پٹنہ میں پکڑے گئے دو مشتبہ دہشت گرد،تفتیش میں انکشاف،نشانے پر تھے گیا سمیت ملک کے کئی بودھ مذہبی مقامات

Share Article

terrorist-in-bihar

پٹنہ اے ٹی ایس کی ٹیم نے پیر کی دیر رات دو مشتبہ بنگلہ دیشی دہشت گردوں کو گرفتار کیا ہے۔ گرفتار ملزمان نے تفتیش کے دوران کئی اہم انکشافات کیے ہیں۔ پٹنہ جنکشن کے پاس اے ٹی ایس کی ٹیم نے بنگلہ دیشی دہشت گرد تنظیم جماعت الحق۔مجاہدین اور اسلامک اسٹیٹ بنگلہ دیش (ISBD) کے دو دہشت گردوں خیروو منڈل اور ابو سلطان کو گرفتار کیا ۔گرفتار مشتبہ بنگلہ دیش کے کھلنا پرگنہ کے جھنودا ضلع کے مہیش پور تھانہ علاقہ کے چاپاتلّا گاؤں کے رہنے والے ہیں۔

اب تک کی تفتیش میں سامنے آیا ہے کہ دونوں اقلیتی برادری کے نوجوانوں کو جمعیت المجاہدین بنگلہ دیش سے جوڑ کر ہندوستان میں اپنی تنظیم کو پھیلانا چاہتے تھے۔ اس کے لئے کولکاتہ، دہلی کے علاوہ پٹنہ اور گیا ان کے نشانے پر تھا۔ ان کی سازش بدھ مت مذہبی مقامات کو نشانہ بنانے کی تھی۔ تفتیش میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ دونوں شام میں آئی ایس آئی ایس سے جڑ کر جہاد میں شامل ہونا چاہتے تھے۔

اے ٹی ایس ذرائع کی مانیں تو گرفتار خیرل اور ابو سلطان ملک میں بڑا واقعہ کو انجام دینے کی فراق میں تھے۔دونوں جے ایم بی اور آئی ایس بی ڈی دہشت گرد تنظیم کے سرگرم رکن ہیں۔ اس تنظیم کے نورالہدیٰ معصوم، رنکو منڈل، سیبل کو بنگلہ دیش پولیس دہشت گردانہ واقعات میں گرفتار کر چکی ہے۔دونوں 11 دنوں تک گیا میں رہے اور اس دوران کئی مقامات کی ریکی کی۔

پٹنہ جنکشن واقع مدنی مسافرخانہ کے پاس سے گرفتار بنگلہ دیشی دہشت گرد خیرل منڈل اور ابو سلطان کو پیر کی دیر شام سخت سیکورٹی میں پٹنہ سول کورٹ احاطے واقع اے ٹی ایس کورٹ میں پیش کیا گیا۔ اے ٹی ایس نے گرفتار بنگلہ دیشی دہشت گردوں سے ضبط تینوں موبائل فون اور میموری کارڈ کو فورنسکجانچ کیلئے فورنسک سائنس لیبارٹری بھیجنے کی درخواست کی ہے۔ ساتھ ہی پولیس ریمانڈ کیلئے اے ٹی ایس نے کورٹ میں درخواست بھی دی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *