماجوادی پارٹی کو یہ احساس ہونے لگا ہے کہ بدلتی

Read more

مسلمانوں کے تعلق سے کوئی بھی پارٹی مخلص نہیں: مولانا محمد سالم قاسمی

کہا جاتا ہے کہ اجمیری گیٹ دہلی کے تاریخی تعلیمی ادارہ اینگلو عربک اسکول کے ہوسٹل کے ایک کمرہ میں دو طالبعلم رہا کرتے تھے۔ ان میں سے ایک نے ملک میںدینی تو دوسرے نے جدید تعلیم کے فرو غ کا خواب دیکھا اور پھر اس میں رنگ بھی بھرا۔ایک ہندوستان میں دینی تعلیم کا امام تو دوسرا مسلمانوں میںجدید تعلیم کا نشان بن گیا۔ ایک کو مستقبل میں مولانا قاسم نانوتوی ؒ کے روپ میں دیوبند میں دارالعلوم قائم کرتے ہوئے تو دوسرے کو سرسید آحمد خاںؒ کی شکل میں علی گڑھ میں اینگلو محمڈن اورینٹل کالج جو کہ 1920 میں یونیورسٹی کادرجہ پاکر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی بن گیا کی بنیاد ڈالتے ہوئے دیکھا گیا۔ چوتھی دنیا نے اس بار اپنے انٹرویوسیریز کے لئے جس شخصیت کا انتخاب کیا ہے وہ اول الذکر مولانا قاسم نانوتویؒ کے پر پوتے اور قاری محمد طیبؒ کے صاحبزادے مولانا محمد سالم قاسمی ہیں جو کہ فی الوقت مہتمم دارلعلوم (وقف)کے علاوہ نائب صدر آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ اور چیئرمین سپریم گائڈ ینس کونسل ، آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت نیز سرپرست طیب ہاسپیٹل اینڈ ایجوکیشنل ٹرسٹ ہیں ۔پیش خدمت ہے ملک و ملت کو درپیش مسائل کے تعلق سے اے یو آصف اور وسیم احمد کی ان سے کی گئی بات چیت کے اقتباسات۔

Read more

کشمیری لیڈران کے قول و فعال میں تضاد ہی کشمیری عوام کا المیہ

جموں کشمیر کے وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ ایک بار پھر اپنے بیان میں تضاد کی وجہ سے سیاسی حلقوں میں تنقید کا نشانہ بنے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے 4نومبر کو جموں میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ،’’ ان کے ذہن میں کوئی شبہ نہیں کہ جموں کشمیر بھارت کا اٹوٹ اور تقسیم نہ ہونے والا حصہ ہے۔‘‘ شاید عمر کے اس موقف پر کسی کو اعتراض نہیں ہوتا اور نہ ہی اس موقف پر انہیں ہدف تنقید بنانے کا کوئی جواز تھا، اگر یہ ان کا مستقل موقف ہوتا۔ جموں کشمیر کی تاریخ سے اچھی طرح واقف اور یہاں کے حالات پر گہری نظر رکھنے والے مبصرین کا ماننا ہے کہ کشمیری سیاستدانوں کی جانب سے ہوا کا رخ دیکھ کر نائو چلانے اور کپڑوں کی طرح موقف اور بیانات بدلنے کی عادت کی وجہ سے ہی یہاں کے

Read more

ان نوجوان طلبا کے لئے کون سوچے گا؟

سماجی کارکن انا ہزارے نے بدعنوانی کے خلاف لڑائی کی اپنی مہم میں نوجوانوں کے جوش اور جذبے کو مضبوطی دیتے ہوئے کئی بار یہ کہا ہے کہ نوجوان طاقت ہی قومی طاقت ہے، لیکن سیاسی جماعتوں نے اپنے مفاد کے لئے انہیں اپنے حق میں اس طرح کر لیا کہ طلبا کی سیاست اور ان کے مدعے انہیں پارٹیوں کے ہو کر رہ گئے ہیں۔ طلبا خود کو جتنی جلدی اس بدنظمی سے باہر نکالیں گے اور سیاست میں پھیلی بدعنوانی کے خلاف آواز اٹھائیں گے،اتنی ہی جلدی صحیح معنوں میں ملک آزاد ہو پائے گا۔

Read more

ہاتھ لال اور کالے دونوں ہو رہے ہیں: ڈاکٹر منظور عالم

تھنک ٹینک کی بنیاد پر ادارہ سازی کے لئے معروف 68 سالہ ماہر اقتصادیات ڈاکٹر محمد منظور عالم اندرون و بیرون ملک متعدد پالیسی ساز اداروں و تنظیموں سے منسلک ہیں۔ مردم خیز متھلا نچل (بہار) کے رانی پور میں 9 اکتوبر 1945 کو پیدا ہوئے ڈاکٹر عالم نے ابتدائی تعلیم اور گریجویشن بہار سے

Read more