اویسی نے پی ایم مودی سے پوچھا- کب بڑھے گی مسلم ارکان پارلیمنٹ کی تعداد ؟

Share Article
owaisi-modi
گذشتہ روز 16 ویں لوک سبھا کے آخری اجلاس کے آخری دن وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا تھاکہ ’’ ہمیں اس سیشن پر فخر ہے کیونکہ اس بار خواتین ارکان پارلیمنٹ کی تعداد سب سے زیادہ رہی ،جس میں 44 خواتین ارکان پارلیمنٹ پہلی بار منتخب ہو کر آئی تھیں۔ اس پر آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اور رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے وزیر اعظم مودی پر جم کر حملہ کرتے ہوئے سوال اٹھائے کہ کیا 17ویں لوک سبھا میں مسلم ارکان پارلیمنٹ کی تعداد بھی بڑھے گی؟ کیوں کہ ابھی بی جے پی میں ایک مسلم رکن پارلیمنٹ نہیں ہے۔
دراصل، وزیراعظم نریندرمودی نے ایوان میں کہاکہ ہمیں اس 16ویں لوک سبھا پرفخرہوگا کیونکہ اس بارخواتین ارکان پارلیمنٹ کی تعداد سب سے زیادہ رہی۔44خواتین ایسی رہیں جوکہ پہلی باراس ایوان کیلئے رکن پارلیمنٹ منتخب کی گئیں۔اسی پر اسدالدین اویسی نے پی ایم او کوہیش ٹیگ کرتے ہوئے ٹویٹ کر کے کہا کہ ’’ یس سر،اور بی جے پی میں ایک بھی مسلم رکن پارلیمنٹ نہیں ہے۔ اس 16ویں لوک سبھا میں محض 23 مسلم ارکان پارلیمنٹ ہیں۔ یہ اب تک کہ دوسری سب سے کم تعداد ہے۔ 14 فیصد ہندوستانی مسلمانوں کو سیاسی طور پر حاشیہ پر بھیج دیا گیا ہے۔ کیا ہم 17 ویں لوک سبھا میں مسلم ارکان پارلیمنٹ کی بڑھتی ہوئی تعداد دیکھیں گے؟‘‘۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *