دہلی میں شیلا دکشت نے بگاڑا کھیل، اب ہریانہ کیلئے AAP نے مانگا کانگریس کا ہاتھ

Share Article

kejarival-rahul

دہلی میں AAP اور کانگریس ایک ساتھ آنا تو چاہتے تھے لیکن عین موقع پرگٹھ بندھن ہوتے ہوتے رہ گیا، وجہ تھی دہلی پردیش کانگریس صدر شیلا دکشت۔اب ایک بار پھر دہلی کے وزیر اعلی اور عام آدمی پارٹی سربراہ اروند کیجریوال نے کانگریس کے سامنے اپنی سیاسی جھولی پھیلائی ہے۔کیجریوال نے ہریانہ میں کانگریس کا ساتھ مانگا ہے۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ایک بار پھر کانگریس سے اتحاد کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے راہل گاندھی سے اس پر غور کرنے کے لئے کہا ہے۔

انہوں نے کہا، ’’ملک کے لوگ امت شاہ اور مودی جی کی جوڑی کو ہرانا چاہتے ہیں۔ اگر ہریانہ میں JJP، AAP اور کانگریس ساتھ لڑتے ہیں تو ہریانہ کی دسوں سیٹوں پر بی جے پی ہارے گی۔ راہل گاندھی جی اس پر غور کریں۔‘‘جے جے پی یعنی جننائک جنتا پارٹی دوشینت چوٹالہ کی پارٹی ہے۔2014 کے لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی نے سات، کانگریس نے ایک اور آئی این ایل ڈی نے دو سیٹوں پر جیت درج کی تھی۔آئی این ایل ڈی دو پھاڑ ہو چکی ہے۔ آئی این ایل ڈی سے الگ JJP قائم کیا گیا ہے۔

بات اگر دہلی کی کریں تو، حالیہ سروے میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس بار کے انتخابات میں بھی عام آدمی پارٹی اور کانگریس کی ہاتھ خالی رہے گی۔یہی وجہ ہے کہ کیجریوال جیت کے لئے کانگریس سے اتحاد کرنے کے لئے بیتاب ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *