جنسی استحصال معاملہ:آسا رام کو جیل میں ہی سنایا جائے گا فیصلہ

Share Article

asaram

جودھ پور:نابالغ سے جنسی استحصال کے معاملے میں ملزم آسا رام کو 25اپریل کو جیل میں ہی فیصلہ سنایا جائے گا۔ اس سے قبل پولس کی طرف سے جیل میں سماعت ہونے کو لے کر ہائی کورٹ میں دائر اپیل پر فیصلہ منگل کی صبح محفوظ رکھا گیا تھا ۔ْ دوپہر میں کورٹ نے جیل میں ہی فیصلہ سنانے کا فیصلہ کیا۔نابالغ سے عصمت دری کے الزام میں آسا رام کے معاملے میں25اپریل کو آنے والے فیصلے کو لے کر سرکار کو خدشہ ہے کہ فیصلے کے دن آسا رام کے حامی رام رحیم کے حامیوں کی طرح تشدد پر نہ اتر جائیں۔ ایسے میں سرکار نے ہائی کورٹ سے اپیل کی تھی کہ فیصلے کے دن آسا رام کو جودھپور کی کورٹ میں طلب کرنے کے بجائے جیل میں ہی فیصلہ سنا دیا ۔ دوسری جانب پچھلے پانچ برسوں میںآسا رام کے خلاف گواہی دینے والے خوف کے سائے میں جی رہے ہیں ۔ اب تک دس گواہوں پر جان لیوا حملے ہو چکے ہیں۔ آسا رام کے خلاف گواہی دینے والے لگا تار ان رپ ہو ہرے حملے کی شکایت کرتے رہے ہیں ۔ معاملے کو لے کر ہو رہی دیری کے سبب پچھلے سال اگست میں سپریم کورٹ نے گجرات سرکار کو پھٹکار لگائی تھی ۔ اس کا کہنا تھا کہ آسا رام کے خلاف گواہی دینیو الوں کو دھمکایا جا رہا ہے ۔ پچھلے پانچ برسوں سے آسا رام جیل میں بند ہیں پھر بھی اس کے معاملوں سے جڑے کئی گواہوں کا قتل ہو چکا ہے اور متعدد افراد پر جانیوا حملے ہو چکے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *