عام انتخابات کے ساتھ ہوں گے اروناچل، سکم، آندھرا اور اڑیسہ کے اسمبلی انتخابات،جموں وکشمیر پر سسپنس برقرار

Share Article

lok-sabha-2019

نئی دہلی:الیکشن کمیشن آج شام 5 بجے لوک سبھا انتخابات کے تاریخوں کا اعلان کرنے والا ہے۔ اس کے ساتھ ہی کمیشن آندھرا پردیش، اڑیسہ، سکم اور اروناچل پردیش کے اسمبلی انتخابات کے تاریخوں کا بھی اعلان کرے گا، اگرچہ جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات کی تاریخوں پر ابھی پوزیشن صاف نہیں ہے۔

آندھرا پردیش کی 175 سیٹوں پر انتخابات ہونے ہیں، اس وقت ٹی ڈی پی کے پاس اس ریاست کا اقتدار ہے۔ اس بار کے انتخابات میں ٹی ڈی پی اور وائی ایس آر کانگریس میں سخت مقابلہ کے اشارے مل رہے ہیں۔

اڑیسہ اسمبلی کی 147 سیٹوں پر بھی لوک سبھا انتخابات کے ساتھ ہی ووٹنگ ہوں گی۔ حکمران بی جے ڈی، بی جے پی اور کانگریس کے درمیان یہاں سہ رخی مقابلے ہونے کی امید ہے۔

سکم کی 32 اسمبلی سیٹوں پر بھی عام انتخابات کے ساتھ ہی ووٹنگ ہوگی۔ الیکشن کمیشن آج شام اس ریاست کے اسمبلی انتخابات کا بھی اعلان کرے گا۔ حکمران سکم ڈیموکریٹک فرنٹ (ایس ڈی ایف) ایک بار پھر ریاست میں واپسی کی کوششوں میں لگی ہے۔ ریاست کے وزیر اعلیٰ پون کمار چاملنگ پانچ بار یہاں کے وزیر اعلیٰ رہ چکے ہیں اور چھٹی بار میدان میں تال ٹھوک رہے ہیں۔

اروناچل پردیش کی 60 اسمبلی سیٹوں پر بھی لوک سبھا انتخابات کے ساتھ ہی ووٹنگ ہوگی۔ مستقل رہائش سرٹیفکیٹ (PRC) کی مخالفت کے درمیان ہونے والے اس انتخاب میں سی ایم پیما کھانڈو کی ساکھ داؤ پر ہے۔

جموں و کشمیر اسمبلی کے انتخابات پر ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ ریاست میں ابھی گورنر راج نافذ ہے۔ دیکھنا ہوگا کہ الیکشن کمیشن اس ریاست میں اسمبلی انتخابات کا اعلان کرتا ہے یا نہیں۔ پی ڈی پی، این سی اور کانگریس جہاں ریاست میں جلد انتخابات کا مطالبہ کر رہے ہیں، وہیں ذرائع کا کہنا ہے کہ مقامی انتظامیہ نے سیکورٹی کے پیش نظر ابھی الیکشن نہ کرانے کا مشورہ دیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *