اویسی نے کہا!’گلے بھی کاٹ دوگے تب بھی ہم مسلم ہی رہیں گے‘

Share Article
Owaisi
آل انڈیا مجلس اتحادالمسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اوررکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے ہریانہ کے گڑگاؤں میں مسلم نوجوان کی زبردستی داڑھی کاٹنے کے معاملے میں بیان دیاہے۔یادرہے کہ کچھ ہندوشرپسندوں نے مبینہ طورپرزبردستی ایک مسلم نوجوان ظفرالدین کی داڑھی کٹوادی تھی۔
حیدرآبادسے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے کہاکہ جن لوگوں نے مسلم نوجوان کی زبردستی داڑھی کٹوادی،میں ان سے اوران کے والدسے یہ کہنا چاہتاہوں کہ اگرتم ہمارے گلے بھی کاٹ دوگے تب بھی ہم مسلم ہی رہیں گے۔ہاں ہم تمہیں ضرورمسلم بنادیں گے اورتمہیں بھی داڑھی رکھنے پرمجبورکردیں گے۔
اسدالدین اویسی نے پارلیمنٹ میں کانگریس صدرراہل گاندھی کے ذریعے وزیراعظم نریندرمودی سے گلے ملنے پرنشاناسادھا۔انہو ں نے کہاکہ اگرمیں پی ایم مودی سے ہاتھ بھی ملالوں تومیرے خلاف فتویٰ جاری کردیاجائے گا۔لیکن کانگریس کے کسی بھی لیڈرنے راہل گاندھی کے خلاف ایک لفظ نہیں بولے۔
یادرہے کہ 31جولائی کوہریانہ گڑگاؤں میں جبراً مسلم نوجوان کی داڑھی کاٹنے اوراس کے ساتھ مارپیٹ کا معاملہ سامنے آیاتھا۔معاملہ سامنے آنے کے بعد2اگست کوپولس نے معاملہ درج کیا اوراس معاملے تین ملزموں کوبھی گرفتارکیاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *