جنسی استحصال معاملے میں آسارام قصوروار،سزاپربحث جاری

Share Article
babu-asaram
جنسی استحصال معاملے میں آسارام سمیت 3ملزموں کوقصوروارقراردیاگیاہے، جبکہ 2 ملزموں کوبری کردیاگیاہے۔ جسٹس مدھوسودن شرما نے جودھپور جیل میں فیصلہ سنایا۔ کورٹ میں قصورواروں کی سزاپربحث جاری ہے۔ بحث کے دوران وکیلوں نے آسارام کی زیادہ عمرکا حوالہ دیا۔ آسارام کے وکیلوں نے کم سزاکی مانگ کی ہے۔بہرکیف جج مدھوسدن شرما نے آسارام باپو کو 16 سالہ معصوم لڑکی سے جنسی استحصال کے الزام میں قصوروار قرار دیا۔ اس معاملے میں آسارام کے ساتھ شلپی اور شیوا کو بھی مجرم قرار دیا گیا ہے۔
عیاں رہے کہہے کہ اگست 2013 میں ایک 16 سالہ لڑکی نے الزام لگایا تھا کہ آسارام نے جودھپور آشرم میں اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی تھی۔ دو دن بعد ہی لڑکی کے والد نے دہلی جا کر آسارام کے خلاف ایک رپورٹ لکھوائی تھی۔ پولیس نے متاثرہ کا میڈیکل ٹیسٹ کرانے کے بعد کیس راجستھان پولیس کو ٹرانسفر کر دیا۔ راجستھان پولیس نے آسارام کو پوچھ گچھ کے لئے 31 اگست، 2013 تک کا وقت دیتے ہوئے نوٹس جاری کیا تھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *