نتیش کا دہلی مارچ ، یہ عشق نہیں آساں

گزشتہ دنوں راجگیرمیں منعقد ہوا جنتا دل (یو)کی قومی کونسل کا اجلاس اس لحاظ سے بہت ہی غیر معمولی ہے کہ اس موقع پر یونیفارم سول کوڈ کے تعلق سے مرکزی حکومت کی کوششوں کو ملک کی وحدت کے لئے خطرناک قرار دیا گیا، مرکز کے خلاف مورچہ کھولنے کی بات کی گئی، آئندہ لوک سبھا انتخابات نتیش کمار کی قیادت میں لڑنے کا اعلان کیا گیا، تیسرے محاذ کی تشکیل نو پر غور ہوا اور شراب بندی موضوع بحث بنا۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ جے ڈی یو کا آئندہ پروگرام کیا ہے؟

Read more

بہار: مودی ایک طرف باقی سب ایک ساتھ

انتخابی عمل کے آغاز میں اس بار حالات بدلے ہوئے تھے۔ بی جے پی، جے ڈی یو کے ساتھ 17 سال کی رفاقت ختم ہونے کے بعد پہلی بار تنہا انتخابی میدان میں اتر رہی تھی۔ شروع میں ایسا محسوس ہو ا کہ وہ اتحاد توڑنے کے لیے جنتا دل یو کو ذمہ دار قرار دے کر عوام کی مدد حاصل کر لے گی اور بس اتنا ہی سے اس کا کام چل جائے گا۔ لیکن بعد میں اسے ایسا محسوس ہوا کہ اس سے کام نہیں چلے گا، تو اس نے بودھ گیا اور پٹنہ بم دھماکوں کا معاملہ شد و مد کے ساتھ اٹھاتے ہوئے نتیش حکومت کو کٹہرے میں کھڑا کرنے کی کوشش کی اور یہ ثابت کرنے میں مصروف ہو گئی کہ بی جے پی کے اقتدار سے ہٹتے ہی بہار میں سارا نظام درہم برہم ہو گیا ہے او ربہار ایک بار پھر جنگل راج کی طرف بڑھ رہا ہے۔

Read more

فسطائی طاقتوں کے خلاف متحد ہونے لگا بہار

قومی شاعر دنکر نے ایک موقع پر کہا تھا کہ ’’جب سیاست لڑکھڑاتی ہے تو ادب اسے سنبھالتا ہے۔‘‘ دنکر کی زبان سے نکلنے والا یہ جملہ آج پوری طرح سچ ثابت ہو رہا ہے۔ آج جہاں ایک طرف کچھ لوگ سیاست کو پراگندہ کر رہے ہیں اور سماج، مذہب، فرقہ، ذات اور زبان کی بنیاد پر تقسیم کرکے مفاد پرستی کی سیاست کر رہے ہیں، تو دوسری طرف ادیب، شاعر، صحافی، قلم کا ر اور فنکار کثرت میں وحدت کا پیغام عام کرنے کی کوشش میں مصروف ہو گئے ہیں۔ یہ لوگ سماجی ہم آہنگی کے تئیں انسانیت، محبت، رواداری اور اتحاد و اتفاق کی

Read more

بہار: 2004جیسا ہو سکتا ہے بی جے پی کا انجام

کانگریس صدر سونیا گاندھی کا یہ خیال غلط نہیں ہے کہ بی جے پی کا خواب جاگتی آنکھوں کا خواب ہے۔ اس کے پاس ملک کو موجودہ مسائل سے نجات دلانے یا اسے ترقی کی راہ پر لے جانے کا کوئی پر وگرام نہیں ہے۔ اسے مرکز میں ایک بار نہیں دوبار مواقع ملے، مگر وہ قومی مسائل کے حل اور ملک کی مجموعی ترقی کا کوئی ٹھوس پروگرام نہیں پیش کر سکی۔ وہ صرف ہوائی قلعے تعمیر کرکے عوام کو اس کی تصوراتی سیر کراتی ہے، لیکن اس طرح کی خوش کن باتیں اور بڑے بڑے وعدے نہ کسی مسئلے کا حل ہیں اور نہ ہی

Read more

مدارس کے اساتذہ پر نتیش حکومت کی مہربانی

اشرف استھانوی
بہار کی نتیش حکومت نے مدارس کے اساتذہ اور ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کرنے کا ایک بڑا فیصلہ لیا ہے اور اعلان کیا ہے کہ بڑھی ہوئی ان تنخواہوں کا نفاذ جنوری 2006 سے قابل عمل ہوگا۔ حکومت کے اس نئے فیصلہ سے جہاں ایک طرف ریاست کے 1128 ملحقہ مدارس کے اساتذہ و ملازمین مستفید ہوں گے، وہیں، اس سے ریاست کے 525 سنسکرت اسکولوں کے اساتذہ اور ملازمین بھی مستفید ہوں گے۔ لیکن زیادہ بڑا فائدہ مدارس کے اساتذہ اور ملازمین کو ہی حاصل ہوگا، کیوں کہ 1128 ملحقہ مدارس، جن میں 9 مدرسۃ البنات بھی شامل ہیں، کے علاوہ مالی منظوری کے منتظر 2460 مدارس میں سے 205 ان مدارس کو بھی اب حکومت کی طرف سے مالی معاونت حاصل ہوگی، جو اس کے لیے مقررہ

Read more

بہار فرقہ پرستوں کی زد میں

صوفی و سنتوںکی سر زمین بہار فرقہ پرستوں کی زدمیں ہے ۔ فرقہ پرست طاقتیں منظم اور متحد ہوکر ریاست کی ہم آہنگی اور خیر سگالی کی فضا کو مکدر کر نے کی پے در پے کوششیں کر رہی ہیں ۔بہار میں موجودہ خلفشار اور پورے بہار کو فرقہ پرستی کے شعلوںمیں جلا دینے کی کوشش کیا نریندر مودی کی اس دھمکی کا اثر ہے جس میں انہوں نے بی جے پی کے گنے چنے 500 ؍افراد کو نتیش کمار سے بدلہ لینے کے لئے للکارا تھا ؟۔ نوادہ فساد کے دوران مسلمانوں کی دکانوں کو جلا تے وقت فسادیوں نے نریندر مودی زندہ باد کا نعرہ لگایا ۔ اس سے صاف ظاہر ہوا کہ بہار میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے اس کے پیچھے آر ایس ایس اور نریندر مودی کا ہاتھ موجود ہے اور ان کے گرگے موجودہ حکومت سے بدلہ لینے کے

Read more

صرف مودی کی مخالفت نتیش کا بیڑا پار نہیں لگائے گی

اشرف استھانوی
نریندر مودی کے سوال پر بی جے پی سے ناطہ توڑ کر راتوں رات سیکولرازم کے علمبردار اور سیکولر ووٹروں خصوصاً مسلمانوں کی آنکھوں کا تارا بنے بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کے لئے آئندہ لوک سبھا انتخاب اور اس کے بعد 2015 میں ہونے والے اسمبلی انتخاب کی ڈگر آسان نہیں ہے، کیوں کہ ایک طرف خود انہوں نے بی جے پی ، کانگریس اور راشٹریہ جنتا دل تینوں سے یکساں دوری بنائے رکھنے کا فیصلہ کرکے اپنی مشکلیں بڑھالی ہیں، تو دوسری طرف بہار کے سیکولر عوام خصوصاً مسلمانوں کی توقعات میں حد درجہ اضافہ نے

Read more

چارہ گھوٹالہ: جیل جانے کی صورت میں لالو کا جانشین کون بیوی یا بیٹا؟

اشرف استھانوی
بہار کے سابق وزیر اعلیٰ اور آر جے ڈی سپریمو لالو یادو کو چارہ گھوٹالے کے جس معاملے میں سزا سنائے جانے کا امکان ہے وہ غیر منقسم بہار کے چائی باسا ضلع کے سرکاری خزانہ سے 37.70 کروڑ روپے غلط طریقے سے نکالے جانے سے متعلق ہے۔ اس معاملے کے انکشاف اور آر جے ڈی سپریمو لالو پرساد کے خلاف چارج شیٹ داخل کیے جانے کے بعد 1997 میں لالو کو بہار کے وزیر اعلیٰ کے عہدہ سے استعفیٰ دینا پڑا تھا اور اپنی اہلیہ رابڑی دیوی کو حکومت کی کمان سونپنے کا فیصلہ کرنا پڑا تھا۔ اس معاملے کی تحقیقات پٹنہ ہائی کورٹ کی ہدایت پر 2000 میں سی بی آئی کو سونپی گئی تھی۔ اس معا ملے میں لالو پرساد کے علاوہ بہار کے ایک اور سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جگن ناتھ مشرا سمیت 56 افراد

Read more
Page 1 of 512345