آسارام کا بیٹا نارائن سائیں ریپ کیس میں قصوروار قرار

Share Article

 

سورت سیشن کورٹ نے آسارام کے بیٹے نارائن سائیں کو سادھوی سے ریپ کرنے کے معاملے میں قصوروار قرار دے دیا ہے۔ عدالت 30 اپریل کو نارائن سائیں کو سزا سنائے گی۔

 

Image result for Asaram's son Narayan Sai convicted in rape case

ریپ کے معاملے میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے آسارام کے بیٹے نارائن سائیں کو سورت سیشن کورٹ نے آسارام کے بیٹے نارائن سائیں کو سادھوی سے ریپ کرنے کے معاملے میں قصوروار قرار دے دیا ہے۔ عدالت 30 اپریل کو نارائن سائیں کو سزا سنائے گی۔

 

 

نارائن سائیں کے خلاف کے خلاف عصمت دری کامعاملہ درج تھا۔ آج عدالت نے اسے اس معاملے میں قصوروار قراد دیا گیا ہے۔ اس معاملے میں نارائن سائیں سمیت دس ملزم ہیں۔ ان میں نارائن سائیں کے علاوہ تمام فی الحال ضمانت پر باہر ہیں۔

Image result for Asaram's son Narayan Sai convicted in rape case

 

واضح ہو کہ سائیں سورت کی ایک خاتون سے عصمت دری کے الزام میں گرفتار کیاگیا تھا۔ ان پر الزام ہے کہ نارائن سائیں نے خاتون کا اس وقت ریپ کیا جب وہ آسارام کے آشرم میں تھی۔ سائیں کو6 دسمبر 2013 میں لاجپور سینٹرل جیل بھیجا گیا تھا۔ آسارام خود ریپ کے الزام میں راجستھان کی جودھپور جیل میں قید ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *