اپنے بیان سے ہمیشہ شہ سرخیوں میں رہنے والے مرکزی وزیر اور بی جے پی کے فائر برانڈ لیڈر گری راج سنگھ نے ٹویٹ کرکے معیشت، سماجی ہم آہنگی اور وسائل کا توازن بگڑنے کا سبب بڑھتی آبادی کو بتایا ہے۔
 
عالمی یوم آبادی کے موقع پر جمعرات کو گری راج سنگھ نے ٹویٹ کر کہا ہے کہ ‘ہندوستان میں بڑھتی آبادی معیشت، سماجی ہم آہنگی اور وسائل کاتوازن بگاڑ ہی ہے۔ آبادی کنٹرول پر مذہبی رکاوٹ بھی ایک وجہ ہے۔ ہندوستان 47 کی طرز پر ثقافتی تقسیم کی طرف بڑھ رہا ہے۔ تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ ہوکر آبادی کنٹرول قانون کے لئے آگے آنا ہوگا۔
 
بھارت اور امریکہ کا 1947 اور 2019 تقابلی ڈیٹا دیتے ہوئے مرکزی وزیر نے بتایا ہے کہ بھارت میں سال 1947 میں کل آبادی 30 کروڑ تھی جبکہ امریکہ کی آبادی 15 کروڑ تھی۔ وہیں، سال 2019 میں بھارت کی آبادی 140 کروڑ پہنچ گئی ہے، جبکہ امریکہ کی آبادی محض 32 کروڑ تک پہنچی ہے۔ گری راج نے کہا ہے کہ چین میں فی منٹ 11 بچے جنم لے رہے ہیں، وہیں بھارت میں 29 بچے فی منٹ جنم لے رہے ہیں۔ آبادی کنٹرول کے لئے چین کی طرح ہی بھارت میں بھی قانون بنانا چاہیے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here