آسام : زہریلی شراب پینے سے مرنے والوں کی تعداد 102 کے پار، سی ایم نے کیا 2-2 لاکھ معاوضہ کا اعلان

Share Article
assam-CM
گوہاٹی: آسام کے جورہاٹ اور گوہاٹی اضلاع میں زہریلی شراب پی کر مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 102 ہو گئی ہے، جبکہ 340 لوگوں کا اسپتالوں میں علاج چل رہا ہے۔ مسلسل بڑھ رہے اموات کے اعداد و شمار کو دیکھتے ہوئے وزیر اعلیٰ سربانند سونووال نے جورہاٹ میڈیکل کالج اسپتال (جے ایم سی ایچ) میں متاثرین سے ملاقات کی اور ہر مہلوک کے اہل خانہ کو دو دو لاکھ روپے اور بیمار ہوئے لوگوں کو 50۔50 ہزار روپے کی امدادی رقم دینے کا اعلان کیا۔
assam-sharab-bhatti
وہیں اس پورے معاملے پر اپوزیشن کانگریس نے وزیراعلیٰ اور ریاست کے آبکاری وزیر سے استعفیٰ کی مانگ کیہے۔ آسام میں اپوزیشن کانگریس نے بی جے پی حکومت پر الزام لگایا کہ غیر قانونی شراب کی فروخت روکنے کے لئے مناسب قدم نہیں اٹھائے جا رہے ہیں۔
اپوزیشن کانگریس نے وزیر اعلیٰ سے مانگا استعفیٰ 
اب تک اس معاملے میں آسام پولیس نے گولاگھاٹ میں پوچھ گچھ کے لئے 12 افراد کو حراست میں لیا گیاہے۔ جمعہ کو اس معاملے میں دو لوگوں کو گرفتار کیا گیا تھا۔ محکمہ صحت کے حکام کے مطابق جورہاٹ میڈیکل کالج اسپتال میں 46 لوگوں کی موت ہو گئی۔ 35 اور لوگوں نے گولاگھاٹ سول اسپتال میں دم توڑ دیا، وہیں تیتا بور سب ڈویزنل اسپتالمیں چار لوگوں کی موت ہو گئی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *