گروگرام میں مسلم خاندان کی پیٹائی پر بھڑکے کیجریوال، بی جے پی کو کہا۔ غنڈوں کی فوج

Share Article

kejriwal

دہلی سے ملحق گروگرام(گڑگاؤں) میں ہولی کے دن ایک مسلم خاندان کی بدمعاشوں کے ذریعہ بے رحمی سے پٹائی کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سی ایم اروند کیجریوال نے اس واقعہ پر ٹویٹ کیا ہے اور اپنا غصہ ظاہر کیا ہے۔کیجریوال نے اپنے ٹویٹ میں لکھا’’ یہ ویڈیودیکھئے ، ہمارے کون سے گرنتھ میں لکھاہے مسلمانوں کومارو؟ گیتامیں؟ رامائن میں؟ ہنومان چالیسا میں؟سی ایم اروند کیجریوال نے کہا ہے کہ یہ لوگ ہندو نہیں ہیں، ہندوؤں کے بھیس میں غنڈے ہیں، ان کی پارٹی لچے، لفنگے،غنڈوں کی فوج ہے۔

دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اس واقعہ کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولا ہے اور کہا ہے کہ جس طرح اقتدار کے لئے ہٹلر کے غنڈے لوگوں پیٹتے تھے، اس کا خون کرتے تھے، اسی طرح مودی جی بھی اقتدار کے لئے یہ کروا رہے ہیں، ہٹلر کے راستے پرچل رہے ہیں۔لیکن مودی حامیوں کو دکھائی نہیں دیتا کہ ہمارا ہندوستان کدھر جا رہا ہے؟

بتا دیں کہ گروگرام کے بھونڈسی کے بھوپسنگھ نگر علاقے میں مسلم خاندان کے کچھ بچے شام کو تقریبا ساڑھے 5 بجے گھر کے باہر کرکٹ کھیل رہے تھے۔اس معاملے کو لے کر وہاں کچھ تنازعہ ہوا اس کے بعد درجنوں بدمعاشوں نے شاہد نام کے شخص کو بے رحمی سے پیٹنا شروع کر دیا۔ اس دوران گھر کی لڑکیاں، بچے اور خواتین مسلسل مدد کیلئے چیختی رہی، لیکن بدمعاش رکے نہیں۔ بدمعاشوں کے پیٹنے سے یہ شخص بیہوش گیا ہے۔
ہریانہ پولیس نے متاثرہ خاندان کی جانب سے شکایت درج کر لی ہے اور تقریبا 12 لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔گروگرام میں مارپیٹ کی اس واقعہ کے بعد چند گھنٹوں میں اس کا ویڈیو ٹویٹر، فیس بک اور وہاٹس ایپ پر وائرل ہو گیا۔

اس واقعہ پر غصہ کا اظہار کرتے ہوئے دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ اروند کجریوال ملک میں ایسی ہی حالت کی فکر کااظہارکررہے تھے۔ انہوں نے پی ایم پر طنز کستے ہوئے کہا کہ پی ایم مودی اب اس شخص کو جیل بھجوا دیں گے جس نے اس ویڈیو کوبنایا ہے۔منیش سسودیانے ٹویٹرپرلکھاکہ ’’ اب چوکیدارکے کہنے پرپولس اس آدمی کوپکڑکرتھانے میں بندکرے گی جس نے اس واقعہ کا ویڈیوبنایا۔انہوں نے آگے لکھاکہ ’’اسلئے اروندکیجریوال کہہ رہے ہیں ،اگریہ چوکیداردوبارہ جیت گیاتوہرگھرمیں یہی حال ہوگا۔‘‘

 

 

 

دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہمارے کس دھرگرنتھ میں لکھا ہے کہ مسلمانوں کو مارو، ایسا کرنے والے ہندو نہیں ہیں بلکہ غنڈے ہیں۔ کیجریوال نے کہا کہ ان سے ملک اور ہندو مذہب دونوں کو بچانا ہر ہندستانی کا فرض ہے۔ کیجریوال نے کہا کہ ہٹلر بھی اقتدار کے لئے یہی کرتا تھا۔ ہٹلر کے غنڈے لوگوں پیٹتے تھے، ان کا خون کرتے تھے اور پولیس جنہیں مارا، انہی کے خلاف کیس کرتی تھی۔ مودی جی بھی یہ اقتدار کیلئے کروا رہے ہیں، ہٹلر کے راستے پرچل رہے ہیں۔ مگر مودی حامیوں کو دکھائی نہیں دیتا کہ ہمارا ہندوستان کدھر جا رہا ہے؟
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *